Saturday, October 24, 2020
Home Trending نیگلیریا وائرس کے خاتمے کے لیے سندھ اور شہری حکومت نےٹیمیں بنادی...

نیگلیریا وائرس کے خاتمے کے لیے سندھ اور شہری حکومت نےٹیمیں بنادی

nagleriaکراچی ،        شہرمیں نگلیریا سے بچاﺅ اور عوام کو اس مرض سے آگاہی سمیت شہر بھر میں واٹر بورڈ کی جانب سے فراہم کئے جانے والے پینے کے پانی میں کلورین کی مقررہ مقدار کو یقینی بنانے کے لئے کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ (کے ڈبلیو ایس بی) ، محکمہ صحت اور محکمہ بلدیات کی قائم کردہ مشترکہ ٹیمیں کوشاں ہیں۔ صوبائی وزیر بلدیات شرجیل انعام میمن کی خصوصی ہدایات پرواٹر بورڈ متحرک وفعال ہے ۔
یہ بات ایم ڈی واٹر بورڈ قطب الدین شیخ نے منگل کو اپنے دفتر میں منعقدہ اجلاس کے دوران کہی۔ انہوں نے کہا کہ واٹر بورڈ کے سی او ڈی فلٹر پلانٹ پر نیگلیریا سے تحفظ واحتیاطی تدابیر اختیار کرنے سے متعلق محکمہ صحت اور محکمہ بلدیات کی قائم کردہ کمیٹی شہر اور واٹر بورڈ کے پمپنگ اسٹیشنز سے پانی میں کلورین کی مقررہ مقدار کو یقیینی بنانے کےلئے نمونے لے کر ان کا تجزیہ کرکے پانی میں کلورین کی کمی والے علاقوں کی نشاندہی کررہی ہے۔ ایم ڈی واٹر بورڈ نے کہا ہے کہ واٹر بورڈ ایسے علاقوں میں کلورین شامل کرنے کے فوری عملی اقدامات کررہا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ کمیٹی گروپس کی شکل میں ٹاو¿ن کی سطح پر گھروں، ِفلیٹس ،سوئمنگ پولز ، واٹر پارک ، فارم ہوسز سے پانی کے نمونے روزانہ کی بنیا د پر لے کر ان کی تجزیاتی رپورٹ اور اقدامات تحریری طور پر صوبائی وزیر بلدیات، صوبائی وزیر صحت اورخود انہیں فراہم کررہی ہے، تاکہ فوری طور پر عملی اقدامات ممکن ہوں۔
nagleria virusانہوں نے کہا ہے کہ صوبائی وزیربلدیات و چیئرمین واٹربورڈ شرجیل انعام میمن نے موثر حکمت عملی وضع کرنے بالخصوص واٹر بورڈ کواس سلسلے میں خصوصی ہدایات دی ہیں اور وہ اس سلسلے میں متحرک ہیں ۔ ایم ڈی واٹر بورڈ نے کہا ہے کہ صوبائی وزیر کی ہدایات کی روشنی میں گذشتہ سال کی طرح اس سال بھی واٹر بورڈ شہر کے اہم پمپنگ اسٹیشنز پر حسب ضرورت سوڈیم ہائپو کلورائٹ کے عارضی پلانٹس لگے ہوئے ہیں تاکہ کمیٹی کی نشاندہی پراوپری اور آخری سرے کے علاقوں میں کلورین کی کمی دور کی جاسکے جو امیبیا کا خاتمہ کرتی ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ ان تمام اقدامات کے باجود نیگلیریا سے بچاو¿ حفاظتی تدابیر سے ہی ممکن ہے خصوصاً وضو کےلئے پانی ابال کر یا کلورین ملا پانی استعمال کیا جائے۔گھروں میں پانی کے ٹینکوں میں مقررہ مناسبت سے کلورین کی ٹکیاں ماہرین کی مشاورت سے ڈالی جاسکتی ہیں اور وہ پانی دس روز سے زائد (پرانا) استعمال نہ کیا جائے۔ انہوںنے کہا کہ جرثومہ ناک کے ذریعے دماغ میں داخل ہوتا ہے اور لا علاج ہے اس کی نشوونما گرم اور صاف پانی میں ہوتی ہے تاہم موسم میں حدت کی کمی سے یہ غیر موثر ہوتا ہے ، شہری اس سلسلے میں آگہی حاصل کریں ۔
انہوں نے کہا کہ سوئمنگ پولز ، فارم ہاو¿سز، واٹر پارک، جوہڑوں ،تالابوں میں نہانے سے قطعی گریز کیا جائے۔ شہری بورنگ کے پانی کا بھی تجزیہ کرائیں۔قطب الدین شیخ نے کہا کہ محکمہ بلدیات ،محکمہ صحت واٹر بورڈ اور بلدیہ عظمیٰ کی کاوشیں قابل قدر ہیں ، تاہم متعلقہ محکموں کو فعال کردارادا کرنا ہے ۔ ایم ڈی واٹربورڈ قطب الدین شیخ نے مزید کہ واٹر بورڈ عوام میں امیبیا سے متعلق شعور وآگہی کے لئے کوشاں ہے جبکہ پانی میں ہر سطح ہر علاقہ میں مقررہ تناسب سے کلورنیشن کو یقینی بنا رہا ہے تاہم شہری کمیٹی سے تعاون کریں ، نمونہ کےلئے نلکوں کا تازہ پانی فراہم کریں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

نقلی وزیراعظم نے اپنی ناکامی کا اعتراف کرلیا، مراد علی شاہ

کراچی، وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ نااہل وزیراعظم نے اپنی ڈھائی سالہ ناکامی کا اعتراف کرلیا، مراد علی شاہ کا صحافیوں سے گفتگو...

رینجرز کی کارروائی،2 اسٹریٹ کرمنلز گرفتار

کراچی، سندھ رینجرز کی کارروائی 2 اسٹریٹ کرائم میں ملوث ملزمان گرفتار، ترجمان رینجرز کے مطابق گرفتار ملزمان کی شناخت عبدالمجید اور...

ملازمت کی مستقلی، نرسوں کا دوسرے روز بھی مظاہرہ

کراچی، ملازمت کی مستقلی اور دیگر مطالبات کی منظوری کےلئے نرسوں کا پریس کے کلب کے باہر احتجاج کا دوسرا روز،...

پی ایس ایل کے بقیہ میچز کی میزبانی کراچی کو مل گئی

،کراچی، کرکٹ کے دیوانوں کے لئے خوشخبری، پاکستان سپر لیگ کے بقیہ میچز کی میزبانی کراچی کے حوالے، لاہور میں اسموگ...