Tuesday, November 24, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

سندھ ہائی کورٹ نے عادل صدیقی کی عبوری ضمانت منظور کرلی

سندھ ہائی کورٹ نے نیب ریفرنس میں مفرور ایم کیو ایم کے عادل صدیقی کی عبوری ضمانت منظور...

محمد رضوان عرفان کی حکومتِ سندھ سے اپیل

کراچی الیکٹرونکس ڈیلرز ایسوسی ایشن کے صدر محمد رضوان عرفان کی حکومتِ سندھ سے اپیل، 6 بجے دکانیں...

اے این ایف کی کاروائی، منشیات فروش گرفتار

 اے این ایف نے مختلف کارروائیوں میں منشیات برآمد کر کے دو ملزمان کو گرفتار کر لیا،تفصیلات کے...

کراچی میں آج بونداباندی کا امکان

موسم کی صورتحال، کراچی میں آج بونداباندی کا امکان ہے۔ آج کم سے کم درجہ حرارت 16 ڈگری...

فلائی اوور شہید لفٹیننٹ یاسر عباس کے نام سے منسوب

murad-ali-shah-aکراچی وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے صوبائی دارالحکومت کے 12 ہزار سڑک کوپی این ایس مہران پر حملہ کرنے والے دہشت گردوں کو پسپا کرتے ہوئے جام شہادت نوش کرنے والے شہید لیفٹنٹ یاسر عباس کے نام سے منسوب کرنیکا اعلان کیا اور کہا کہ گذشتہ روز کراچی میں فوڈ فیسٹیول میں شہید کی والدہ ملیں،جنہوں نے خواہش ظاہر کی کہ وہ اپنے بیٹے کی قربانی کو یاد رکھنے کے لیے کسی سڑک یا پل کو انکے نام سے منسوب کیا جائے۔ انہوں نے یہ فیصلہ آج وزیراعلیٰ ہاؤس میں کراچی پیکیج اسکیمز اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں وزیر بلدیات جام خان شورو، وزیراعلیٰ سندھ کے پرنسپل سیکریٹری سہیل راجپوت، پی ڈی کراچی پیکیج و دیگر حکام نے شرکت کی۔ اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ نے وزیر بلدیات کو ہدایت کی کہ سن سیٹ بالیوارڈ فلائی اوور کا کام ساڈے تین ماہ میں مکمل کیا جائے، یہ فلائی اوور اہم ہے جسکی تکمیل جتنی جلد ہو اتنا اچہا ہے، مجھے دن رات کام ہوتا نظر آنا چاہیے۔ چاہتا ہوں آئندہ پیر سب میرین انڈرپاس کا ایک طرف کھول دیا جائے جسکو نظر میں رکھتے ہوئے کام بروقت مکمل کیا جائے۔ اجلاس میں وزیر بلدیات جام خان شورو نے وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا کہ 8 ہزار سڑکیں ایسی ہیں جو قابلِ گذر نہیں جنکی تعمیر نو کے لیے سمری آپ (وزیراعلیٰ سندھ) کو بھیجی ہے۔ سب میرین انڈرپاس اور 2 کلومیٹر طویل ٹیپوسلطان سے کارساز سڑک کا کام تقریباً مکمل ہے جسکی کارپیٹنگ شروع ہو گئی ہے، کینٹ اسٹیشن روڈ اور 12 کلومیٹر طویل 12 ہزار روڈ کا کام شروع ہوگیا ہے جبکہ اسٹیڈیم روڈ کا کام شروع کرنے والے ہیں۔ جس پر وزیراعلیٰ سندھ نے متعلقہ حکام کو احکامات دیتے ہوئے کہا کہ 12 ہزار سڑک کوپی این ایس مہران پر حملہ کرنے والے دہشت گردوں کو پسپا کرتے ہوئے جام شہادت نوش کرنے والے شہید لیفٹنٹ یاسر عباس کے نام سے منسوب کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ روز کراچی میں فوڈ فیسٹیول میں شہید کی والدہ ملیں،جنہوں نے خواہش کا اظہار کرتے ہوئے مجھے سے امید ظاہر کی کہ وہ اپنے بیٹے کی قربانی کو یاد رکھنے کے لیے کسی سڑک یا پل کو انکے نام سے منسوب کریں۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ انہوں نے اپنا بیٹا قربان کیا ہے، مجھے انکے لیے بے حد عزت ہے،انکے بیٹے کی قربانی کو فلائی اوور سے منسوب کرکے ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔

Open chat