Thursday, October 22, 2020
Home خاص خبریں مذہبی و سیاسی جماعتیں چیف جسٹس سانحہ قصور کا ازخود نوٹس لیں، مسیحی برادری

چیف جسٹس سانحہ قصور کا ازخود نوٹس لیں، مسیحی برادری

kasurمسیحی برادری نے سانحہ قصور پر چیف جسٹس سے از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کر دیا میاں بیوی کو لین دین کے تنازعے پر زندہ جلایا گیا، توہین رسالت کا الزام جھوٹا ہے اس کی تحقیقات ہونی چاہئے۔ نیشنل کرسچن پارٹی کے سربراہ شبیر شفقت اور مرکزی رہنما ڈاکٹر اظہر اختر، پیٹر برناڈ، ڈیوڈ جان اور جاوید اقبال نے سانحہ قصور پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے اسے انسانیت کی تذلیل قرار دیا ہے اور مسیحی عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے آپ کو مظاہروں اور احتجاجوں تک محدود نہ رکھیں بلکہ اب وقت ہے کہ مل کر اور متحد ہو کر مسلسل جدوجہد کی جائے، تا کہ آئندہ ایسے سانحہ سے محفوظ رہا جا سکے اور مسیحی عوام حکومت وقت سے یہ امید نہ رکھے کہ وہ] ان کے زخموں پر مرحم رکھے گی بلکہ حکومت نے80 افراد کو مقدمے میں ملوث کرکے اسے بلوے کا رنگ دینے کی کوشش کی ہے جس سے حکومت کی جانبداری اور واضH مجرموں سے ہمدردی ظاہر ہوتی ہے۔ ہم حکومت وقت پر واضح کر دینا چاہتے ہیں کہ مسیحی قوم کے غدار وفاقی وزیر کامران مائیکل کو قوم عبرت کا نشان بنا دے گی. پارٹی رہنمائوں نے چیف جسٹس سے اپیل کی ہے کہ اس سانحہ پر از خود نوٹس لیا جائے اور قانونی کارروائی کرتے ہوئے اصل مجرمان کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے تا کہ آئندہ اس طرح کے سانحہ سے بچا جا سکے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

کیپٹن صفدر کا معاملہ، وزیراعظم کو بریف کرنے گورنر سندھ اسلام آباد پہنچ گئے

گورنر سندھ عمران اسماعیل بڑے مشن پر اسلام آباد پہنچ گئے،گورنر سندھ وزیراعظم عمران خان سے اسلام آباد میں ون آن ون...

کیپٹن صفدرکی گرفتاری تحقیقات کیلئے کمیٹی قائم

سندھ حکومت نے کیپٹن صفدرکی گرفتاری اور پولیس افسران کی چھٹیوں کی درخواست پرتحقیقاتی کمیٹی قائم کردی ، کمیٹی تحقیقات مکمل کرکے...

مسکن چورنگی ھماکہ،مقدمہ گلشن اقبال تھانے میں درج

مسکن چورنگی کے قریب دھماکے سے عمارت کے تباہ ہونے کی ایف آئی آرگلشن اقبال تھانے میں درج کرلی گئی ہے، پولیس...

سندھ حکومت اور پولیس ڈرامہ کررہی ہے، شبلی فراز

کراچی، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات شبلی فراز نے ایک بار پھر سندھ پولیس کی چھٹیوں کی درخواست کو ڈارمہ قرار دے...