Wednesday, November 25, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

واٹربورڈ ان ایکشن،نادہندگان کے پانی کے کنکشن منقطع

واٹربورڈ کا نادہندگان کے خلاف گرینڈ آپریشن تیز، واجبات ادا نہ کرنےوالے سیکڑوں صارفین کے پانی کے...

بختاور کی منگنی کی تقریب جمعہ کو بلاول ہاوس میں ہوگی

بختاور بھٹو زرداری کی منگنی کی تقریب جمعہ کو بلاول ہائوس کلفٹن کے اوپن ایریا میں ہوگی، بختاور...

پی ٹی آئی رہنما فردوس نقوی کا وزیراعلیٰ سندھ پر انوکھا الزام

تحریک انصاف کے ارکان سندھ اسمبلی نے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ پر انوکھا الزام عائد کردیا، اپوزیشن...

23اپریل کو عوام کراچی صوبہ کے حق میں ووٹ ڈالیں ، عثمان معظم

001320x180کراچی، حلقہ NA-246میں پاسبان پاکستان کے نامزد امیدوار عثمان معظم نے کہا ہے کہ 23اپریل کو حلقہ کے عوام کراچی صوبہ کے حق میں ووٹ ڈالیں ، خدمت کی سیاست کریں گے ۔کراچی صوبہ بنے گا تو پورے پاکستان کی کفالت کرے گا ۔ کراچی کی آمدنی سے رائے ونڈ اور سرے محل بن گئے لیکن کراچی کے عوام تعلیم ، بجلی ، پانی اور ٹرانسپورٹ کی بنیادی سہولتوں کی فراہمی سے بھی محروم ہیں ۔ قوم کی بیٹی ڈاکٹر عافیہ کے معاملے پر صرف سیاست چمکائی گئی ۔ جدوجہد کا حق ادا نہیں کیا گیا۔ پاسبان عافیہ کی واپسی کے لئے انتہائی اقدام اٹھائے گی ۔ وہ الیکشن کیمپ کریم آباد سے نکالی جانے والی ”کراچی صوبہ بناﺅ ریلی “کے جگہ جگہ استقبال کے موقع پر عوام سے خطاب کررہے تھے ۔ ریلی نے حسین آباد ، جناح گراﺅنڈ، جاوید نہاری ، واٹرپمپ ، گلبرگ، ایف سی ایریا، لیاقت آباد اور عائشہ منزل سمیت مختلف علاقوں کا گشت کیا ۔ ریلی پر گل پاشی کی گئی اور عوام کی خاموش اکثریت نے عثمان معظم کے کامیابی کے لئے اپنے ووٹ کے بھر پور استعمال کا یقین دلایا۔ عثمان معظم نے کہا کہ کراچی کے عوام کو خیرات کی یونیورسٹی اور بحریہ اسکیم میں چند مکانات نہیں اپنے حقوق چاہئےں۔ کراچی کے عوام کو زکوة نہیں اپنا حق چاہیئے اور پاسبان یہ حق دلوائے گی ۔ عثمان معظم نے کہا کہ کراچی کے عوام کو حقوق کے نام پر دھوکہ دیا گیا ، بھتہ خوری سے شہر کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا گیا ۔ لاہور اور اسلام آباد کے لئے میٹرو پروجیکٹ بنائے گئے اور کراچی کے عوام کو ٹرانسپورٹ مافیا کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ۔ میگا سٹی میں نہ تو بجلی ہے ، نہ پانی کی مسلسل فراہمی ہے اور نہ ٹرانسپورٹ کی کوئی سہولت دستیاب ہے ۔ عثمان معظم نے کہا کہ کراچی پورے ملک کو جو ریونیو دیتا ہے اُس کی بناءپر سہولتیں ، حقوق ، میرٹ نوکریا ںاور اچھی تعلیم یہاں کے شہریوں کا حق ہے ۔ کم آبادی والے صوبوں اور شہروں کو اربوں ، کھربوں روپے کے پیکج دئےے گئے اور 25ملین آبادی والے شہر کو چند ”ٹکو ںپر “ٹرخا دیا گیا۔یہ سب کچھ کراچی کے حقوق کی دعویدار اور کراچی میں سیاسی اجارہ داری رکھنے والوں نے کیا ۔پاسبان نے انتخابی سیاست میں قدم رکھتے ہوئے عوام کو اس دھوکے سے نکال دیا ہے اور اجارہ داری رکھنے والوں کے سبز باغوں کا پردہ چاک کردیا ہے ۔ حلقہ این اے 246کے عوام کی خاموش اکثریت پاسبان کے ساتھ ہے ۔پی ٹی آئی ، جماعت اسلامی اور ایم کیو ایم ،کراچی کے عوام کو مسائل کے حل اور حقوق دلوانے میں ناکامی کا اعتراف کرکے مقابلے سے دستبردار ہوجائیں ۔ اجارہ داری رکھنے والی جماعتیں کراچی کے عوام پر خوف کی سیاست مسلط کرکے الیکشن کو ملتوی کرانا چاہتی ہےں اور پاسبان اس سازش کو ناکام بنادے گی۔

Open chat