Thursday, October 22, 2020
Home کالم /فیچر شناختی کارڈ ضروری ہے (نعمان یونس)

شناختی کارڈ ضروری ہے (نعمان یونس)

nicگزشتہ روز ترجمان رینجرز کا بیان کیا آیا، کراچی میں رہنے والے تو پریشان ہی ہوگئے ہیں۔ اگر اب بھی رینجرز کے بیان سے لاعلم ہیں تو پریشان نہ ہوں کہ ہم ابھی آپ کو آگاہ کردیتے ہیں۔

رینجرز نے اپنے حالیہ بیان میں کراچی کے لوگوں کو حکم جاری کیا ہے کہ شہری اپنا اصل شناختی کارڈ اپنے ہمراہ رکھیں۔ رینجرز کا یہ بھی کہنا ہے کہ شناختی کارڈ کی کاپی قابل قبول نہیں ہوگی اور اگر کسی کے پاس اصل شناختی کارڈ نہیں ہوگا تو اسے حراست میں لے لیا جائے گا اور جب تک شناخت ثابت نہ ہوجائے اسے حراست میں ہی رکھا جائے گا۔
اس خبر کے آتے ہی شہریوں نے اس حوالے سے ملے جھلے تاثرات کا اظہار کیا ہے۔ ایک جانب تو اس حکم نامے کو کراچی شہر میں امن وامان کے قیام کے حوالے سے قدر کی نگاہ سے دیکھا جارہا ہے کہ اِس شہر میں لوگوں کی بڑی تعداد ہے جن کے پاس اب تک شناختی کارڈ ہی نہیں ہے اور اِس طرح کم از کم یہ معلوم ہوسکے گا کہ یہاں کون قانونی طریقے سے رہ رہا ہے اور کون غیر قانونی طریقے سے۔
لیکن دوسری جانب اس پر سخت تنقیدی ردِعمل بھی سامنے آیا ہے۔ سوشل میڈیا پر اس فیصلے کو آڑے ہاتھوں لیا گیا اور اس اچانک فیصلے پر کئی سوالات بھی اٹھائے جارہے ہیں۔

اگرچہ اس میں کوئی دو رائے نہیں کہ اس طرح کے اقدامات سے کراچی میں جرائم کے روک تھام میں اہم مدد ملنے کی امید ہے۔ لیکن اس حوالے سے چند خدشات ہیں وہ بھی زیرِ غور لانا ضروری ہے تاکہ اس فیصلے سے زیادہ سے زیادہ مستفید ہوا جاسکے اور ساتھ ساتھ شہریوں کو بھی آسانی فراہم کی جاسکے۔

سب سے پہلا سوال تو یہ ہے کہ سڑک پر کھڑے رینجرز جوان جو شہریوں کے شناختی کارڈ دیکھ رہے ہوں گے کیا انکے پاس ایسی ٹیکنالوجی بھی میسر ہوگی جس سے وہ کسی بھی شخص کا شناختی کارڈ ڈال کر اس کے جرائم کا ریکارڈ دیکھ سکتے ہوں؟ اگر نہیں تو پھر کس بنیاد پر وہ صرف شناختی کارڈ دیکھ کر کسی کے مجرم ہونے کا اندازہ لگائیں گے؟

