Wednesday, October 21, 2020
Home Trending کالجوں میں طلبہ تنظیمیں تعلیمی ماحول کو متاثر کررہی ہیں، پوزیشن ہولڈرز

کالجوں میں طلبہ تنظیمیں تعلیمی ماحول کو متاثر کررہی ہیں، پوزیشن ہولڈرز

KHI21-19کراچی، اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کے سالانہ امتحانات میں پری انجینئرنگ اور سائنس جنرل گروپ کے پوزیشن ہولڈرز نے سیاسی سرگرمیوں اور دھرنوں سے عدم دلچسپی کا اظہار کردیا ہے، کالجوں میں جعلی سیاسی طلبہ تنظیمیں تعلیمی ماحول کو متاثر کرتی ہیں، ملک میں اتحاد و یکجہتی کی اشد ضرورت ہے، بجلی کی لوڈشیڈنگ ملک کا سب سے بڑا مسئلہ ہے۔ ان باتوں کا اظہار انہوں نے بورڈ کے زیراہتمام اپنے اعزاز میں دیئے جانے والے ظہرانے کے موقع پر صحافیوں کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر چیئرمین بورڈ پروفیسر انوار احمد زئی، ناظم امتحانات محمد عمران خان چشتی اور سیکرٹری بورڈ قاضی ارشد بھی موجود تھے۔ سائنس پری انجینئرنگ گروپ میں پہلی پوزیشن کے حامل محمد سنین حسین کا کہنا ہے کہ وہ اپنی پوزیشن پر پروردگار کے حضور سربسجود ہیں، ان کی پوزیشن میں ان کے والدین، اساتذہ کا تعاون شامل ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر کالجوں میں اساتذہ اپنی ذمہ داریاں بھرپور طریقے سے پوری کریں تو پرائیویٹ ٹیوشن کی ضرورت پیش نہیں آتی۔ ایک سوال پر ان کا کہنا تھا کہ کالجوں میں جعلی طلبہ تنظیمیں تعلیمی ماحول کو متاثر کررہی ہیں، کم از کم انٹر کی سطح تک ان تنظیموں کو کالجوں میں اپنی سرگرمیاں نہیں رکھنی چاہئیں۔ دوسری پوزیشن کے حامل محمد سالک سلام کا کہنا تھا کہ کالجوں میں تاخیر سے داخلے ہونے کے سبب طالب علموں کو کوچنگ کا سہارا لینا پڑتا ہے یہ ذمہ داری محکمہ تعلیم کی ہے کہ بروقت تعلیمی سیشن کا آغاز کیا جائے۔ اس کے ساتھ ساتھ طالب علموں کی 100 فیصد حاضری بھی یقینی بنائی جائے۔ تیسری پوزیشن کے حامل خزیمہ سہیل سلات نے اپنی پوزیشن کے حوالے سے کیے جانے والے سوال پر بتایا کہ زندگی میں ہر چیز کو منظم کرنا پڑتا ہے اگر وہ درست سمت میں ہوتو کامیابی حاصل ہوجاتی ہے، اسی طرح پڑھائی کا بھی اصول ہے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ مکینیکل انجینئربننا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کالجوں میں طلبہ کی حاضری کے حوالے سے بتایا کہ 50 فیصد طالب علم کالج میں آتے ہیں۔ تیسری پوزیشن ہی کی حامل طالبہ عائشہ کا کہنا ہے کہ وہ اپنی پوزیشن پر خوش ہیں، اللہ نے بہت کچھ دیا جس پر شکر ہے، شکوہ کسی بات کا نہیں کیا جاسکتا۔ ملک میں پھیلی انارکی اسلامی اقدار سے دوری کا نتیجہ ہے، اللہ کی رسی کو مضبوطی سے تھامے رہیں تو ہر قسم کی آفات سے بچا جاسکتا ہے۔سائنس جنرل گروپ میں پہلی پوزیشن حاصل کرنے والی طالبہ حرا سلمان کا کہنا ہے کہ ملک کا سب سے بڑا مسئلہ بجلی کی لوڈشیڈنگ ہے جو کہ دیگر شعبوں کی طرح تدریسی عمل اور تعلیمی مستقبل پر اثر انداز ہورہا ہے اگر ترجیحی بنیادوں پر تمام تر سیاسی معاملات سے بالاتر ہو کر اس کو حل نہیں کیا گیا تو ہم ایک بار پھر پتھروں کے دور میں چلے جائیں گے۔ دوسری پوزیشن کی حامل پریسہ بشیر نے بتایا کہ لڑکیاں رٹا زیادہ لگاتی ہیں، نصاب میں بہتری کی گنجائش موجود ہے، ایم سی کیوز میں اضافہ کیا جائے تو ”رٹا“ بھی ختم ہوجائے گا جبکہ کورس کو بھی بین الاقوامی تقاضوں کے مطابق اپ ڈیٹ ہونا چاہئے ۔ تیسری پوزیشن کے حامل سب سے کم عمر طالب علم محمد مدثر کا کہنا تھا کہ امتحانی مراکز موئن جو داڑو کے کھنڈرات کا نمونہ پیش کرتے ہیں جہاں پانی، بجلی، روشنی، فرنیچر کا فقدان نظر آتا ہے، انہوں نے حکومت سے اپیل کی کہ سرکاری کالجوں کی حالت زار کو بہتر بنایا جائے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

شیریں جناح کالونی دھماکے میں ایک کلو بارود استعمال ہوا

کراچی، شیریں جناح کالونی بم دھماکے کے حوالے سے سی تی ڈی انچارج راجہ عمرخطاب نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا...

سندھ پولیس اچھا کرے یا برا، صوبائی حکومت ذمہ دار ہے، گورنر

کراچی، گورنر سندھ عمران اسماعیل نے پولیس افسران کی چھٹیوں کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا سندھ پولیس اچھا کرے یا...

بچوں سے زیادتی، زیڈ ٹی کا ہدایت کارعظیم احمد سے معاہدہ

کراچی ، سائن انٹر ٹیمنٹ اور زیڈ ۔ٹی (کامران شریف)کا اپنی نئی ڈرامہ سیریلز ،سٹ کام ، ٹیلی فلمز کے لےے ڈرامہ...

سندھ حکومت کا پولیس افسران کی چھٹیاں منظور نہ کرنے کا فیصلہ

کراچی، سندھ حکومت نے پولیس افسران کی چھٹیاں منظور نہ کرنے کا فیصلہ، صوبائی حکومت کے ذرائع کا کہنا ہے کہ کسی...