Tuesday, October 27, 2020
Home Trending زرعی اراضی تباہ کرکے معاشی بحران کا شکار کیا جا رہا ہے،...

زرعی اراضی تباہ کرکے معاشی بحران کا شکار کیا جا رہا ہے، حافظ محمد سعید

hafiz-saeed_کراچی، جماعة الدعوة پاکستان کے امیر پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ حالیہ تباہ کن سیلاب بھارت کا پاکستان پر آبی حملہ ہے۔ لاکھوں ایکڑ زرعی اراضی تباہ کرکے پاکستان کو معاشی بحران کا شکار کیا جا رہا ہے۔ بھارت کے تعمیر کردہ متنازع ڈیم جنگی ہتھیار کی حیثیت اختیار کرچکے ہیں۔ پاکستان خاموشی اختیار کرنے کی بجائے بھارت کی آبی جارحیت کا راستہ روکے۔ سیلاب متاثرین کے لیے جماعة الدعوة کا بڑے پیمانے پر ریلیف آپریشن جاری ہے، قوم آگے بڑھ کر متاثرین کی مدد کے لیے کرداد ادا کریں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعة الدعوة کے صوبائی مرکز التقویٰ گلشن اقبال میں متاثرین سیلاب کے لیے امدای سامان کی بڑی کھیپ کی روانگی کے موقع پر میڈیا سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ جماعة الدعوة کراچی کے امیر ڈاکٹر مزمل اقبال ہاشمی اور فلاح انسانیت فاﺅنڈیشن کراچی کے انچارج شاہد محمود بھی موجود تھے۔ امیر جماعة الدعوة پروفیسر حافظ محمد سعید نے کراچی سے متاثرین سیلاب کے لیے 60 لاکھ روپے مالیت پر مشتمل امدادی سامان کی بڑی کھیپ روانہ کی۔ روانہ کیے گئے سامان میں 1500 خاندانوں کے لیے ماہانہ راشن پیک، 200 خیمے، 10 ہزار مریضوں کے لیے ادویات اور 25 ایمرجنسی کٹ کے علاوہ دیگر امدادی سامان بھی شامل تھا۔ حافظ محمد سعید نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بھارت متنازع ڈیموں کو جنگی ہتھیار کے طور پر استعمال کر رہا ہے۔ باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت دریاﺅں میں پانی چھوڑ کر پاکستان کی فصلوں اور آبادیوں کو ڈبویا گیا۔ بھارت مسلسل پانچ برس سے پاکستان پر واٹر بم پھینک رہا ہے۔ اگر بھارت اسی انداز سے مقبوضہ کشمیر میں متنازع ڈیم کی تعمیر مصروف رہا تو پاکستان کی آبادیاں اور فصلیں محفوظ نہیں رہیں گی۔ انہوں نے کہا کہ 9 لاکھ کیوسک کا ریلا ایک ساتھ چھوڑ کر چناب میں سیلابی صورت حال پیدا کی گئی۔ جبکہ ہیڈ تریموں پر اب بھی سیلابی پانی کا دباﺅ برقرار ہے، جس سے ثابت ہو رہا ہے کہ بھارت مسلسل پانی چھوڑے جا رہا ہے۔ جھنگ اور چنیوٹ کے بعد ملتان اور مظفر گڑھ کے علاقے بھی تباہ کن سیلاب سے محفوظ نہیں رہ سکے۔ اگر سیلابی صورت حال اسی طرح برقرار رہی تو سندھ کی آبادی اور فصلیں بھی ہولناک تباہی کی لپیٹ سے محفوظ نہیں رہ سکیں گی۔ حکومتی انتظامیہ پیشگی انتظامات کے ذریعے سندھ میں حتی الامکان نقصانات سے بچنے کی تدابیر اختیار کرے۔ ایک سوال کے جواب میں حافظ محمد سعید کا کہنا تھا کہ بھارت تخریب کاری اور سازشوں کے ذریعے پاکستان کو اندرونی مسائل میں الجھاکر خطے کی گھبیر صورت حال سے فائدہ اٹھانا چاہتا ہے۔ پاکستان اپنی غلطیوں اور کوتاہیوں کی اصلاح کرتے ہوئے بھارت کے جارحانہ اقدامات کا راستہ روکے۔ ایک اور سوال کے جواب میں حافظ محمد سعید کا کہنا تھا کہ پاکستان میں نئے ڈیموں کی تعمیر سے انکار نہیں کیا جاسکتا۔ ملکی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے ہر صوبے میں نئے ڈیم تعمیر کیے جائیں۔ ڈیموں کی تعمیر پر سیاست کی بجائے ملک و قوم کے عظیم تر مفاد کو پیش نظر رکھتے ہوئے قومی یکجہتی کا مظاہرہ کیا جائے۔ اس موقع پر فلاح انسانیت فاﺅنڈیشن کراچی کے انچارج شاہد محمود نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ فلاح انسانیت فاونڈیشن کے رضاکاروں نے اب تک 15 ہزار سے زائد متاثرہ افراد کو ریسکیو کیا ہے۔ جبکہ فری ٹرانسپورٹ سروس کے ذریعے 30 ہزار کے قریب متاثرین کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا جاچکا ہے۔ اس کے علاوہ سیلاب متاثرہ اضلاع میں 20 ہزار سے زائد مریضوں کا علاج معالجہ کرکے ہزاروں روپے کی مفت ادویات تقسیم کی جاچکی ہے۔ جبکہ ایک لاکھ سے زائد افراد کو تیار کھانا اور 600 سے زائد خاندانوں کو ماہانہ راشن پیک بھی فراہم کیے جاچکے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

پشاور دھماکے کی شدید مزمت و قیمتی جانوں کے نقصان پر اظہار افسوس کرتے ہیں، حلیم عادل شیخ

پشاور دھماکے پر پی ٹی آئی مرکزی رہنما حلیم عادل شیخ کی مزمت و قیمتی جانوں کے نقصان پر اظہار افسوس, ان...

سی ایس ایس امتحان، کراچی کے شہریوں کے لیے بڑی خوش خبری

کراچی: ایڈمنسٹریٹر کراچی افتخار علی شالوانی نے فریئر ہال میں سی ایس ایس کارنر کا افتتاح کر دیا، ان کا کہنا تھا...

کراچی چڑیا گھر اور برگد کا درخت

برگد کا درخت متعدد خصوصیات کا حامل سمجھا جاتا ہے۔اس کی ایک خاص بات یہ ہے کہ...

کراچی کی تاریخی لی مارکیٹ

لی مارکیٹ اہل کراچی کے لیے جانا پہچانا نام ہے۔یہ شہر کی قدیم آبادی لیاری کے قریب واقع ہے۔انگریز دور میں...