Wednesday, December 2, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

ایم کیو ایم کے سینیٹر عتیق شیخ بھی کورونا میں مبتلا

ایم کیو ایم پاکستان کے سینیٹر عتیق شیخ بھی کورونا وائرس میں مبتلا، سینیٹر عتیق شیخ نے چند روز قابل نجی اسپتال میں طبی...

رینجرز کارروائیوں میں 3 اسٹریٹ کرمنلز گرفتار

سندھ رینجرز کی گلشن اقبال اور شاہ فیصل کالونی میں کارروائیاں، 3 ملزمان گرفتار، ترجمان رینجرز کے مطابق گرفتار ملزمان محمد اختر ،سدھیر احمد...

سندھ میں فنڈجاتا ہے لگتا نظر نہیں آتا، سپریم کورٹ

سپریم کورٹ کا سندھ حکومت پر برہمی کا اظہار،جھیلوں اور شاہراہوں کے اطراف درخت لگانے کا حکم، اس موقع پرچیف جسٹس نے سخت ریمارکس...

جعلی نوٹ چلاتے خاتون گرفتار،نقلی 2 ہزار روپے برآمد

کورنگی کراسنگ کے قریب مارکیٹ میں جعلی نوٹ چلاتے ہوئے خاتون گرفتار، ہزار ہزار کے دو نقلی نوٹ بھی برآمد، پولیس کے مطابق ابراہیم...

جماعت اسلامی اقامت دین کی جدو جہد اور تحریک ہے ،حافظ نعیم الرحمن

hafiz naeemشہادت حق کا مطلب ہی یہی ہے کہ مظلوم کے حق میں اور ظالم کے خلاف شہادت دی جائے ۔اہل حق کے پاس ایمان کی طاقت ہے اور باطل قوتوں کے پاس ٹیکنالوجی اور میڈیا کی قوت ہے۔ جماعت اسلامی اقامت دین کی تحریک ہے۔ جماعت اسلامی کے ارکان نے اللہ کے دین کو نافذ کرنے کا حلف اُٹھایا ہے۔ نظم جماعت کی اطاعت ہماری دستوری ذمہ داری ہے۔ تبدیلی کیلئے صالح اور باکردار لوگوں کو ایک بڑی اجتماعیت کے گرد جمع ہوناضروری ہے۔ان خیالات کا اظہار جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے مسجد قریشاں لانڈھی چراغ ہوٹل میں جماعت اسلامی ضلع بن قاسم کے اجتماع ارکان سے اپنے خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر امیر ضلع بن قاسم محمد اسلام، سیکریٹری مرزا فرحان بیگ، نائب امیر ضلع سید مفخر علی اور مولانا ضیاءالرحمن فاروقی نے بھی خطاب کیا۔ حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ اللہ کی خوشنودی کی خاطر ہم سب ایک جگہ جمع ہوئے ہیں اور ہم سب آپس میں ایک دوسرے سے محبت کرتے ہیں اور معاشرے میںاصلاح کا کام کررہے ہیں۔ بڑے مقصد کے لئے کام کرنے والوں کے دل بھی بڑے ہوتے ہیں اور وہ ایک دوسرے کے ساتھ شفیق اور مہربان ہوتے ہیں۔ جماعت اسلامی کا اپنا ایک پورا نظام ہے۔ اس میں سمع واطاعت کے ساتھ ساتھ تنقید اور احتساب بھی ہے لیکن تنقید اور احتساب کے کچھ آداب ہوتے ہیں۔ تنقید برائے اصلاح ہونی چاہیے۔ ہم سب ایک دوسرے کی اصلاح کا کام کررہے ہیں اور نظم جماعت کی پابندی کا ہم نے حلف اُٹھایا ہے۔ ہم غیر مشروط طور پر حق کا ساتھ دیتے ہیں۔ حق حق ہوتا ہے۔ باطل باطل ہوتا ہے۔ شہادت حق کا مطلب ہی یہی ہے کہ مظلوم کے حق میں اور ظالم کے خلاف شہادت دی جائے۔ قاتل اور جابر سے نفرت نہیں بلکہ اُس کے ظلم اور جبر سے نفرت کی جائے اور کوشش کی جائے کہ اُن کی اصلاح ہوسکے۔ اجتماعی بندگی چند گھنٹوں کیلئے نہیں بلکہ پوری زندگی اس کام کیلئے لگادی جائے۔ جو وقت اللہ نے ہمیں دیا ہے اُس کی قدر کی جائے۔ وقت ہمارے پاس اللہ کی امانت ہے۔ اپنے آپ کو اور اپنے گھر والوں ودیگر عزیز واقارب کو آگ سے بچایا جائے اور اپنے کردار اور اخلاق سے لوگوں کو دین کے قریب لایا جائے اور اُنہیںاقامت دین کی جدوجہدکا ہمنوا بنایا جائے اپنے خاندان اور پورے معاشرے کی اصلاح کا کام کیا جائے۔

Open chat