Tuesday, October 20, 2020
Home Trending کراچی کے 70 فیصد علاقے سیوریج مسائل سے دوچار ہیں، رپورٹ

کراچی کے 70 فیصد علاقے سیوریج مسائل سے دوچار ہیں، رپورٹ

market-sewerage-water_400کراچی ۔ واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کی گورننگ باڈی میں کوئی منتخب بلدیاتی نمائندہ شامل نہیں۔ تفصیلات کے مطابق شہر کا سب سے اہم ادارہ منتخب بلدیاتی نمائندگان کی نمائندگی سے محروم ہے۔ کراچی کے 70 فیصد علاقے سیوریج مسائل سے دوچار ہیں۔بلدیاتی نمائندے اختیارات نہ ہونے کے سبب مسائل حل کروانے میں نا کام نظر آ رہے ہیں۔ واٹر اینڈ سیوریج بورڈ، صوبائی وزیر بلدیات سندھ جام خان شورو کی سر براہی میں کام کر رہا ہے۔ ایم ڈی واٹر بورڈ بھی ان کو جوابدہ ہیں۔ 1979 اور 2000 کے بلدیاتی قوانین میں مئیر یا ناظم کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کا اہم رکن تھا۔ لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013میں بلدیاتی نمائندگان محدود دائرے میں فرائض سر انجام دینے میں مصروف ہیں۔ بلدیاتی نمائندگان اپنی حدود سے تجاوز کرنے کی صورت میں بلدیاتی ایکٹ کی خلاف ورزی کے مرتکب ہو سکتے ہیں۔ ایسی صورت میں انہیں معطلی سمیت اپنی سیٹ سے بھی ہاتھ دھونا پڑ سکتا ہے۔ 2013کے بلدیاتی ایکٹ میں ضروری بلدیاتی مسائل کے حل میں معاونت فراہم کرنے کے سلسلے میں ترمیمات کی ضرورت اہمیت اختیار کر گئے ہیں۔ کے ڈی اے کی گورننگ باڈی میں بھی کوئی بلدیاتی نمائندہ شامل نہیں ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

سندھ کی مختف مارکیٹوں سے 955 کورونا کیسز رپورٹ

محکمہ صحت سندھ کے مطابق گزشتہ ایک ماہ کے دوران مارکیٹوں، دفاتر، ہوٹلوں اور ڈینگی و پولیو کے رضاکاروں سمیت 2087 افراد...

سندھ حکومت کا کیپٹن صفدر کے واقعے پر وزارتی کمیٹی بنانے کا اعلان،

سندھ حکومت کا کیپٹن صفدر کے واقعے پر وزارتی کمیٹی بنانے کا اعلان،مراد علی شاہ نے پریس کانفرنس کرتےہوئے کہا کہ 3...

یہ کراچی کی تاریخ کاسب سےبڑاجلسہ تھا،مرادعلی شاہ

وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہ کہ یہ کراچی کی تاریخ کاسب سےبڑاجلسہ تھا،جلسے کے بارے...

غصے میں عقل جاتی رہتی ہے

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ جنگل کا حکمران چیتا، غصے میں آگیا، اُس نے تہیہ کر لیا کہ وہ اپنے مخالفوں...