Friday, November 27, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

ڈیفنس فیز4 میں مُبینہ پولیس مقابلہ

ڈیفنس فیز 4 میں امام بارگاہ کے قریب مُبینہ پولیس مقابلہ، پولیس اور ڈاکوؤں کے مابین فائرنگ کا...

ملٹری ٹیلی پیتھی، فوجیوں کا دماغ پڑھا جاسکے گا

امریکی فوج کا تحقیق ادارہ ’’آرمی ریسرچ آفس‘‘ (اے آر او) آج کل ایک ایسے اچھوتے منصوبے پر...

اسسٹنٹ کمشنر ناظم آباد کی کارروائی، پیٹرول پمپ سیل

اسسٹنٹ کمشنر ناظم آباد کی کارروائی، ویمن جناح یونیورسٹی سے متصل پیٹرول پمپ سیل، اسسٹنٹ کمشنر کے...

وزیراعظم کی کراچی منصوبے جلد مکمل کرنے کی ہدایت

وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت کراچی ٹرانسفارمیشن پلان کے حوالے سے اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد...

تمام طلباکاڈرگ ٹیسٹ لازمی کیا جائےگا،وزیراعلیٰ

murad ali shah bکراچی وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے بچوں کو بڑھتے ہوئے منشیات کے خطرے سے بچانے کے لیے فیصلہ کیا ہے کہ سرکاری اور نجی اداروں میں تعلیم حاصل کرنے والے بچوں کے ڈرگ ٹیسٹ کو لازمی کیا جائے۔انہوں نےیہ بات آج صوبے بھر میں تعلیمی اداروں میں منشیات کے خطرے سے متعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی ۔ اجلا س میں صوبائی وزیر تعلیم جام مہتاب ڈھر، صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر سکندر میندھرو، وزیر اعلیٰ سندھ کے پرنسپل سیکریٹری سہیل راجپوت، سیکریٹری تعلیم اقبال درانی، سیکریٹری صحت ڈاکٹر فضل پیچوہو اور دیگر نے شرکت کی۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ ملک کی چند بڑی یونیورسٹیوں سے یہ رپورٹس ملی ہیں کہ وہاں پر کچھ طلبا منشیات استعمال کررہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ میں بچوں کو تمام سماجی برائیوں سے تحفظ کے حوالے سے بہت زیادہ فکر مند ہوں اور یہ ہم سب کی مشترکہ ذمہ داری ہے کہ ہم منشیات کے بڑھتے ہوئے خطرے سے اپنے بچوں کو تحفظ فراہم کریں ۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر سکندر میندھرو، صوبائی وزیر تعلیم جام مہتاب ڈھر ، سیکریٹری تعلیم اقبال درانی اور سیکریٹری صحت فضل پیچوہو پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دی جو کہ ہائیر اور سیکنڈری سطح پر طلباء کے ڈرگ ٹیسٹنگ کے حوالے سے قانون تیار کرے گی۔انہوں نے کہا کہ ہر ایک طلبہ کے لیے ٹیسٹ کوالیفائی کرنا لازم ہوگا اور انہوں نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ اس ٹاسک میں والدین بھی میرے ساتھ تعاون اور سپورٹ کریں گے۔صوبائی سیکریٹری تعلیم نے کہا کہ انہوں نے طلبا کی فہرست تیار کرنا شروع کردی ہے تاکہ اسے ڈرگ ٹیسٹ شروع کرنے کے لیے محکمہ صحت کے ساتھ شیئر کی جاسکے۔ اس پر وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ انہیں جب بھی ضرورت ہوگی وہ اس کے لیے فنڈز جاری کردیں گے۔

Open chat