Thursday, October 29, 2020
Home Trending جرائم میں کمی کے دعوے حقائق کے برعکس ہیں، سراج قاسم تیلی

جرائم میں کمی کے دعوے حقائق کے برعکس ہیں، سراج قاسم تیلی

KCCI ijlasکراچی ،انسپکٹر جنرل آف پولیس سندھ غلام حیدر جمالی نے کراچی میں امن وامان کی صورتحال میں بہتری کا دعویٰ کیا ہے اور کہا ہے کہ گزشتہ 3 ماہ کے دوران قتل ، اغواءبرائے تاوان اور بینک ڈکیتیوں میں نمایاں کمی شہر قائد میں امن وامان کے قیام میں بہتری آنے کا واضح ثبوت ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کو کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری(کے سی سی آئی) کے دورے کے موقع پر اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پرایڈیشنل آئی جی سندھ غلام قادر تھیبو،چیئرمین بزنس مین گروپ اور سابق صدر کے سی سی آئی سراج قاسم تیلی،وائس چیئرمین بی ایم جی انجم نثار،کراچی چیمبر کے صدر عبداللہ ذکی،سینئر نائب صدر مفسر عطا ملک،نائب صدر محمد ادریس،سابق صدور کے سی سی آئی اے کیو خلیل، مجید عزیز،سی پی ایل سی کے چیف احمد چنائے،چیئرمین سائٹ ایسوسی ایشن آف انڈسٹری یونس ایم بشیر، کے سی سی آئی کی لا اینڈ آرڈر سب کمیٹی کے چیئرمین حاجی آصف چامڈیا،پی سی ایل سی چیف حفیظ عزیز اور کے سی سی آئی کی منیجنگ کمیٹی کے اراکین بھی موجود تھے۔
آئی جی پولیس سندھ نے کراچی میں اسٹریٹ کرائمز اور موبائل فونز چھیننے کی وارداتوں میں اضافے کا اعتراف کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ پولیس اِن جرائم کے خاتمے کے لیے بھرپور کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے۔انہوںنے پولیس کی کارکردگی مزید بہتر بنانے کے عزم کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ پولیس کی کارکردگی کا اندازہ اس امر سے لگایا جاسکتا ہے کہ 2014میں اب تک 145افراد کے قتل رپورٹ کیے گئے ہیں جبکہ 2013میں یہ تعداد260تھی اور پچھلے3ماہ میں ایک بھی بینک ڈکیتی کا واقعہ پیش نہیں آیا البتہ اغواء کے 3کیسز رپورٹ ہوئے ۔اس کے برعکس گزشتہ برس اسی عرصے میں اغواءسے متعلق25 کیسز رپورٹ ہوئے۔
غلام حیدر جمالی نے کہاکہ شہر بھر میں امن وامان کا قیام ہماری اولین ذمہ داری ہے تاہم کراچی کو مکمل طورپر جرائم سے پاک بنانا ممکن نہیں ۔محکمہ پولیس کراچی میں جرائم کی کمی اور روک تھام یقینی بنانے کے لیے تمام وسائل بروئے کار لاتے ہوئے ہر ممکن اقدامات عمل میں لارہی ہے۔انہوںنے امن وامان کے قیام کے حوالے سے کراچی چیمبرسے تعاون طلب کرتے ہوئے کہاکہ قیام امن کے لیے پولیس اہلکار ہر روز اپنی زندگیوں کو خطرے میں ڈالتے ہیں اور اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرتے ہیں وہ تعریف کے مستحق ہیں۔
ایڈیشنل آئی جی سندھ غلام قادر تھیبو نے اس موقع پر بتایاکہ محکمہ ٹریفک پولیس موبائل ڈرائیونگ لائسنس متعارف کرانے کا اردارہ رکھتی ہے اورجمعہ کو کراچی پریس کلب میں آئی جی سندھ اس کا افتتاح کریں گے۔ کراچی چیمبر سمیت دیگر ٹاو¿ن ایسوسی ایشنز میں موبائل ڈرائیونگ لائسنس کی سہولت کے ذریعے تاجربرادری کرپشن سے پاک ون ونڈو آپریشن کے ذریعے ڈرائیونگ لائسنس حاصل کر سکے گی۔
بزنس مین گروپ ( بی ایم جی) کے چیئرمین اور سابق صدر کے سی سی آئی سراج قاسم تیلی نے آئی جی سندھ کی جانب سے جرائم کی روک تھام سے متعلق اعداوشمار پرتبصرہ کرتے ہوئے کہاکہ یہ اعدادوشمار حکومت، عوام اور تاجربرادری کوگمراہ کرنے کا باعث ہیں۔انہوںنے کہاکہ گزشتہ چند ماہ کے دوران کچھ بہتری تو ضرور آئی ہے لیکن امن وامان کی مجموعی صورتحال خراب ہے جسے بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔پولیس افسران رپورٹ کیے گئے کیسزکی بنیاد پراعدادوشمار مرتب کرتے ہیں جبکہ زمینی حقائق اس کے برعکس ہیں۔ متاثرین کی اکثریت جرائم کی شکایات درج ہی نہیںکراتے۔انہوںنے درست اعدادوشمار حاصل کرنے کے لیے تجویز پیش کی کہ ایک خودمختار ایجنسی کو یہ ٹاسک دیاجائے کہ وہ شہر بھرمیں ہونے والے جرائم سے متعلق کیسز کا تفصیل سے سروے کریں جن میں وہ کیسز جورپورٹ کیے گئے ہیںاور جورپورٹ نہیں کیے جاتے وہ بھی اس سروے میں شامل کیے جائیں۔ اس اقدام کے ذریعے ایک خودمختار ایجنسی شہر میں ہونے والے جرائم کی اصل تعداد کاپتہ لگا سکے گی جس سے مستند اعدادوشمارسامنے لانے میں مدد مل سکے گی۔
سراج قاسم تیلی نے کہاکہ محکمہ پولیس کے موجودہ اعلیٰ سطحی افسران ایماندار اور قابل ہیں جنہوںنے تاجربرادری سے رابطے استوار کیے ہوئے ہیں جس سے امن وامان کی صورتحال میں کافی بہتری آئی ہے لیکن ابھی بہت کام کرنا باقی ہے۔پولیس و رینجرز کی جانب سے شہر کے ویسٹ زون میں امن وامان کی صورتحال کوبہتر بنانے کے اقدامات کو سراہتے ہوئے سراج قاسم تیلی نے اس بات پر زور دیا کہ اسی طرز کی حکمت عملی شہر کے باقی اضلاع باالخصوص اولڈ سٹی ایریا میںبھی متعار ف کرائی جائے۔امن وامان کے حوالے سے پولیس اکیلے مثبت تبدیلیاں نہیںلاسکتی جبکہ مشترکہ اقدامات کے ذریعے ہی کراچی شہرکو محفوظ اور کاروبار دوست بنایا جاسکتا ہے۔
کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری(کے سی سی آئی) کے صدر عبداللہ ذکی نے کہاکہ ٹارگٹ کلنگ ، ہنگامہ آرائی،اغوائے برائے تاوان، بھتہ خوری سمیت جرائم کی دیگر وارداتوں میں مسلسل اضافہ ہو رہاہے خاص طور پرتجارتی مال سے لدی گاڑیوں کے چھیننے کی بڑھتی وارداتوں کے نتیجے میں کاروبار بند ہو رہے ہیں ۔قومی خزانے میں سب سے زیادہ ریونیو دینے کے باوجود یہاں سے سرمائے کی منتقلی اور بے روزگاری میں اضافے کے باعث شہر قائد کی ترقی کی راہ میں رکاوٹیں بڑھ رہی ہیں۔جرائم کے خاتمے کے لیے کراچی کی تاجربرادری قانون نافذ کرنے والے اداروں اور حکومت کے ساتھ ہرممکن تعاون جاری رکھے گی۔انہوں نے کہاکہ محفوظ ماحول ہی پاکستان کے معاشی حب کراچی کو ترقی کی راہ پر گامزن کرسکتا ہے اور قومی استحکام کا باعث بن سکتا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

