Tuesday, October 27, 2020
Home Trending ایم کیو ایم کے دفتر سے گرفتار افراد میں 3 ٹارگٹ کلر...

ایم کیو ایم کے دفتر سے گرفتار افراد میں 3 ٹارگٹ کلر اور 8 اشتہاری تھے، سندھ رینجرز

Sindh Rangersسندھ رینجرز نے سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کو بتایا ہے کہ گزشتہ دنوں ایم کیو ایم کے دفتر میں کارروائی کے دوران حراست میں لئے گئے 23 افراد میں سے 3 ٹارگٹ کلر اور 8 اشتہاری تھے جبکہ 12 کو چھوڑ دیا گیا ہے۔

سینیٹر طلحہ محمود کی زیر صدارت سینیٹ کی قائمہ کمیٹی داخلہ کا اجلاس ہوا جس میں سندھ رینجرز کے کرنل طاہر محمود نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ کراچی میں آپریشن کے دوران جرائم پیشہ افراد کے خلاف 3 ہزار 696 آپریشنز کئے جن میں 5 ہزار 500 افراد کو گرفتار کیا گیا۔ گرفتار کئے گئے ملزمان میں 2 ہزار 391 افراد کو پولیس کے حوالے کیا گیا۔ ایم کیو ایم کے خلاف 373 چھاپوں کے دوران 241 ہتھیار برآمد جبکہ 560 افراد گرفتار کئے گئے۔ اے این پی کے خلاف 18 چھاپوں میں 40 افراد کو حراست میں لیا گیا جبکہ ان کے قبضے سے 21 ہتھیار برآمد کئے گئے۔ کراچی میں تحریک طالبان کا نیٹ ورک توڑ دیاگیا ہے، شہرمیں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے خلاف 84 آپریشن کئے گئے، جن کے دوران 13 افراد مارے گئے اور 33 کو گرفتار کیا، اس کے علاوہ 16 دیگر کالعدم تنظیموں کے خلاف بھی 159 چھاپے مارے گئے جس میں 352 افراد گرفتار ہوئے۔
بریفنگ کے دوران سینیٹر شاہی سید نے کہا کہ کراچی میں ایک سال سے آپریشن جاری ہے لیکن کوئی نتیجہ نہیں نکل رہا،سب سے زیادہ ظلم لیاری والوں کے ساتھ ہوا ہے، ان کے ساتھ وہی ہوا جو فاٹا کے لوگوں کے ساتھ ہوا، جس پر سندھ رینجرز کی جانب سے بتایا گیا کہ رینجرز کی جانب سے کئے گئے آپریشنز کے دوران پیپلزامن کمیٹی کے 593 افراد کو گرفتار کیا گیا۔ کراچی میں بھتہ خوری میں 55 فیصد کمی آئی ہے اور لیاری اب اغوا کاروں کے لئے محفوظ نہیں رہا، امن و امان کی صورتحال میں بہتری کے لئے لیاری میں دبئی چوک اور گل محمد لین میں دو نئے پولیس اسٹیشن قائم کئے جارہے ہیں۔
کراچی میں گزشتہ دنوں ایم کیو ایم کے دفتر پر چھاپے کے بارے میں رینجرز سندھ حکام نے بتایا کہ گلشن معمار میں رینجرز کے اہلکار معمول کے گشت پر تھے کہ قریبی عمارت سے فائرنگ ہوئی، فائرنگ کے بعد علاقے کا سرچ آپریشن کیا گیا،سرچ آپریشن کے دوران 23 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا، گرفتار ہونے والوں میں 3 افراد ٹارگٹ کلرز اور منشیات فروش تھے، 8 ملزمان اشتہاری تھے جنہیں پولیس کے حوالے کردیا جبکہ 3ملزمان کو جیل بھجوا دیا گیا ہے جن سے مشترکہ تفتیش کی جارہی ہے۔ گرفتار ہونے والوں میں سے 12 افراد ڈاکٹر صغیر احمد اور فیصل سبزواری کے حوالے کیا گیا، رینجرز کی تفصیلات پر سینیٹر طاہر مشہدی نے استفسار کیا کہ رینجرز نے چھاپا مارا، کیا جن لوگوں نے فائرنگ کی وہی بعد میں عمارت میں بیٹھ کر میٹنگ کرتے رہے، ایم کیو ایم کے دفتر سے گولی چلی تھی تو وہ کسے لگی؟۔ طاہر مشہدی نے کہا کہ کراچی میں رینجرز پانی اور لینڈ مافیا میں ملوث ہے جس پر کرنل طاہر محمود نے کہا کہ کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ نے رینجرز کو پانی کی ترسیل کی ذمی داری سونپی تھی، پانی چوری کا ثبوت دیں تو ان لوگوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ قائمہ کمیٹی داخلہ نے ہدایت کی کہ کراچی میں جرائم کے مکمل خاتمے تک آپریشن بلا تفریق رنگ و نسل اور صوبہ جاری رکھا جائے اور اگر کسی سیاسی جماعت کا کارکن گرفتار ہو تومتعلقہ جماعت کو نام فراہم کیا جائے۔

2 COMMENTS

  1. rangers walon indian film kam dekha karo ye kaisy ho sakta hai keh koe tum par firing kary aur wahen chup kar beth jaye keh ab ye ham ko pakarne ayen gy, aur ap ja kar 3 target killer aur 8 ishtihar manshiyat faroshon ko giriftar bhe kar lete ho. kiya koe mujrim itna bewaquf ho ga ke aa bail mujhy maar ki mutradaf is qisam ki karwae kary. had hoti hai kam aqli ki bhe. aur tanker supply par ap kehte hain keh sabut faraham kiya jaye, loo bhae khud to operation baghair kisi sabooton ky karen aur logon se kahen ke hamaray logon ky khilaf sabooot den,

  2. whole Karachi operation is not going in a proper direction, there is no raid against PPP including bilawal house, jamat e islami, SSP, sunni threek, PTI and etc etc, however karachites is still facing worst law and order situation, mobile snatching, tanker mafia, dart, kidnapping ransom, common man still in the problem despite paying heavy taxes to KMC/Water Board, significant result should be visible. poor and helpless city.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

کراچی ترقیاتی کمیٹی کا نالوں پر قائم آبادیوں کو منتقل کرنے کا فیصلہ

کراچی: وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ کی سربراہی میں کمیٹی کا اجلاس ہوا، جس میں صوبائی وزیر سعید غنی، کور کمانڈر...

سرجانی ٹاؤن, 5سالہ بچی عروہ فہیم گھر کے قریب سے اغواء

کراچی:سرجانی ٹاؤن سیکٹر4 ڈی سے 5 سالہ بچی عروہ فہیم گھر کے قریب سےاغواء ,پولیس کے مطابق گزشتہ روز پیر تقریبا رات...

داود یونیورسٹی کے طلبا یونیورسٹی انتظامیہ سے سخت ناراض

کراچی؛ ایم اے جناح روڈ پر واقع داود یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنولوجی کے طلبا انتظامیہ پر برس پڑھے ، انٹرنیٹ کی...