کراچی، یوم آزادی اور تیاریاں (خصوصی رپورٹ: عارف جتوئی)

karachi 14 augus
کراچی میں 14اگست جس جوش و خروش سے منایا جاتا ہے وہ کسی عید سے کم نہیں دیکھائی دیتا۔ اپنی آزادی کے جوش کا یہ عالم ہے کہ شہریوں نے یکم اگست سے ہی تیاریاں شروع کردیں ہیں۔ ان تیاریوں کے سلسلے میں سے ہر جگہ اور گلی محلے اور گاڑی میں ملی نغمے سنائی دے رہے ہیں۔ اس کے بعد گھروں کی سجاوٹ کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ جوں جوں 14 اگست کا دن قریب آتا جاتا ہے یہ سجاوٹ بڑھتی جاتی ہے۔ ملبوسات میں بھی 14اگست کے رنگ واضح نظر آتے ہیں۔ بچے، خواتین اور نوجوان تک اپنے کپڑوں کو پاکستانی پرچم کے رنگ میں رنگ دیتے ہیں۔ کراچی اپڈیٹس کی جانب سے 14 اگست کی تیاریوں کا جائزہ لیا گیا۔ جو کہ قارئین کے لیے پیش کیا جارہا ہے۔

14-August-2
شہر کی فضا ملی نغموں سے گونج اٹھی

70واں یوم آزادی کے سلسلے میں کراچی کی فضائیں ملی نغموں کی دھنوں سے گونجنے لگیں۔ گاڑیوں پر قومی پرچم لہرانے لگے، پبلک ٹرانسپورٹ کے ساتھ ساتھ پرائیویٹ گاڑیوں میں اونچی آواز سے نغمے لگا کر وطن سے محبت کااظہار کررہے ہیں۔ سی ڈی اسٹالز پر بھی ملی نغموں کی سی ڈی یو ایس بیز پر ترانے اور ملے نغمے لوڈ کرانے کاکام بھی بڑھ گیاہے۔ ہر سو ملی نغموں کی دھنیں فضاﺅں میںگونج رہی ہیں اور ہر شخص اپنے انداز میں جشن منانے کے لیے تیار ہے۔
14-August-Celebration-Image
سبز ہلالی پرچم سے مزین ملبوسات اور پہناﺅ
یوم آزادی کی مناسبت سے سبز ہلالی پرچم سے مزین ملبوسات زیب تن کرنے کے رجحان میں اضافہ ہو گیا، خواتین اور بچوں کے تیارملبوسات اور درزی خان پر سبز رنگ کے قمیض اور سفید شلوار والے سوٹوں کی تیاری کا کام زور پکڑ گیا ۔ قومی پرچم کے رنگوں کی مناسبت سے ملبوسات کی خرید وفروخت کارجحان بڑھ گیا ہے۔ ٹیکسٹائل کے شعبہ نے اس حوالے سے تیاری میں اپنا کردارادا کیا ہے۔ چھاپہ خانوں میں بھی شرٹس اور قمیضوں پر قومی شناخت کے لوگو، پرچم کی چھپوائی کی جارہی ہے اور وطن عزیز سے والہانہ عقیدت اور محبت کے اظہار کی کی انگریزی اور اردو زبان کی ستھریوں کی چھپوائی کی جارہی ہے۔ جگہ جگہ تجارتی مراکز اور گلی محلوں میں خصوصی سٹالوں پر ان ملبوسات اور سلے ان سلے کپڑوں کی خرید وفروخت کاسلسلہ تیزی سے جاری ہے۔
14-August-Celebration1
گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں پر قومی پرچم کی پینٹنگز 
آٹو پینٹرز کی ورکشاپس پر گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں پر قومی پرچم کی پینٹنگز بنوانے کاسلسلہ زور پکڑ گیا، نوجوانوں نے موٹر سائیکل کی ٹینکیوں کو سبز رنگ کرا لیے۔ پینٹرز کاکہنا ہے کہ کوئی گاڑی کی اسکرینوں پر قومی پرچم کی مناسبت سے پینٹ کرارہا ہے اور کچھ اسٹکرز بنوا رہا ہے۔ بعض نے پوری پوری گاڑی کو قومی پرچم کا رنگ دے کر وطن سے محبت کا اظہارکر رہے ہیں۔ عارضی طورپر استعمال ہونے والے خصوصی اسٹکرز بھی متعارف کرائے گئے ہیں جو پوری اسکرین پر چسپاں کیے جاتے ہیں۔ قومی پرچم کے ساتھ وطن سے محبت کے اظہار کی تحریروں سے مزین ہیں۔

Top