Monday, October 26, 2020
Home رہنمائے کراچی آباد ایکسپو2014(حفیظ خٹک)

آباد ایکسپو2014(حفیظ خٹک)

indexروٹی ،کپڑا اور مکان ،مانگ رہا ہے ہر انسان،،،،،یہی وہ نعرہ تھا جو کہ وطن عزیز کی سب سے بڑی سیاسی جماعت پاکستان پیپلز پارٹی کے شہید چئیرمین ذوالفقار علی بھٹو نے 70 کی دہائی میں لگایا تھا۔ اس نعرے کے باعث پیپلز پارٹی کو عوام میں وہ پذیرائی حاصل ہوئی جس کی نظیر کم ہی ملا کرتی ہے۔اس نعرے کی تکمیل کیلئے پیپلز پارٹی کی حکومت کو اب تک ۴ مواقع ملے تاہم وجوہات سے قطع نظر پیپلز پارٹی کی حکومت عوام کی یہ تمام ضروریات پہنچانے میں ناکام ہوئیں۔ایسوسی ایشن آف بلڈرز اینڈ ڈیولپرز (آباد) کی پہلی بین القوامی نمائش آباد ایکسپو 2014کی افتتاحی تقریب کے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی اسپیکر سندہ اسمبلی آغا سراج درانی نے ایک بار پھر اپنی جماعت کے اسی نعرے کو دہراتے ہوئے کہا کہ انکی جماعت غریبوں کی جماعت ہے ، غریب عوام کو روٹی ، کپڑا اور مکان پہنچانے کیلئے آباد جو بھی کاوشیں کریگی حکومت انہیں بھر پور مدد فراہم کریگی۔

آباد ایسی کمپنیوں کی نمائندہ تنظیم ہے جو کہ تعمیراتی شعبے سے وابستہ ہیں، طویل عرصے سے قائم تنظیم شہر قائد میں ہی نہیں بلکہ وطن عزیر میں تعمیراتی سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہے۔ملک کی تعمیر و ترقی میں انکی یہ سرگرمیاں اہمیت کی حامل ہیں، مزکورہ شعبے کا کردار ملکی معیشت میں ریڑہ کی ہڈی کی مانند ہے۔ آباد نے اس شہر میں ہی نہیں بلکہ وطن عزیز میں تعمیراتی شعبے میں مزید تیزی لانے اور بیرونی سرمایہ کاروں پاکستان میں سرمایہ کاری کی جانب راغب کرنے کیلئے آباد ایکسپو منعقد کیا ۔ آباد کی پہلی نمائش پر یقینا اس چئیرمین محسن شیخانی اور انکی پوری کابینہ قابل مبارکباد کی مستحق ہے۔ملک میں جاری سیاسی سرگرمیوں کے نتیجے میں پیدا ہونے والی غیر یقینی صورتحال میں آبا د کے اس اقدام کی حکومت کو بھرپور پذیرائی کرنی چاہئیے اور اس شعبے کو درپیش مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنا چاہئیں۔ایسی نماشوں کا انعقاد ملک کے دیگر بڑے شہروں میں بھی ہونا چاہئے۔اس سے ملک کی معاشی صورتحال پر مثبت اثرات مرتب ہونگے۔آباد کی اس نمائش میں بین القوامی شہرت کی حامل کمپنیاں بھی شریک ہوئیں۔ اس کے ساتھ چین، ترکی، انڈونیشیا ، ملائیشیا، متحدہ عرب امارات سمیت دیگر کئی ممالک کے مندوبین نے حصوصی طور پر شرکت کی۔

index1نمائش کی کامیابی کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ تمام ہالز کے بک ہونے کے سبب کئی معروف مصنوعات کی کمپنیوں کو جگہ نہیں مل سکی اور انہوں نے ایکسپو کے احاطے میں ہی اپنے اسٹال لگائے۔محسن شیخانی ، حارث مٹھانی ، حنیف گوہر سمیت آباد کی مجموعی کابینہ نے انتھک محنت کر کے تعمیرات کے شعبے میں اس نمائش کے کامیاب انعقاد کے ذریعے اک نئی تاریخ رقم کردی ہے۔ شہر قائد اور ملک کے دیگر حصوں کی بسا اوقات صورتحال سے دل برداشتہ ہوکر بیرون ملک سرمایہ کاری کرنے والوں کو اس نمائش کے بعد اپنے فیصلوں پر نظر ثانی کرنی چاہئیے۔محسن شیخانی نے بھی نہایت پرجوش انداز کہا کہ کراچی دو کروڑ کی آبادی والا شہر ہے ، یہ آبادی دنیا کے کئی ممالک کی مجموعی آبادی سے زیادہ ہے، کراچی میں تعمیرات شعبے میں وسیع مواقع ہیںجن سے ملک کے دیگر سرمایہ کاروں سمیت بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو بھرپور فائدہ اٹھا نا چاہئے۔انہوں نے کہا کہ تعمیراتی شعبہ جس قدر مستحکم ہوگا ملکی معیشت بھی اسی قدر مضبوط اور مستحکم ہوگی۔انہوں امید ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو اب ترقی کی شاہراہ سے کوئی نہیں روک سکتا۔نمائش کی افتتاحی تقریب میں قومی ترانہ پڑھا گیا ، وہ چند لمحے وہاں موجود شرکاء کی زندگیوں پر نقوش چھوڑ گئے۔کئی چہرے ایسے تھے جو کہ وطن کی محبت میں پرنم آنکھوں کے ساتھ ترانے کے احترام میں کھڑے تھے اور کئی ایسے بھی تھے جو اپنی آنکھوں کی نمی چھپائے ملک کو عظیم سے عظیم تر بنانے کا عہد کر رہے تھے۔

حفیظ خٹک
Biographical Info

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

علی عمران کی گمشدگی، وزیراعظم کی ہدایت پر کمیٹی قائم

کراچی، وزیراعظم عمران خان نے جیو نیوز کے رپورٹر علی عمران سید کے لاپتہ ہونے کا نوٹس لیتے ہوئے جوائنٹ فیکٹ...

قائد اعظم ٹرافی ، 24 اکتوبر سے شروع ہوگی

کراچی، 24 اکتوبر سے قائد اعظم ٹرافی کا میلہ سجے گا۔ پی سی بی ذرائع کے مطابق قائد اعظم ٹرافی کی...

سندھ حکومت علی عمران کے لاپتہ ہونے کی تحقیقات کرے، فواد چوہدری

کراچی، وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے جیو نیوز کے رپورٹر علی عمران کے لاپتہ ہونے کی تحقیقات کےلئے سندھ...

جلد آٹا کی قیمت نیچے آجائیگی، کمشنر کراچی

کراچی، شہر کے انفرااسٹرکچر کی بہتری کے لئے بہت کام شروع ہوجائے گا، ان خیالات اظہار کمشنر کراچی سہیل راجپوت نے میڈیا...