Sunday, January 24, 2021
"]
- Advertisment -

مقبول ترین

ادارہ نورحق، سعید غنی کی سراج الحق سے ملاقات

وزیرتعلیم سندھ سعید غنی کی ادارہ نور حق آمد، امیر جماعت اسلامی سراج الحق سے ملاقات، ذرائع کے مطابق سعید غنی نے ملاقات میں...

سندھ حکومت کا شاپنگ مالز مالکان کےلئے بڑا فیصلہ

 سندھ حکومت کا بڑا فیصلہ، ہفتے بھر رات گئے تک تمام شاپنگ مالز کو کھلے رہنے کی اجازت، ذرائع کے مطابق سندھ حکومت نے...

مراد علی شاہ اور علی زیدی کے وزیراعظم کو خطوط

جمعہ کے روز کراچی انسفارمیشن پلان کے اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور وفاقی وزیر علی زیدی کے مابین ہونےوالی تلخ کلامی...

شہر بھر میں 24 گھنٹے کےلئے سی این جی اسٹیشن کھل گئے

آٹھ دن کی بندش کے بعد سی این جی اسٹیشن اتوار کی صبح 8 بجے سے پیر کی صبح 8 بجے تک کھلے رہیں...

بجلی صارفین,نیپرا کراچی میں کھلی کچہری لگائے،رابطہ کمیٹی

mqm333کراچی متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی رابطہ کمیٹی نے نیپرا کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ نیپرا کراچی کے بجلی کے صارفین کے حقوق کے تحفظ میں بری طرح سے ناکام رہا ہے ، نیپرا کا کردار صرف بجلی کے نرخوں میں اضافہ کرنا نہیں بلکہ یہ بھی دیکھنا ہے کہ ملک بھر میں بجلی کی کمپنیاں صارفین کے ساتھ زیادتی نہ کریں ۔ ایک بیان میں رابطہ کمیٹی پاکستان نے کہا کہ نیپرا کی قانونی ذمہ داری تھی کہ وہ یہ دیکھتی کہ کے الیکٹرک صارفین کیلئے وضع کردہ نیپرا کنزیومیر سروس مینویل پر عمل کررہی ہے یا نہیں ، نیپرا کی غفلت کی وجہ سے کراچی کے بجلی کے صارفین جعلی بلوں کی شکل میں کے الیکٹرک کو تاوان ادا کرنے پر مجبور ہیں ۔ رابطہ کمیٹی نے مطالبہ کیا کہ نیپرا وضاحت کرے کہ کنزیومر سروس مینویل کا اطلاق کے الیکٹرک پر بھی ہوتا ہے یا نہیں یا کے الیکٹرک کو اس ضمن میں کوئی خصوصی استثنیٰ حاصل ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ مختلف حیلے بہانوں سے کراچی کے صارفین کو اضافی بل بھیجے جارہے ہیں جس کا فوری نوٹس لئے جانے کی ضرورت ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے کہا کہ بجلی چوروں کے خلاف کارروائی ہونی چاہئے مگر اس کی آڑ میں ایماندار صارفین سے اضافی بل وصول نہیں کیے جانے چاہئیں اور اضافی بل قانون کے مطابق تیار کیے جانے چاہئیں ۔ رابطہ کمیٹی نے نیپرا سے مطالبہ کیا کہ جعلی اضافی بلوں کی شکایات کے تدارک کیلئے کراچی میں کھلی کچہری لگائے تاکہ عوام کو اس ضمن میں ریلیف مل سکے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Open chat