Thursday, October 22, 2020
Home خاص خبریں مذہبی و سیاسی جماعتیں نیپراکے الیکٹرک سے صارفین کو اربوں واپس دلائے،حافظ نعیم

نیپراکے الیکٹرک سے صارفین کو اربوں واپس دلائے،حافظ نعیم

hafiz-naeem-bکراچی، جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا)کے چیئرمین بریگیڈیئر (ر)طارق محمود خان سدوزئی کے نام ایک خط میں کہا ہے کہ نیپرا کے الیکٹرک کی فروخت کو رکوا کر کراچی کے صارفین اور قومی اداروں کے اربوں روپے کی واجب الادا رقم واپس دلائے ۔ نیپرا ٹال مٹول کے بجائے صارفین کے حق میں کیے جانے والے فیصلوں کے خلاف تمام اسٹے آرڈر کو یکجا کر کے انہیں عدالت سے خارج کرانے کی حتمی تاریخ کا اعلان کرے ۔ خط کے مندرجات میں مزید کہا کہ کے الیکٹرک کی تیسری مرتبہ شنگھائی الیکٹرک کو فروخت کراچی کے عوام پر ظلم ہے شنگھائی الیکٹرک پر پانامہ لیکس کے مطابق مالٹا میں 360 ملین ڈالرز کی کرپشن کے سنگین الزامات ہیں۔ ایک طرف سپریم کورٹ میں پانامہ لیکس کے حوالے سے مقدمات زیرِ سماعت ہیں تو دوسری طرف کے الیکٹرک کو پانامہ لیکس میں کرپشن کے الزامات کا سامناکرنے والی شنگھائی الیکٹرک کو فروخت کیا جا رہا ہے۔کراچی کی عوام کو بنیادی ضروریات بجلی فراہم کرنے والے ادارہ اب ایسٹ انڈیا کمپنی کا روپ دھار چکا ہے ۔ جس کا فائدہ خریدنے والے کو اور نقصان کراچی کی عوام کو مہنگی بجلی، بوگس بلنگ اور بدترین لوڈ شیڈنگ کی صورت میں ہو رہا ہے۔کے الیکٹرک پر کراچی کے صارفین اور قومی اداروں کے اربوں روپے واجب الادا ہیں۔ کے ای ایس سی کی غیر شفاف نجکاری فروخت کے معاہدوں اور ملٹی ایئر ٹیرف میں غیر قانونی تبدیلیوں سے لے کر شنگھائی الیکٹرک کو تیسری بار فروخت کرنے کا سارا عمل متنازعہ اور بد عنوانیوں پر مشتمل ہے۔ کراچی کی عوام مہنگی بجلی، بد ترین لوڈ شیڈنگ اور بوگس بلنگ سے تنگ آچکے ہیں۔ کراچی میں روزانہ ڈھائی ہزار سے زائد لوگ کے الیکٹرک کے دفاتر میں بوگس بلنگ و دیگر شکایت لے کر دھکے کھا رہے ہیں۔ نیپرا کا ملٹی ائیر ٹیرف جس کی بنیاد پر کارکردگی کو بہتر بنا کر ہی کے الیکٹرک منافع کما سکتی ہے جبکہ کے الیکٹرک نے گذشتہ دس سال میں نہ ہی ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن نقصانات میں کمی کے ہدف کا حاصل کیا اور نہ ہی اس کی ریکوری سو فیصد ہے۔ تو کس طرح 2009ءمیں سالانہ 15 ارب نقصان میں جانے والی کے الیکٹرک رواںسال 40 ارب سے زائد متوقع منافع کما رہی ہے۔ کے الیکٹرک کے ناجائز منافع کی بنیاد اپنے پلانٹس کی استعداد ی صلاحیت ہونے کے باوجود دانستہ طور پر کم بجلی پیدا کرنا۔ وفاق اور IPPs سے سستی بجلی لے کر کراچی کے شہریوں کو مہنگی بجلی فروخت کرنا اور لوڈ شیڈنگ اور بوگس بلنگ کے ذریعے جبری بھتہ وصولی ہے۔ جو کہ ملٹی ائیر ٹیرف کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے۔خط میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ کہ نپیرا ٹال مٹول سے کام لینے کے بجائے صارفین کے حق میں کئے جانے والے فیصلوں کے خلاف تمام اسٹے آرڈرز کو یکجا کر کے انہیں عدالت سے خارج کروانے کے لیے حتمی تاریخ کا اعلان کرے ۔ کے الیکٹرک کی فروخت کو روک کر کراچی کے صارفین اور قومی اداروں کے اربوں روپے کی واجب الادا رقم واپس دلوائے ۔اور کے الیکٹرک کاگذشتہ دس سالہ کارکردگی کا فرانزک آڈٹ کروا کر رپورٹ عوام کے سامنے پیش کی جائے۔ آئندہ 10 سالہ ملٹی ائیر ٹیرف میں حقیقی کمی کر کے کراچی کے عوام کو ریلیف دیا جائے نہ کہ اس میں اضافہ کر کے شنگھائی الیکٹرک کو فروخت کرنے کے لیے باعث کشش بنایا جائے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

سندھ حکومت اور پولیس ڈرامہ کررہی ہے، شبلی فراز

کراچی، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات شبلی فراز نے ایک بار پھر سندھ پولیس کی چھٹیوں کی درخواست کو ڈارمہ قرار دے...

کراچی، مسکن چورنگی پر دھماکے کے زخمیوں کے علاج کے معاملے محکمہ صحت سندھ نے نجی اسپتال کو خط لکھ کر آگا...

کراچی میں جھڑپوں کی جھوٹی خبر،بھارتی میڈیا دنیا بھر میں رسوا

کراچی ،بھارتی میڈیا نے پاکستان کے خلاف جھوٹے پروپیگنڈے کے اپنے ہی ریکارڈز توڑ دیے۔ بھارتی میڈیا اپنی اِس احمقانہ خواہش کو خبر...

کورونا وائرس، حکومت کا کئی شعبوں کی بندش پر غور

کراچی، نیشنل کمانڈ آپریشن سینٹر کا اجلاس وفاقی وزیر اسد عمر کے زیر صدارت ہوا جس میں فیصلہ کیا گیا کہ جس...