سانحہ شکار پورکے خلاف کراچی میں سول سوسائٹی کی جانب سے وزیراعلی ہاﺅس کے باہردھرنا جاری

civil socityکراچی، سانحہ شکار پورکے خلاف کراچی میں سول سوسائٹی کی جانب سے وزیراعلی ہاﺅس کے باہر 23 گھنٹے سے دھرنا جاری ہے۔ شرکا نے کالعدم تنظیموں کے خلاف فوری کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔تفصیلات کے مطابق سانحہ شکار پور اور کالعدم تنظیموں کے خلاف سول سوسائٹی سراپا احتجاج بن گئی ہے۔ خواتین، بچوں، نوجوانوں اور مردوں کی ایک بڑی تعداد نے وزیر اعلی ہاو¿س کے باہر پیر کی شامسے دھرنا دے رکھا ہے۔ احتجاجی مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز بھی اٹھا رکھے ہیں۔ پولیس نے مظاہرے کے باعث وزیراعلی ہاﺅس جانے والی سڑک کنٹینر لگا کر بند کر دی ہے۔ وزیر اعلی ہاﺅس کے باہر پولیس کی بھاری نفری بھی تعینات ہے۔ دھرنے کے مشتعل شرکا نے سندھ حکومت کا علامتی جنازہ بھی نکالا۔ مقررین نے کہا کہ سانحہ شکار پور حکومتی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ صوبائی حکومت امن و امان قائم کرنے میں ناکام ہو چکی ہے۔ سانحہ کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے وزیر اعلی سندھ فوری مستعفی ہو جائیں۔ پاک فوج سے مطالبہ کیا گیا کہ سندھ میں کالعدم تنظیموں کے خلاف موثر آپریشن کیا جائے اور دہشت گردوں کے مقدمات فوجی عدالتوں میں چلائے جائیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top