Sunday, October 25, 2020
Home Trending آئین میں یہ بات موجود ہے کہ وزیر اعظم استعفیٰ دے سکتے...

آئین میں یہ بات موجود ہے کہ وزیر اعظم استعفیٰ دے سکتے ہیں، لطیف کھوسہ

sardarlatifkhosaکراچی، پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور سابق گورنر پنجاب لطیف کھوسہ نے کہا ہے کہ آصف علی زرداری دونوں جماعتوں کو سمجھانے کی کوشش کر رہے ہیں کہ آئین،قانون،جمہوریت،ملک اور عوام کا خیال کریں اور تمام معاملات کو افہام و تفہیم کے ذریعے حل کریں یہ آصف زرداری کا بڑا پن ہے ۔آئین میں یہ بات موجود ہے کہ وزیر اعظم استعفیٰ دے سکتے ہیں ،ہمارے وزیر اعظم نے بھی استعفیٰ دیا تھا۔نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے سابق گورنر پنجاب نے کہاکہ یہ وہ ساری چیزیں ہیں جو نوازشریف ہمارے خلاف کرتے رہے ہیں۔انہوں نے خود ہماری حکومت کے خلاف لانگ مارچ کیا ۔یہ سپریم کورٹ میں ہمارے خلاف گئے۔اگر یہ صورتحال ہمارے ساتھ ہوتی تو کیا یہ لوگ ہمارے ساتھ ہوتے۔

انہوں نے ہر معاملے میں عدلیہ کو ہمارے خلاف استعمال کیا،لیکن ہم پھر بھی چاہتے کہ کوئی تیسری قوت آئے ، ہم کہتے ہیں جو تبدیلی آنی ہے آئین کے مطابق آئے۔انہوں نے کہا کہ آصف علی زرداری نے کہا کہ ہم نے تمام تحفظات کے باوجود آپ کو وزیراعظم بنا دیا ہے مگر آپ بادشاہ نہ بننا۔لطیف کھوسہ نے کہا کہ اس دھرنے کو یلغار نہ کہیں،کیونکہ اس کا ایک بہت مثبت اثر ہماری معاشرتی،معاشی،اور سیاسی زندگی پر پڑے گا۔جو ایشوز سامنے آئے ہیں ان ایشوز کو پہلے ایڈریس نہیں کیا گیا۔اب جو بھی حکومتیں آئیں گی ان کو فوکس عوام کی زندگی ہوگا۔یہ جو سارے لوگ ہیں یہ سارے کے سارے عمران اور قادری کے نہیں ہیں یہ لوگوں کا اندر کا ابال ہے جو سامنے آیا ہے۔لوگ بجلی ، بے روزگاری،صحت کی سہولتوں ،مہنگائی کے مارے ہوئے ہیں ۔عوام دہشتگردی اور لااینڈ آرڈر کی صورتحال سے دوچار ہیں ۔سب کہتے ہیں کہ مئی 2013 کا الیکشن دھاندلی شدہ ہے۔ (ن) لیگ بھی کہتی ہے کہ یہ الیکشن شفاف نہیں تھے ۔ وزیرداخلہ نے خود کہا کہ ہر حلقے میں 60 سے 70 ہزار ووٹ غیر تصدیق شدہ ہیں ۔ یہ کہنا کہ وزیراعظم یا وزیراعلیٰ کو بے دخل کرنا غیر آئینی ہےہمارے وزیراعظم گیلانی کو نکالا گیا تھا وہ آئینی تھا۔اس کیا نواز لیگ نے ہمارا ساتھ دیا تھا۔ہم نے تصادم نہیں کیا اور نیا وزیراعظم بنا لیا۔ 17جون کو ماڈل ٹاون میں گولیاں چلتی ہیں چودہ افراد قتل ہو جاتے ہیں 90 کے قریب زخمی ہوتے ہیں عدالتی حکم ہوتا ہے مگر آج تک اس کو پرچہ نہیں کاٹا گیا ۔

گلو بٹ کے خلاف وہ وہ دفعات لگائیں جو قابل ضمانت تھیں اور اس کی ضمانت ہو گئی اور وہ ویڈیو کلپس ہی نہیں اس رپورٹ میں لگائے گئے ۔نوازشریف اور شہبازشریف صاحب نے پولیس اور بیوروکریسی کو لونڈی بناکر استعمال کیا ہے ۔شیخ رشید نے سپریم کورٹ میں کھڑے ہو کر کہا کہ مجھے وہ انصاف دیجیئے گا جو آپ شریف بردران کو دیتے ہیں آج تک کوئی فیصلہ ان کے خلاف آیا ہے ۔ ایک نقطے پر لطیف کھوسہ کا کہنا تھاکہ آئین کے اندر موجود ہے کہ وزیراعظم مستعفی ہو سکتے ہیں۔ہمارے وزیراعظم بھی گئے تھے مگر ہم جمہوریت کی خاطر اس بات کو تسلیم کر لیا تھا۔ ہم نہیں چاہتے کہ یہ نظام ڈی ریل ہو ۔ دھرنوں سے حکومت جا تو سکتی ہے لیکن کیا آئین میں اصلاحات آ جائیں گی ۔ جتنے بھی معاملات ہیں ان کو اپ گریڈ کرنے کے لئے پارلیمنٹ کو فعال بنانا ہو گا ۔ اگر دونوں طرف سے ضد دکھائی گئی تو تکرار میں وفاق کو نقصان ہو گا ۔ حکومت تو جائے گی جائے مگر اس سے جمہوریت کو نقصان ہوگا ہم اس بچنے کی کوشش کررہے ہیں ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

علی عمران کی گمشدگی، وزیراعظم کی ہدایت پر کمیٹی قائم

کراچی، وزیراعظم عمران خان نے جیو نیوز کے رپورٹر علی عمران سید کے لاپتہ ہونے کا نوٹس لیتے ہوئے جوائنٹ فیکٹ...

قائد اعظم ٹرافی ، 24 اکتوبر سے شروع ہوگی

کراچی، 24 اکتوبر سے قائد اعظم ٹرافی کا میلہ سجے گا۔ پی سی بی ذرائع کے مطابق قائد اعظم ٹرافی کی...

سندھ حکومت علی عمران کے لاپتہ ہونے کی تحقیقات کرے، فواد چوہدری

کراچی، وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے جیو نیوز کے رپورٹر علی عمران کے لاپتہ ہونے کی تحقیقات کےلئے سندھ...

جلد آٹا کی قیمت نیچے آجائیگی، کمشنر کراچی

کراچی، شہر کے انفرااسٹرکچر کی بہتری کے لئے بہت کام شروع ہوجائے گا، ان خیالات اظہار کمشنر کراچی سہیل راجپوت نے میڈیا...