گستاخانہ خاکوں کیخلاف احتجاج غیرت ایمانی ہے،مفتی نعیم

Mufti Naeemکراچی جامعہ بنوریہ عالمیہ کے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمدنعیم نے کہاکہ حضور کی ناموس پر حملہ کرنے والے نشان عبرت بنیں گے،ہالینڈ پارلیمنٹ کے رکن کا گستاخانہ خاکوں کے مقابلوں کا اعلان کرکے پوری امت کی غیرت کو للکارا ہے ،ایٹمی صلاحیت ، مالا مال مسلم ممالک کے سربراہوں کی گستاخانہ خاکوں پرخاموشی انتہائی افسوسناک ہے،مذموم حرکت کیخلاف عالم اسلام کو متحد ہوکر میدان میں آنے کی ضرورت ہے، غیرت ایمانی کاتقاضہ ہے حضورﷺ کی ناموس کے سامنے ’’دنیا ومافیا ‘‘ کی کوئی حیثیت نہیں، جاگومسلمانوں۔پیر کو جامعہ بنوریہ عالمیہ میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگوکرتے ہوئے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمد نعیم نے کہاکہ گزشتہ ماہ ہالینڈ کے ایک شخص نے گستاخانہ خاکوں کے مقابلوں کا اعلان کیا جس پر کسی بھی مسلمان ملک کی جانب سے احتجاج نہیں کیاگیاامت مسلمہ کی اس خاموشی کی وجہ سے اب وہ سوشل میڈیا کے ذریعے گستاخانہ خاکوں کے مقابلے کی مہم میں مصروف ہیں ،انہوں نے کہاکہ مذموم اعلان کیخلاف احتجاج کرنا ہر مسلمان کا ایمانی فریضہ اور حضورﷺ سے محبت کا تقاضہ ہے،مسلمان کیلئے آقائے دوجہاں کی ناموس سے بڑھ کر کچھ بھی نہیں،انہوں نے کہاکہ کم وپیش ڈھائی ارب مسلمانوں کی دلاآزاری کا باعث ہے ، مسلمانوں کو انتہا پسندی کا طعنہ دینے والے مغربی ممالک کو باور کرانے کی ضرورت ہے کہ اصل انتہاپسند وہ ہیں اسلام تو ایک پرامن مذہب ہے جس میں کسی بھی پیغمبر یا مذہبی شخصیات کی اہانت کی بالکل بھی اجازت نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے ناموس پر حملہ آور دشمنوں کو یہ مت بھولنا چاہیے کہ ایک مسلمان کے نزدیک حضور کی ناموس سے بڑھ کر کوئی بھی چیز نہیں ہے اگر اس قسم کی جسارت کی گئی تو اس کا انجام بیانک ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ انتہائی افسوس اور ڈوب مرنے کا مقام ہے بڑے بڑے سیاسی لیڈر، 54 اسلامی ممالک کے حکمران اس پر مکمل خاموش ہیں نہ مسلم میڈیا میں اس مذموم اعلان کیخلاف احتجاج کیا جارہاہے ۔

Top