اس کے بعد شہریوں نے جن چیزوں پر تحفظات کا اظہار کیا ہے وہ کراچی پولیس کا رویہ ہے۔ اس نئے حکم سے پریشان ہونے والے افراد کراچی پولیس سے بھی نالاں نظر آتے ہیں۔ کئی افراد کا کہنا ہے کہ وہ اصل شناختی کارڈ صرف اور صرف کراچی میں بڑھتی ہوئی اسٹریٹ کرائمز کی وارداتوں کی وجہ سے ساتھ نہیں رکھتے۔ کیونکہ اگر خدانخواستہ شناختی کارڈ کسی واردات میں چھن جائے تو اس شخص کے لئے دوسرے شناختی کا حصول کسی ڈراو¿نے خواب سے کم نہیں۔ پہلے تو پولیس سے ایف آئی آر لینے کے لئے تھانے کے روز چکر لگانے پڑتے ہٰں اور کچھ دن بعد پتہ چلتا ہے کہ یہ کام پہلے دن ہی ہوسکتا تھا بس ا±س کے لیے ”چائے پانی“ کا بندوبست کردیتے۔
چلیں اپنی محنت کی کمائی میں سے کچھ پیسے دے کر ایف آئی آر کٹوا بھی لی تو معاملہ حل نہیں ہوتا کہ اب باری ہے نادرا کے چکر لگانے کی۔ جہاں نادرا آفس کے باہر آپ کا انتظار بروکرز حضرات خوش دلی کے ساتھ کررہے ہوتے ہیں۔ تو اگر پورے معاملے کو دیکھا جائے تو نقصان ہی نقصان ہے۔

پہلے چور بھائی آپ کا سب کچھ لے جاتے ہیں، پھر آپ کو اپنے ہی شناختی کارڈ کی چوری کی ایف آئی آر کٹوانے کے لیے چائے پانی کا بندوبست کرنا پڑتا ہے پھر نئے شناختی کارڈ کو بنوانے کے لئے بھی ٹھیک ٹھاک رقم خرچ کرنی پڑتی ہے۔ اب بھلا ان سب جھمیلوں اور نقصان کے بعد کون شہری ہوگا جو اپنا اصل شناختی کارڈ سڑک پر لانے کی جسارت کرے گا۔
لہذا حکومت سے درخواست ہے کہ جہاں وہ کراچی کے شہریوں سے اصلی شناختی کارڈ گھروں سے نکالنے کا حکم دے رہی ہے وہی شناختی کارڈ کی گمشدگی کی صورت میں نئے کارڈ کے مرحلے کو بھی شفاف بنانا ہوگا۔ ساتھ ساتھ حکومت عوام کے خدشات کو دور کرے اور سرکاری اور نیم سرکاری اداروں میں جاری کرپشن کی روک تھام کی کوشش بھی کرے۔ تاکہ شہری بغیر کسی خوف و خطر کے ساتھ شناختی کارڈ باہر لے کر نکلیں۔

کیا آپ رینجرز کی جانب سے اصل شناختی کارڈ رکھنے کے فیصلے کی حمایت کرتے ہیں؟ mindhacker2@gmail.com

1 COMMENT

  1. nahe bhae ham bilkul is faisaly ki himayat nahe karte, ajeeb betuki mantaq hai, ye to sara sar cnic chenwane ki policy lgti hai

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

جناح اسپتال کے سابق پروفیسر کورونا وائرس کا شکار ہو کر انتقال کر گئے

جناح اسپتال کراچی کے سابق پروفیسر آف سرجری ڈاکٹر سید وقار احمد کورونا وائرس سے انتقال کر گئے۔جناح اسپتال کی سربراہ ڈاکٹر...

شاہ فیصل میں6سالہ بچی کیساتھ مبینہ زیادتی

کراچی:شاہ فیصل میں6 سالہ بچی کیساتھ مبینہ زیادتی، پولیس کے مطابق زیادتی میں ملوث13سالہ لڑکےکوحراست میں لیا گیا ہے،بچی کا میڈیکل کروایا...

کراچی دھماکا، سندھ حکومت کا زخمیوں کے مفت علاج کا اعلان

کراچی: سندھ حکومت نے گلشن اقبال میں واقع مسکن چورنگی کے قریب دھماکے کے نتیجے میں زخمی ہونے والے افراد کے مفت...

غیر قانونی بھرتیاں, سندھ کے کئی افسران نیب کے شکنجے میں

کراچی: قومی احتساب بیورو نے سندھ کے اداروں میں غیر قانونی طور پر بھرتی کیے گئے17 گریڈ کے درجنوں افسران کے گرد...