Wednesday, October 28, 2020
Home خصوصی رپورٹس اب چین کراچی کو حقیقی روشنیوں کا شہر بنائے گا (خصوصی رپورٹ)

اب چین کراچی کو حقیقی روشنیوں کا شہر بنائے گا (خصوصی رپورٹ)

Kelectricروشنیوں کا شہر کہلانے والا کراچی، بجلی کی آنکھ مچولی کے باعث ایک عرصے سے اندھیرے میں ڈوبا ہوا ہے۔ کراچی الیکٹرک سپلائی کارپوریشن سے کے الیکٹرک تک کا سفر، پاکستانی اجارہ داروں کی ملکیت ایک خلیجی گروپ ’’ابراج‘‘ کو منتقل ہونے کے بعد بھی اہل کراچی کو بجلی فراہمی کا حق ادا نہ ہو سکا۔ اگر کے الیکٹرک نے اس دورانیے میں اپنے کام کو بہتر کرنے کے لیے بہت سے اقدامات کیے۔ مگر مہنگے نرخوں پر بجلی کی فروخت اور لوڈشیڈنگ مستقل طور پر اہل کراچی کے لیے ایک مسئلہ بنی رہی۔
اب 2.2 ملین سے اہل کراچی کے لیے خوشخبری ہے کہ کے الیکٹرک کی زمام کار ابراج سے بجلی کے آلات بنانے والی چینی کمپنی شنگھائی الیکٹرک کارپوریشن کو منتقل ہو رہی ہے۔ شنگھائی الیکٹرک ایک کھرب77 ارب میں کے الیکٹرک کے66 فیصد سے زائد شیئرز خرید رہی ہے۔ حصص کی خریداری کا معاہدہ حتمی شکل اختیار کر چکا ہے۔ جس کی تصدیق کے الیکٹرک ابراج گروپ اور شنگھائی الیکٹرک دونوں کی جانب سے باضابطہ طور پر ہو چکی ہے۔
سی پیک منصوبے کے بعد چینی سرمایہ کار پاکستان میں اپنے بزنس بڑھانے میں دلچسپی لے رہے ہیں۔ مختلف اقتصادی ماہرین اب پاکستان کو سرمایہ کاروں کے لیے جنت قرار دے رہے ہیں۔ کراچی سمیت ملک بھر میں قیام امن کے بعد دیگر ممالک کے لوگ یہاں سرمایہ کاری میں دلچسپی لینا شروع ہو گئے ہیں۔
k-electric
شنگھائی الیکٹرک کارپوریشن چین میں صنعتی برقی آلات بنانے والی سب سے بڑی کمپنیوں میں سے ایک ہے۔ ذرائع کے مطابق کے الیکٹرک کی ذمہ داری سنبھالنے کے بعد شنگھائی الیکٹرک کارپوریشن بطورِ خاص کراچی میں لوڈشیڈنگ کے خاتمے اور کم قیمت بجلی کی فراہمی پر کام کرے گی جب کہ بجلی کی چوری روکنے کے لیے ’’کارڈ سسٹم‘‘ بھی متعارف کروایا جائے گا۔
مختلف ذرائع سے یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ شنگھائی الیکٹرک کارپوریشن نے ’کے الیکٹرک‘ کی ذمہ داریاں سنبھالنے کے حوالے سے ایک طویل مدتی منصوبہ بھی بنایا ہوا ہے جس کے تحت ادارے کی کارکردگی بہتر بناتے ہوئے بجلی کی پیداوار اور تقسیم کی جدید ترین ٹیکنالوجی بھی استعمال میں لائ جائے گی اور اس ادارے کو دنیا میں ایک رول ماڈل بناتے ہوئے عالمی سرمایہ کاری کے حجم میں بھی اضافہ کیا جائے گا۔
پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں ’کے الیکٹرک‘ کے حصص کی مجموعی مالیت 2.3 ارب ڈالر (تقریباً 230 ارب روپے) ہے جن میں سے 72.58 فیصد حصص کی ملکیت ابراج گروپ کے پاس ہے۔ کے الیکٹرک کی سالانہ آمدنی اس وقت 200 ارب روپے سے زیادہ ہو چکی ہے جبکہ اس کے تمام اثاثوں کی مجموعی مالیت 368 ارب روپے بتائی جاتی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

سرجانی ٹائون سے لاپتہ 8 سالہ عروہ بازیاب

کراچی، پیر کے روز سرجانی ٹائون سیکٹر ڈی فور میں گھر کے باہر سے لاپتہ ہونےوالی 8 سالہ عروہ فہیم بازیاب، پولیس...

بدھ اور جمعہ کو سی این جی اسٹیشنز بند رہیں گے

کراچی، سندھ بھر کے سی این جی اسٹیشنز بدھ اور جمعہ کو بند رہیں گے، ذرائع کے مطابق بدھ اور جمعہ کو...

لیاقت آباد، سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی ٹیم پر حملہ

کراچی، سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی ٹیم پر لیاقت آباد میں حملہ، ذرائع ایس بی سی اے کے مطابق لیاقت آباد...

گزری، نجی بینک میں آتشزدگی،فائر بریگیڈ کی گاڑیاں روانہ

کراچی، گذری میں نجی بینک میں آتشزدگی، کنٹونمنٹ بورڈ کی گاڑیاں آگ پر قابو پانے کےلئے روانہ، ذرائع کے مطابق بینک میں...