Sunday, May 9, 2021
"]
- Advertisment -

مقبول ترین

چھبیسویں سحری 4:27 افطار 7:08

پچیسویں سحری 4:27 افطار 7:08 پر ہوگی، رمضان المبارک برکتوں اور رحمتوں والا مہینہ ہے اس میں تمام بھائی سحری و افطار کے دسترخوان...

کراچی سمیت سندھ بھر میں عید کی شاپنگ کے لئے دی گئی مہلت ختم

کراچی سمیت سندھ بھر میں شام کے 6 بجتے ہی شاپنگ کیلئے دی گئی مہلت ختم ہوگئی، آخری دن بازاروں میں خریداروں کا رش...

ملک بھر میں تعلیمی ادارے 23 مئی تک بند رکھنے کا فیصلہ

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر(این سی او سی) نے کراچی سمیت ملک بھر میں تعلیمی ادارے 23 مئی تک بند رکھنے کا فیصلہ کرلیا...

محکمہ ایکسائز نے ٹیکس دہندہ شہریوں کے لیے چالان کا حصول آسان بنادیا

محکمہ ایکسائز نے ٹیکس دہندہ شہریوں کے پراپرٹی ٹیکس کے بل یا چالان کے حصول کو سہل بناتے ہوئے یہ سہولت اب اپنی آفیشل...

آئی جی سندھ کی پولیس کو فرنٹ لائن کورونا ورکرز میں شامل کرنے کی درخواست

انسپکٹر جنرل (آئی جی) سندھ پولیس مشتاق احمد مہر نے پولیس اہلکاروں کو کورونا کے خلاف لڑنے والے فرنٹ لائن ورکرز میں شامل کرنے کی درخواست کی ہے، آئی جی سندھ مشتاق مہر کی جانب سے ایڈیشنل چیف سیکرٹری برائے داخلہ کو ایک خط لکھا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ پولیس گزشتہ سال فروری سے کورونا وائرس کی سخت ڈیوٹی پر موجود ہے۔ سڑکوں، آئسولیشن سینٹرز، سیلڈ علاقوں، قبرستانوں اور بازاروں میں ڈیوٹی دے رہی ہے جبکہ اہلکار قیدیوں کو لانے لے جانے، سڑکوں پر ٹریفک کنٹرول کرنے اور مظاہرین کو کنٹرول کرنے کی خدمات بھی انجام دے رہے ہیں جس کے باعث اہلکاروں کو کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کا بڑا خدشہ ہے۔

آئی جی سندھ مشتاق مہر نے اپنے خط میں لکھا کہ رواں برس 5 اپریل تک 366 پولیس اہلکار و افسران کورونا وائرس میں مبتلا ہوچکے ہیں جبکہ 24 اہلکار و افسران شہید ہوچکے ہیں۔گزشتہ دنوں کورونا وائرس کی تیسری لہر میں پولیس اہلکاروں میں وائرس بڑھنے اور اموات کا خدشہ ہے لہذا پولیس اہلکاروں کو فرنٹ لائن ورکرز میں شامل کیا جائے تاکہ وہ فوری ویکسینیشن کے اہل ہو سکیں۔