نقیب کیس،مقتولین کو پیچھے گولیاں کیوں لگیں؟عدالت

naqeeb 3کراچی شہرقائد کی انسداد دہشت گردی عدالت نے نقیب اللہ قتل کیس میں ملزمان کے وکلاء سے استفسار کیا ہے کہ کیا کمرے کے اندر سے گولیاں چلیں تھیں اور مقتولین کو پیچھے سے ہی گولیاں کیوں لگیں، ’مقابلے میں ہلاک ہونے والوں کو گولیاں سامنے سے کیوں نہیں لگیں۔شاہ لطیف ٹاؤن میں پولیس کے ہاتھوں ماورائے عدالت قتل کیے جانے والے نقیب اللہ محسود کیس کے مرکزی ملزم سابق ایس ایس پی راؤ انوار سمیت دیگر ملزمان کو انسداد دہشت گردی عدالت میں پیش کیا گیا۔اس موقع پر انسداد دہشت گردی کی عدالت کے اطراف میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔کیس کی سماعت کے دوران عدالت میں راؤ انوار اور دیگر ملزمان کی درخواستِ ضمانت پر وکلاء کی جانب سے دلائل دیئے گئے۔واضح رہے کہ راؤ انوار سمیت دیگر ملزمان محمد یاسین، سپرد خان، قمر احمد اور خضر حیات نے ضمانت کی درخواستیں دائر کر رکھی ہیں۔عدالت نے کیس کی سماعت 5 جولائی تک لیے ملتوی کردی

Top