جعلی اکاؤنٹس کیس،آصف زرداری، فریال تالپور کی 23 جنوری تک ضمانت میں توسیع

Asif Zardariکراچی ، بینکنگ عدالت نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کی ضمانت میں 23 جنوری تک کی توسیع کردی۔بینکنگ عدالت میں جعلی بینک اکاؤنٹس کیس کی سماعت ہوئی، جہاں ضمانت ختم ہونے پر سابق صدر آصف علی زرداری، ان کی بہن فریال تالپور اور اومنی گروپ کے سربراہ انور مجید کے بیٹے عدالت میں پیش ہوئے۔عدالت میں ہونے والی مختصر سماعت کے دوران آصف علی زرداری اور فریال تالپور کے وکلا کی جانب سے ضمانت میں توسیع کی درخواست دی گئی۔دوران سماعت ملزمان کے وکیل کی جانب سے عدالت سے استدعا کی گئی کہ وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف آئی اےکو حتمی چالان جمع کرانے کا حکم دیا جائے۔اس پر عدالت نے ریمارکس دیے کہ ہمیں سپریم کورٹ نے کارروائی سے روکا ہوا ہے۔ عدالت عظمیٰ کی اجازت کے بغیر ہم مزید کارروائی نہیں کرسکتے۔ عدالت نے آصف علی زرداری، فریال تالپور کی ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست منظور کرتے ہوئے اس میں 23 جنوری تک کی توسیع کردی۔واضح رہے کہ سابق صدر آصف زرداری اور فریال تالپور کی بینکنگ عدالت میں پیشی کے موقع پر پی پی پی کے ارکان اور کارکنوں کی بڑی تعداد موجود تھی جبکہ سیکیورٹی انتظامات کے پیش نظر عدالت کے اندر اور باہر اہلکار تعینات تھے۔دونوں رہنماؤں کی عدالت میں پیشی پر کارکنان جذباتی ہوگئے اور بینکنگ کورٹ میں بدنظمی دیکھنے میں آئی جبکہ پیپلز پارٹی کے کارکنان اور پولیس اہلکاروں میں تلخ کلامی بھی ہوئی۔اس دوران عدالت میں دھکم پیل کی صورتحال پر ایف آئی اے پراسیکیوٹر بختار چنہ نے عدالت کے باہر رینجرز تعینات کرنے کا مطالبہ کیا۔انہوں نے اپنے تحفظات سے عدالت کو آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ اس صورتحال میں کیس کیسے چلا سکتے ہیں؟ عدالت اس صورتحال پر کارروائی کرے۔بختیار چنہ نے کہا کہ ایف آئی اے دھکم پیل کی صورتحال میں اپنا دفاع کیسے کرے گی۔ رش اور دھکم پیل کے باعث سیکیورٹی کے مسائل بھی پیدا ہورہے ہیں۔خیال رہے کہ گزشتہ سماعت پر کراچی کی بینکنگ کورٹ نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری اور فریال تالپور کی ضمانت میں 7 جنوری تک توسیع کی تھی، جس کی مدت آج ختم ہونے پر دونوں رہنما عدالت میں پیش ہوئے تھے۔یاد رہے کہ جعلی بینک اکاؤنٹس میں سابق صدر آصف علی زرداری، فریال تالپور، انور مجید، عبدالغنی مجید، حسین لوائی، حسین لوتھا، ملک ریاض کے داماد زین ملک و دیگر ملزمان نامزد ہیں۔ملزمان پر جعلی بینک اکاؤنٹس کے ذریعے اربوں روپے کی منی لانڈرنگ کا الزام ہے تاہم کیس میں آصف علی زرداری اور فریال تالپور نے عبوری ضمانت لے رکھی ہے۔اس کے علاوہ انور مجید کے بیٹے نمر مجید، ذوالقرنین، علی مجید سمیت ملک ریاض کے داماد زین ملک بھی عبوری ضمانت پر ہیں جبکہ انور مجید، عبدالغنی مجید، حسین لوائی، طٰحہ رضا گرفتار ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top