وزیراعلی ہاﺅس کے سامنے سول سوسائٹی کا 30 گھنٹوں سے دھرنا جاری

 cm house karachi1کراچی، وزیر اعلیٰ ہاﺅس کے سامنے گزشتہ 30گھنٹوں سے سول سوسائٹی کی جانب سے مظاہرہ جاری ہے۔ مظاہرین کا موقف ہے کہ کالعدم تنظیموں پر پابندی عائد کی جائے اور ان کی کارروائیوں کو روکا جائے۔ دہشت گردی اور فرقہ وارانہ ٹارگٹ کلنگ کے خلاف کراچی میں وزیر اعلیٰ ہاوس کے باہر سول سوسائٹی کی جانب سے احتجاجی دھرنا دوسرے روز بھی جاری ہے۔ مظاہرین کا مطالبہ ہے کہ دہشت گردوں،کالعدم تنظیموں کے کارکنوں کے خلاف کاروائی کی جائے۔ پاکستان میں جاری دہشت گردی کے پے در پے واقعات کراچی میں کالعدم تنظیموں کے جلسے جلوس پر پابندی اور ان میں موجود جرائم پیشہ افراد کی گرفتاری کا مطالبہ لئے سول سوسائٹی کے افراد گزشتہ روز سے وزیر اعلیٰ ہاوس کے باہر دھرنا دیئے بیٹھے ہیں۔ مظاہرین نے سندھ حکومت کا علامتی تابوت والا جنازہ بھی رکھا ہے۔ دھرنے کے شرکائ سے وزیر اعلیٰ کی مشیر شرمیلہ فاروقی نے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کر رہی ہے، جلد ہی اچھے نتائج نکلیں گے۔ دھرنے کی پیش نظر پی آئی ڈی سی سگنل پر پولیس کی بھاری نفری تعینات ہے، جہاں خواتین پولیس اہلکاروں کے ساتھ ساتھ واٹر کینن اور قیدیوں کو لے جانے والی پولیس وین بھی موجود ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top