Wednesday, October 21, 2020
Home Trending وطن کی بیٹیاں وطن کی ناموس ہوتی ہیں جنہیں اغیار کی قید...

وطن کی بیٹیاں وطن کی ناموس ہوتی ہیں جنہیں اغیار کی قید میں نہیں رکھا جاسکتا، ڈاکٹر فوزیہ صدیقی

unnamed (1)کراچی، عافیہ موومنٹ کی رہنما ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے کراچی پریس کلب میںپریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ پریس کانفرنس درحقیقت قوم کی ایک بہن کی جانب سے ایک تحریری گزارش ہے۔ وہ عافیہ جو میری بہن ہے وہ قوم کی بیٹی ہے اور آپ کی اور قوم کی میں مشکور رہوں کہ جنہوں نے میری بہن کی قربانی کو سمجھا ،محسوس کیا اور اپنایا۔ آج عافیہ کے 2بچے جو امریکی قید سے گھرواپس آگئے ہیں وہ اس تحریک کا نتیجہ ہے ۔ جب آپ اہل صحافت اور اہل قلم قوم کے جذبات کو اور ظلم کے حقائق کی پر زور عکاسی کرتے ہیں تو مجھ جیسی لاچار بہنیں بھی کامیابی کے دعوے کرسکتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ کون کہتا ہے کہ معجزے نہیں ہوتے میرے گھر کے چار افراد غائب ہوگئے تھے ایک بہن اوراس کے تین معصوم بچے جن کے بارے میں ہمیں پانچ سال تک کچھ معلوم نہیں تھا۔ ہمیںتویہ اطلاع تھی کہ مار دیئے گئے ہیں ۔ اُن کی تلاش میں جب میں نکلی تو پاسبان مل گئے کعبہ کو صنم خانے سے اورجب قوم کھڑی ہوگئی تو چار میں سے تین کا پتہ چل گیا۔کیا یہ بڑی کامیابی نہیں، ایسے کیسوں میں تو زیادہ تر مسخ شدہ لاشیں یا گمنام قبریں ہی ملتی ہیں یہ معجزہ نہیں تو کیا ہے ؟ آج میں آپ سے وہی حمایت دوبارہ لینے آئی ہوں ۔ وطن کی بیٹیاں وطن کی ناموس ہوتی ہیں جنہیں اغیار کی قید میں نہیں رکھا جاسکتا ۔انہوں نے کہا کہ قوم کا ہر فرد اور درد مند دل عافیہ کی وطن واپسی کا خواہاں ہے ۔ اس سلسلے کی کوششوں میں سے ایک کاوش اتوار 8فروری کو مزار قائد پر دن 2بجے قومی جرگہ کے عنوان سے منعقد کرکے کی جارہی ہے ۔ اس میں عوام کے ساتھ ساتھ ملک بھر کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے 100سے زائد نامور مشاہیر بھی شریک ہوں گے اور یہاں پر طے پانے والے اہم نکات پر ایک قومی میثاق مرتب کیا جائے گا جو کہ وزیر اعظم ، صدر مملکت ، آرمی چیف اور ایسے ہی ارباب اختیار کے سامنے رکھا جائے گاتاکہ حکومت قومی امنگوں کی عکاس اس میثاق کی بنیاد پر اب ناموس وطن قوم کی بیٹی ڈاکٹر عافیہ صدیقی کو امرےکہ سے واپس لانے میں اپنا مطلوبہ کردار ادا کرے ۔ صحافی بھائیوں دنیا کی وہ اقوام کہ جنہیں ہم ترقی یافتہ اقوام کہتے ہیں ان کے قومی شعور کی جڑیں ان کی قومی حمیت کی ز مین میں پیوست ہوتی ہیں اور ان کی اولین ترجیح اپنے قومی اداروں اور اپنے شہریوں کا تحفظ ہر قیمت پر یقینی بنانا ہے ۔ڈاکٹر فوزیہ نے سوال کیا یہ ہماری قومی حمیت اور قومی شعور کا فقدان نہیں تو اور کیا ہے ؟ 12سال بیت گئے لیکن اب تک قوم کی بیٹی کی رہائی کا مسئلہ حل نہ ہوا۔ معزز اہل صحافت عافیہ صدیقی کی وطن واپسی کا معاملہ ہماری قومی حمیت کی ابتری کا بہت بڑا ثبوت ہے کیونکہ کئی مرحلے بھی ایسے بھی آئے تھے کہ یہ مسئلہ فوری حل ہو سکتا تھا جیسا کہ جب ریمنڈ ڈیوس کو گرفتار کیا گیا تھا اور اس کی رہائی کے لئے امرےکہ ہر بات ماننے کو تیار تھا اس وقت عافیہ کی رہائی ممکن تھی اگراسے مشروط کردیا جاتا۔ میں آخر میں میڈیا سے درخواست کرتی ہوں کہ وہ اس پروگرام قومی جرگے کو کامیاب بنانے میں ہم سے تعاون کریں اور اس کی بھر پور تشہیر کریں اور اس حوالے سے اپنی خبروں ، تجزیوں، کالموں اور مضامین میں اسے نمایا ںاہمیت دیں تاکہ رائے عامہ متحرک کرکے حکومت کا سویا ہوا ضمیر جھنجھوڑ کر بیدار کیا جاسکے اور میں آپ سے اس فرض کفایہ کی تکمیل کے لئے التجا کرتی ہوں ۔ اگر آپ قومی جرگے کے حوالے سے کوئی سوال کرنا چاہتے ہیں تو میں حاضر ہوں ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

شیریں جناح کالونی دھماکے میں ایک کلو بارود استعمال ہوا

کراچی، شیریں جناح کالونی بم دھماکے کے حوالے سے سی تی ڈی انچارج راجہ عمرخطاب نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا...

سندھ پولیس اچھا کرے یا برا، صوبائی حکومت ذمہ دار ہے، گورنر

کراچی، گورنر سندھ عمران اسماعیل نے پولیس افسران کی چھٹیوں کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا سندھ پولیس اچھا کرے یا...

بچوں سے زیادتی، زیڈ ٹی کا ہدایت کارعظیم احمد سے معاہدہ

کراچی ، سائن انٹر ٹیمنٹ اور زیڈ ۔ٹی (کامران شریف)کا اپنی نئی ڈرامہ سیریلز ،سٹ کام ، ٹیلی فلمز کے لےے ڈرامہ...

سندھ حکومت کا پولیس افسران کی چھٹیاں منظور نہ کرنے کا فیصلہ

کراچی، سندھ حکومت نے پولیس افسران کی چھٹیاں منظور نہ کرنے کا فیصلہ، صوبائی حکومت کے ذرائع کا کہنا ہے کہ کسی...