نیو کراچی, مبینہ پولیس مقابلہ ایک ڈاکو زخمی، دوسرا فرار

کراچی: نیو کراچی سیکٹر5 ڈی میں مبینہ پولیس مقابلہ،پولیس کے مطابق ملزمان اسلحے کے زور پر شہری سے لوٹ ما رکررہے تھے...

امتیاز سپر اسٹور نے فرانسیسی مصنوعات کا بائیکاٹ کر دیا

کراچی:فرانس میں نبی ﷺ کے گستاخانہ خاکے شائع ہونے پر کراچی کے سب سے بڑے سپر مارٹ امتیاز سپر اسٹور نے تمام...

کرونا وائرس کی وجہ سے 30 نئے اسکولوں کا افتتاح نہ ہوسکا, سعید غنی

کراچی: صوبہ سندھ کے وزیر تعلیم سعید غنی کا کہنا ہے کہ کوویڈ 19 کی وجہ سے 30 نئے اسکولوں کا افتتاح...

بچوں تیار ہوجاو، خوشیاں پھر سے آنے والی ہیں، سعید غنی

کراچی: وزیر تعلیم سعید غنی کا کہنا ہے کہ بچوں تیارہو جاو خوشیاں پھر سے آنے والی ہیں، ان کا کہنا تھا...