Tuesday, November 24, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

خداداد کالونی ،گودام کی بالائی منزل پر آتشزدگی

خداداد کالونی میں گودام کی بالائی منزل میں آگ لگ گئی، فائربریگیڈ کی گاڑیاں روانہ، ریسکیو ذرائع...

نکاسی کی 936 میں سے781شکایات کا ازالہ کردیا،واٹربورڈ

واٹربورڈ نے شہر کے مختلف علاقوں سے موصولہ فراہمی ونکاسی آب کی 700سے زائد شکایات کا ازالہ...

ریسٹورنٹس میں ان ڈورڈائننگ پر پابندی عائد

ریسٹورنٹس میں ان ڈور ڈائننگ پر پابندی عائد، کمشنر کراچی نے ریسٹورنٹس کے حوالے سے تمام ڈپٹی...

سی ویو پر سائیکلنگ کرنے والوں کے خوش خبری

سی ویو پر سائیکلنگ کرنے والوں کے خوش خبری، کنٹونمنٹ بورڈ نے سی ویو پر تین کلو میٹر...

دوقومی نظریہ مسلمانوں کے اتحاد کی علامت ہے، نظریہ پاکستان کانفرنس

judlogoکراچی، جماعة الدعوة کراچی کے تحت نظریہ پاکستان کانفرنسز سے خطاب کرتے ہوئے رہنماﺅں نے کہا ہے کہ دو قومی نظریہ مسلمانوں کے لیے اتحاد کی علامت ہے۔ ملک میں انتشار پھیلانے کے لیے پاکستانی کی نظریاتی اساس منہدم کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔ انگریز برصغیر میں مذہب کو عبادات گاہوں تک محدود کرنا چاہتے تھے۔ مسلمانوں نے کل بھی ان کے خلاف جدوجہد کی، اب بھی ان کوششوں کو ناکام بنائیں گے۔ نظریہ پاکستان کے احیا کے لیے جدوجہد جاری رہے گی۔ ان خیالات کا اظہار جامعہ الدراسات الاسلامیہ کے نائب مدیر مفتی یوسف کشمیری، مدیر تعلیم شیخ یحییٰ بھٹی، جماعة الدعوة کے رہنما حافظ محمد امجد و دیگر نے ماڈل کالونی اور قائد آباد میں منعقدہ نظریہ پاکستان کانفرنسز سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جس میں مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ مفتی یوسف کشمیری نے کہا کہ پاکستان دشمن عناصر نئی نسل کے زہنوں سے نظریہ پاکستان کی اہمیت و مقاصد نکالنا چاہتے ہیں۔ پاکستان میں فرقہ واریت اورعصبیت کو ختم کر کے اتحاد و اتفاق کی فضاءقائم کرنے کی ضرورت ہے۔ مسلم معاشرے کلمہ طیبہ کی بنیاد پر ہی تشکیل پاتے ہیں۔ بیرونی قوتیں مسلمانوں کو علاقائیت اور لسانیت کی بنیاد پر تقسیم کرنا چاہتی ہیں۔ جامعہ کے مدیر تعلیم الشیخ یحییٰ بھٹی نے کہا کہ نظریہ پاکستان، عالم کفر سے مسلم امہ کو ممتاز کرنے والا نظریہ ہے۔ اسی بنیاد پر سندھ، بلوچستان اور دیگر علاقوں میں پیدا کی گئی شورش کو ختم کیا جا سکتا ہے۔ نوجوان نسل کو قیام پاکستان کے اغراض و مقاصد سے صحیح طور پر آگاہ کرنے کے لیے ہر شخص اپنا کردار ادا کرے۔ حافظ محمد امجد نے کہا کہ وطن عزیز آج جن مشکل حالات سے دوچار ہے اور جس طرح کفار اتحاد امت کو پارہ پارہ کرنے کی کوشش میں مصروف ہیں، ضرورت اس امر کی ہے کہ باہمی اختلافات کو بھلا کر اتحاد و یگانگت کا عملی مظاہرہ کر کے وطن عزیز کی نظریاتی و جغرافیائی سرحدوں کی حفاظت کی جائے۔ علمائے کرام عوام الناس کو نظریہ پاکستان سے آگاہ کریں اور دشمن کا مقابلہ کرنے کے لیے جذبہ ایمانی کو ابھاریں۔

Open chat