Friday, January 22, 2021
"]
- Advertisment -

مقبول ترین

پاکستان کا وفادار اسرائیل تسلیم نہیں کرسکتا، مولانا فضل الرحمن

جمعیت علما اسلام کے  سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کراچی میں اسرائیل نامنظور ملین مارچ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جو پاکستان کا...

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور علی زیدی میں تلخ کلامی

کراچی ٹرانسفارمیشن پلان کے اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ اور وفاقی وزیر علی زیدی میں تلخ کلامی، ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ وفاقی وزیر...

ن لیگ پر تنقید کے بعد حکومت نے بجلی مہنگی کردی

 وفاقی وزارت بجلی کی پوری ٹیم نے پریس کانفرنس میں ن لیگ کی سابقہ حکومت پر شدید تنقید کے بعد بجلی کی قیمت میں...

ریلی اور میچ کے باعث شہر میں بدترین ٹریفک جام

شہرقائد کے باسیوں کو بد ترین ٹریفک جام کا سامنا، ذرائع کے مطابق آج 21 جنوری بروز جمعرات کو جمعیت علما اسلام کے اسرائیل...

بلدیہ ٹائون کچرا اٹھانے والی 12 کروڑ روپے کی گاڑیاں ناکارہ

KMCکراچی: بلدیہ جنوبی کی انتظامیہ کی غفلت اور لاپرواہی کی وجہ سے بلدیہ ٹائون زون کی12 کروڑ روپے سے زائد مالیت کی18سے زائد کچرا اٹھانے والی گاڑیاں و مشینری ایک برس سے فنڈز جاری نہ ہونے کی وجہ سے مواچھ گوٹھ کے قریب واقع آٹو ورکشاپ میں ناکارہ ہوگئیں۔ بلدیہ ٹائون کے مختلف علاقوں میں لگے کچرے کے ڈھیر اٹھانے کیلئے دیگر ٹائونز کے علاقہ سے کے ایم سی گاڑیاں طلب کی جا رہی ہیں، ذرائع کے مطابق بلدیہ ٹائون کے شعبہ انجینئر نگ نے ڈیڑھ برس قبل مرمت کیلئے3سے4 کروڑ روپے جاری کرنے کی سفارش کی تھی، تاہم اب تک فنڈز جاری نہ ہونے کے باعث ٹریکٹر، شاول، ٹریکٹر ٹرالی، ڈمپر، والوو، ٹی آر، ری فیوز وین ، واکٹ اور دیگر قیمتی گاڑیاں ورکشاپ میں کھڑی ناکارہ ہو رہی ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ضلع غربی انتظامیہ کی توجہ بلدیہ ٹائون کے بجائے صرف سائٹ ٹائون پر ہے، جبکہ گاڑیوں کی مرمت کیلئے فنڈز بھی ہیں، سجن یونین کے صدر ذوالفقار شاہ نے بتایا کہ ملازمین ضلع جنوبی کی انتظامیہ کی جانب سے گاڑیوں کی مرمت سمیت ٹیکنیکل ملازمین میں18 ماہ کے اوور ٹائم کی ادائیگی، یونیفارم کیس پے منٹ، صابن ڈسٹر اور برش سے بھی محروم ہیں۔ ریٹائرڈ ہونے والوں اور وفات پانے والے ملازمین کے ورثاء کو لیوانکیشمنٹ و فنانشیل اسٹینس کے واجبات نہیں دئے جا رہے ہیں، ایڈمنسٹریٹر کمشنر بلدیہ غربی نے گاڑیوں کی مرمت کے فنڈز اور ملازمین اور ریٹائرڈ ملازمین کے مسائل فوری حل نہ کئے تو پھر ملازمین احتجاج پر مجبور ہوجائیں گے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Open chat