Wednesday, October 28, 2020
Home کالم /فیچر عبدالحفیظ خٹک ہاشم خان اسکواش کا سابق عالمی چیمپئن (حفیظ خٹک)

ہاشم خان اسکواش کا سابق عالمی چیمپئن (حفیظ خٹک)

hafeezkhatak95@gmail.com
indexیہ با ت طے ہے کہ اگر اولمپک کھیلوں میں اسکواش کو شامل کرلیا جاتا تو اس کھیل میں پاکستان ہمیشہ سونے کا تمغہ حاصل کرتا. اس کے ساتھ یہ بھی اک حقیقت ہے کہ اس کھیل میں سب سے زیادہ سونے کے تمغے بھی وطن عزیز کے حصے میں آتے۔ کھیلوں کی دنیا میں پاکستان کا نام ہاکی اور کرکٹ کے بعد اگر کسی کھیل نے روشن کیا ہے تو وہ اسکواش ہے۔ اسکوا ش میں پاکستان کے کھلاڑی ۷۹۹۱ تک حکمرانی کرتے رہے، اس کے بعد سے آج تک اسکواش میں پاکستان کے کھلاڑی کوئی خاطر خواہ کارکردگی کا مظاہرہ نہیں کرسکے ہیں۔

دنیا اسکواش کی تاریخ ہاشم خان کے تذکرے کے بغیر کبھی پوری نہیں ہوگی۔ ہاشم خان پشاور کے قریب نواں کلی میں ۳۱۹۱ میں پیدا ہوئے ۔ انہوں نے اسکواش کا پہلا عالمی مقابلہ برٹش چیمپئن شب ۱۵۹۱ میں جیتا ۔ انہوں نے مسلسل ۷ سال تک اس ایونٹ کو جیتا۔ ان مقابلوں کی کی خاص بات یہ ہے کہ انہوں نے ان مقابلوں کے فائنل میں ہمیشہ اپنے چھوٹے بھائی اعظم خان کو ہرایا۔ فائنل مقابوں تک مسلسل رسائی کے سبب اسکواش کو فیملی افئیر گیم کہا جانے لگا تھا، ہاشم خان کو پہلی با ر فائنل میں شکست معروف اسکواش چیمپئن جہانگیر خان کے والد نے ۸۵۹۱ میں دی جس کے بعد انہوں نے اسکواش کے عالمی مقابلوں سے علیحدگی اختیار کرتے ہوئے امریکہ میںمستقل سکونت اختیار کرلی۔ اس دوران بھی وہ اسکواش کی تربیت دیتے اور خود ۱۹ برس تک اسکواش کھیلتے رہے۔ چند روز قبل حرکت قلب بندہونے کے سبب انکا انتقال۰۰۱سال کی عمر میں ہو ا ۔ انکے انتقال سے اسکواش کا ایک روشن باب ختم ہوا،تاہم انہیں اسکواش کے حوالے سے ہمیشہ یاد رکھا جائیگا۔

imagesہاشم خان کے بھائی اعظم خان نے اپنے بھائی کے حوالے ایک انٹرویو کہا کہ انہیں اسکواش کے میدانوں میں کوئی کھلاڑی شکست نہیں دے سکتا تھا ، بارہا فائنل میں اپنے بڑے بھائی سے ہاردراصل انکی تعظیم کے سبب ہوا کرتی تھی۔ انکا کہنا تھا کہ وہ نہیں چاہتے تھے کہ اپنے بڑے بھائی سے کوئی بھی فائنل جیتیں۔اعظم خان نے اسکواش کا سب سے بڑا مقابلہ برٹش چیمپئن شپ اپنے بڑے بھائی کی ریٹائرمنٹ کے بعد ۴ بار جیتا۔ انکے علاوہ جہانگیر خان نے طویل عرصے اسکواش کی دنیا پر حکمرانی کی۔انہوں نے دنیائے اسکواش کا ہر ایونٹ متعدد بار جیتا۔ برٹش چیمپئن شپ بھی انہوں نے ہی سب سے زیادہ ۰۱ بار جیتی۔ ان کے علاوہ کوئی دوسر ا کھلاڑی اس اعزاز کو حاصل کرنے میں ناکام رہا۔جہانگیر خان کے بعد جان شیر خان نے اسکواش کے میدانوں پر حکمرانی کی ۔ انکا عروج ۷۹۹۱ تک رہا۔اس دوران پاکستان کا نام دنیائے اسکواش میں گونجتا رہا، تاہم اس کے بعد سے اب تک پاکستان کا کوئی بھی کھلاڑی اس کھیل میں کوئی بھی نمایاں کامیابی حاصل نہیں کرسکا۔

حکومت پاکستان اب بھی اگر اس کھیل ہر توجہ دے تو اس کھیل میں پاکستان اپنا کھویا ہوامقام دوبارہ حاصل کر سکتا ہے۔ حکومت ، ذرائع ابلاغ اور دیگر ادارے سب سے زیادہ کرکٹ پر توجہ دیتے ہیں، اس کے بعد کچھ توجہ ہاکی پر بھی دے دی جاتی ہے ، اسکواش کے حواکے سے ملک میں کسی بھی طرح ٹیلنٹ کی کمی نہیں ذرا سی بھی توجہ دی جائے تو اس کے دو رس مثبت اثرات مرتب ہوسکتے ہیں اور پاکستان آنے والے وقتوںمیں ایک بار پھر دنیائے اسکواش پر حکمرانی کے قابل ہو سکے گا۔

حفیظ خٹک
Biographical Info

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

سرجانی ٹائون سے لاپتہ 8 سالہ عروہ بازیاب

کراچی، پیر کے روز سرجانی ٹائون سیکٹر ڈی فور میں گھر کے باہر سے لاپتہ ہونےوالی 8 سالہ عروہ فہیم بازیاب، پولیس...

بدھ اور جمعہ کو سی این جی اسٹیشنز بند رہیں گے

کراچی، سندھ بھر کے سی این جی اسٹیشنز بدھ اور جمعہ کو بند رہیں گے، ذرائع کے مطابق بدھ اور جمعہ کو...

لیاقت آباد، سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی ٹیم پر حملہ

کراچی، سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی ٹیم پر لیاقت آباد میں حملہ، ذرائع ایس بی سی اے کے مطابق لیاقت آباد...

گزری، نجی بینک میں آتشزدگی،فائر بریگیڈ کی گاڑیاں روانہ

کراچی، گذری میں نجی بینک میں آتشزدگی، کنٹونمنٹ بورڈ کی گاڑیاں آگ پر قابو پانے کےلئے روانہ، ذرائع کے مطابق بینک میں...