شادی کی خریداری ”ویڈنگ ایکسپو 17فروری کو“

رپورٹ: حمیرا اطہر
ایک زمانہ تھا جب کہا جاتا تھا،”بیٹے کی بَری، بازار میں کھڑی“ یعنی لڑکے کی بَری میں تیاری اتنی مختصر ہوتی ہے کہ ایک ہی دن میں اس کی خریداری کی جا سکتی ہے۔ اس کے برعکس لڑکی کا جہیز اس کی پیدائش کے ساتھ ہی جمع کرنا شروع کر دیا جاتا ہے، لیکن اب دَور بدل چکا ہے۔ آج لڑکے کی بَری تو کیا دلہن کا سارا جہیز بھی بازار میں تیار مل جاتا ہے۔ بس آپ کی جیب میں پیسہ ہونا چاہیے۔

wedding-shopping
دَور بدلنے کے ساتھ اب بَری اور جہیز کے علاوہ بھی شادی کی تقریبات کے لیے مزید بہت کچھ تیار کرنا ہوتا ہے۔ مثلاً دعوت نامے شائع کرانا، بیوٹی پارلر کا انتخاب، مایوں، مہندی، بارات، ولیمے کی تقریبات کے لیے بہترین جگہ کا انتخاب، اس کی سجاوٹ اور مہمانوں کی خاطرتواضع کا اہتمام کرنا وغیرہ وغیرہ۔ تو ایسے تمام والدین کے لیے، جن کے بچوں کی شادیاں عن قریب ہونے والی ہیں، خوش خبری ہے کہ اب اُن کا ہاتھ بٹانے بلکہ تمام ذمے داریوں کا بوجھ اٹھانے کے لیے کچھ ادارے وجود میں آگئے ہیں۔ ایونٹ کی منصوبہ بندی اور انتظام کرنے والے Occasions اور مولٹی فوم نے سب سے پہلے اس کام کا بِیڑا اٹھایا ہے۔
8 فروری کو Occasions نے اس کی تفصیل سے آگاہی دینے کے لیے پی سی ہوٹل کراچی میں ایک شان دار تقریب کا اہتمام کیا جس میں بتایا گیا کہ اس نمائش کے انعقاد میں ان کے ساتھ ٹائیٹل اسپانسر مولٹی فوم، پی سی اور 100سے زائد دیگر کمپنیوں نے تعاون کیا ہے۔
اس موقعے پر Occasions کے آپریشن اور بزنس ڈیولپمنٹ کے سربراہ حسن ضیا نے بتایا کہ میں گیارہ برس سے اس صنعت سے وابستہ ہوں۔ 17 اور 18 فروری کو کراچی ایکسپو سینٹر میں پاکستان کا پہلا اور سب سے بڑا شادی کا شو ہوگا۔ اس دو روزہ نمائش میں شہریوں کو ایک ہی چھت کے نیچے 100سے زائد مشھور برانڈز سے استعفادہ کرنے کا موقع ملے گا۔ یہ ایک مکمل شادی کی مہم ہے جس کا مقصد شادی سے متعلق ہر چیز کو ایک چھت کے نیچے لانا ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ اس نمائش کی بدولت خریداروں کو آسانی فراہم کی جائے۔ یہ نمائش خریداری کرنے والوں اور نمائش کنندگان کے درمیان خلا کو پُر کرنے میں پُل کا کردار ادا کرے گی۔ یہاں خریداروں کو شادی کی ضروریات پوری کرنے کے لیے ناصرف متعدد اسٹالز کی وسیع رینج ملے گی بلکہ وہ مختلف تقریبات کے لیے درست معلومات اور ماہرانہ رائے بھی لے سکیں گے۔ اتنا ہی نہیں، شادی کی تقریبات سے متعلق جدید وضروری فیشن اور رجحانات، مصنوعات، سروسز اور دیگر چیزیں جاننے کا موقع بھی ملے گا۔
اس موقعے پر ایونٹ کی سفیر، سپورٹنگ پارٹنر اور ترجمان، معروف ماڈل اور اداکارہ نادیہ حُسین خان نے کہا، ہر خاندان کا فوکس شادی کی تقریبات پر ہوتا ہے۔ مجھے خوشی ہے کہ ان کی اس اہم نمائش میں خدمات انجام دینے کا موقع مل رہا ہے۔ شادی کے سلسلے میں ہونے والی اس پہلی نمائش کو کام یاب بنانے اور ملک بھر میں ایک مثبت پیش رفت کے طور پر سامنے لانے کے لیے ہماری پوری ٹیم نے سخت محنت کی ہے۔ اب یہ آپ کا کام ہے کہ اپنے خاندان، دوستوں اور سپورٹرز کی برادریوں کے ساتھ اس میں جائیں اور ہمیں اپنے تجربات سے آگاہ کریں تاکہ آئندہ ہم اسے مزید بہتر بنا سکیں۔
کراچی میں ہونے والی شادی کی اس پہلی نمائش کے سپورٹنگ پارٹنرز میں زینتھ پبلک ریلیشنز، جس کی روح رواں زینب انصاری ہیں، پی سی ہوٹل کراچی، نظام ایونٹ سولیوشنز، اومور، ہیبٹ، انٹروڈ، سوزوکی، حاکم سنز اور فاموٹرز سمیت سو سے زائد ادارے شامل ہیں۔
اس موقعے پر نظام ایونٹ سولیوشنز کے جنرل منیجر نے بتایا کہ نظام دین اس صنعت سے 150سال سے وابستہ ہے۔ پہلے یہ ادارہ ایسٹ انڈیا کمپنی کے لیے کام کرتا تھا پھر قیام پاکستان کے بعد جب اس کے ذمے داران دہلی سے ہجرت کر کے کراچی آگئے تو یہاں بھی اس کام کو جاری رکھا۔ اب ایک نیا ڈویژن کھولا گیا ہے اور ہم کیٹرنگ میں بھی کام کر رہے ہیں۔
تقریب کے دوران ایک دستاویزی فلم بھی دکھائی گئی جس میں دلہن کو مہندی لگانے، تقریب گاہ سجانے، دولھا اور دلہن کے میک اپ اور ملبوسات، زیورات، پرس اور جوتوں وغیرہ
کے انتخاب کے ساتھ پی سی ہوٹل کی جانب سے ہنی مون پیکجز اور شادی کی مختلف تقریبات میں کھانے پکانے والے شیف کے بارے بھی تفصیلی معلومات فراہم کی گئیں۔ چناںچہ کراچی کے شہریوں کو اس نمائش کے انعقاد کا شدت سے انتظار ہے۔

Top