Monday, October 26, 2020
Home خاص خبریں صحت، تعلیم، فلاحی ادارے پولیو پر قابو نہ پایا تو معاشی پہیہ جام ہوجائیگا، پروفیسر ڈاکٹر...

پولیو پر قابو نہ پایا تو معاشی پہیہ جام ہوجائیگا، پروفیسر ڈاکٹر عبدالرشید

 untitledوفاقی اردو یونیورسٹی کے سینئر لیکچرار اور کلیہ مطالعات مذاہب کے رئیس پروفیسر ڈاکٹر عبدالرشیدنے کہا ہے کہ دنیا بھر کے جید علماءکرام اور مسلم ماہرین طب پولیو ویکسین کی افادیت کو تسلیم کرتے ہوئے اپنے ممالک کے بچے اس موذی مرض سے بچانے میں کامیاب ہوگئے ہیں تاہم بدقسمتی سے پاکستان میںتاحال اس پر قابو نہیں پایا جاسکا ہے، انسداد پولیو کیلئے اجتماعی کوششوں کی ضرورت ہے ورنہ ملک کا معاشی پہیہ جام ہونے کا خدشہ ہے ،دنیا کے تمام مما لک سے پولیو کا خاتمہ ہو چکا ہے،صرف پاکستان، افغانستان اورنائیجیریا سے خاتمہ ہونا باقی ہے، بچوں کو امراض سے بچاﺅ کے لئے ویکسین پلانا والدین کی ذمہ داری ہے۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے مقامی ہوٹل میں انٹرنیشنل ریسرچ کونسل برائے مذہبی امورکے زیر اہتمام مذہبی جرائد و اخبارات کے مدیروںسے ”بچوں کے امراض اور مذہبی تعلیمات “کے عنوان سے منعقدہ ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ورکشاپ سے انٹرنیشنل ریسرچ کونسل برائے مذہبی امور IRCRA) ( کے مرکزی ذمہ دار مولانا محمد عاصم مخدوم ،وزیر اعلیٰ سندھ پولیو کنٹرول سیل کے کمیونیکیشن اینڈ رپورٹنگ آفیسر محمد عامر،جامع مسجد استقلال کے خطیب مولانا حماد اللہ مدنی اور وفاقی اردو یونیورسٹی کے سینئر لیکچرارڈاکٹر عبدالماجدنے بھی خطاب کیا،قبل ازیں ورکشاپ کا آغاز قاری عابد الرحمن نے تلاوت کلام پاک سے کیا جبکہ نعت پڑھنے کی سعادت صدارتی ایوارڈ یافتہ قاری حامد محمود نے حاصل کی۔ انٹرنیشنل ریسرچ کونسل برائے مذہبی امور (آئی آر سی آر اے )سندھ کے کوآرڈی نیٹر صاحب گل نے مہمانوں کو خوش آمدید کہا اور ورکشاپ کا ایجنڈا پیش کیا۔ اختتامی دعا ممتازعالم دین مولانا حماد اللہ مدنی نے کروائی۔ شرکاءتقریب نے پولیو سمیت تمام ویکسین پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے عوام الناس سے اپیل کی کہ وہ اس مہم میں متعلقہ محکموں کا بھرپور ساتھ دیں۔مقررین نے بتایا کہ بچوں میں ڈائریا،خسرہ،تپ دق سمیت 9بیماریاں پائی جاتی ہیں، ڈائریا نمونیہ اور خسرہ سے بچوں میں شرح اموات زیادہ ہے اور گزشتہ سال خسرہ کی وجہ سے 600سے زائد بچے موت کا شکار ہوچکے ہیں،مقررین نے کہا کہ عالمی اداروں کے تعاون سے وطن عزیز سے چیچک جیسے موذی مرض کا خاتمہ کیا جاچکاہے تاہم پولیو کے حوالے سے عوام میں آگہی اور کچھ عناصر کی بے جا مخالفت اور منفی پروپگنڈہ کے باعث پاکستان ابھی تک اس مرض کی مکمل طور پر روک تھام میں کامیاب نہیں ہوسکا ،دنیا کے تمام مسلم ممالک اس موذی مرض پر قابو پاچکے ہیں ، ایک تحقیق کے مطابق دنیابھر کے 85 فیصدکیسز پاکستان میںسامنے آتے ہیں ، آج پولیو کے باعث پاکستان پر سفری پابندیاں لگ رہی ہیں، خدانخواستہ اگر پاکستان پر مکمل سفری پابندیاں لگ گئیں تو ملکی معیشت کا پہیہ جام ہوجائے گا جس کی وجہ سے ملک کی معاشی حالت مزید خراب ہوجائے گی، پولیو وائرس سمیت تمام مہلک بیماریوں سے بچوں اور آئندہ نسلوں کو بچانے کے لئے اجتماعی کوششوں کی ضرورت ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

کراچی سمیت سندھ میں ٹڈی دل کے حملوں کا خطرہ

کراچی ،سندھ میں پھرفصلوں پرٹڈی دل کےحملےکاخدشہ محمکہ زراعت سندھ نےٹڈی دل کےحملےکانیاالرٹ جاری کردیا ۔ محکمہ زراعت کے حکام کا...

ملیر، رینجرز اور پولیس کی کارروائی،2 ملزم گرفتار

کراچی۔ ملیر میں رینجرز اور پولیس کی مشترکہ کارروائی، 2 ملزمان گرفتار، پولیس ذرائع کے مطابق ملزمان نے دو سال قبل 30...

کیماڑی سے منوڑہ تک لانچوں میں میلا ریلی

کراچی، کیماڑی سے منوڑہ تک میلا ریلی، لانچوں میں شریک افراد کے آقا کی آمد مرحبا کے نعروں سے سمندرمیں آقا صلی...

سائٹ، ولیکا چورنگی کے قریب فیکٹری میں آتشزدگی

کراچی ، سائٹ کے علاقتے ولیکا چورنگی کے قریب فیکٹری میں آتشزدگی ، فائر بریگیڈ کی تین گاڑیاں روانہ، ذرائع کے...