Monday, October 26, 2020
Home خصوصی رپورٹس طوفان اور حکومت کے ادھورے انتظامات ( محمد آصف )

طوفان اور حکومت کے ادھورے انتظامات ( محمد آصف )

بحیرہ عرب میں ہوا کے کم دباﺅں سے بنے والا طوفان شدت اختیار کر گیا ہے تاہم تادم تحریر یہ کراچی کے ساحلوں سے ٹکرانے کے بجائے 250کلو میٹر فاصلے سے گزرے گا۔ اس طوفان کی شدت میں اور رفتار میں مزید اضافہ ہو رہا ہے اور محکمہ موسمیات کے مطابق اس سے شہر کراچی اور emergency-declared-as-karachi-readies-to-face-cyclone-nilofar-1414538713-5816اندرون سندھ میں تیز ہواﺅں کے بارش ہو گی۔ محکمہ داخلہ سندھ نے دفعہ 144 نافذ کردی ہے اور ہسپتالوں میں ایمرجنسی لگاکر تمام ڈاکٹرز کی چھٹیوں کو منسوخ کردیا گیا ہے اس کے علاوہ سمندر میں شکار اور نہانے پر بھی پابندی لگادی گئی ہے۔ جبکہ محکمہ موسمیات نے سندھ اور بلوچستان کے ماہی گیروں کو بھی کھلے سمندرمیں مچھلی کے شکار کے لیے منگل سے جمعہ تک کے لیے منع کیا ہے۔
کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے انتظامیہ اور دیگر متعلقہ اداروں کو الرٹ کردیا گیا ہے۔ سندھ حکومت نے بھی تمام متعلقہ اداروں کو ہنگامی صورت حال سے نمٹنے کے لیے تمام اقدامات کرنے کی اہدایات کی ہے۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کمشنر،ڈپٹی کمشنر اور محکمہ بلدیات کو بھی اپنے اپنے پلان مکمل کر کے فور طور پر عمل درآمد کا حکم دیا ہے تاکہ عوام کو پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے اورنقصان کم سے کم ہو سکے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق طوفان بھارتی صوبہ گجرات اور پاکستان کے صوبہ سندھ کے زیریں علاقوں سے ٹکرائے گا جس کے وجہ سے کراچی سمیت سندھ کے ساحلی علاقوں ٹھٹہ اور بدین میں تیز ہواوئں کے ساتھ شدید بارشوں کا امکان ہے ۔ کسی بھی ناخوش گوار اور ہنگامی صورتحال میں فوری امداد کے لیے افواج پاکستان کے دستے بھی سندھ کے ساحلی علاقوں میں تعینات کر دیئے گئے ہیں۔ جبکہ کراچی، ٹھٹھہ، سجاول، بدین اور تھرپارکر میں ہنگامی حالت کے نفاذ کے بعد جمعے کو تمام تعلیمی ادارے بندرہنے کا بھی اعلان کیا گیا ہے۔ جبکہ کے الیکٹرک نے اپنے اعلامیے میں عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ بارش کی صورت میں بجلی کے کھمبوں اور تاروں سے دو رہیں اور گھروں میں پانی داخل ہونے کی صورت میں خشک ہونے تک بجلی بند رکھیں۔
طوفان کے حوالے سے میڈیا شہری و صوبائی انتظامیہ کے جانب سے اقدامات کیے جانے والے دعووں کے برعکس رپورٹ پیش کر ہا ہے۔ اب تک پیش کی جانے والی رپورٹس میں میڈیا نے ان انتظامات کو ناکافی قرار دیا ہے۔ رپورٹس میں شہر میں جگہ جگہ لگے ہوئے سائن بورڈزکو ایک بڑا خطرہ قرار دیا گیا ہے۔ جبکہ برساتی نالوں کی صفائی نہ ہونے کے باعث گزشتہ برسوں کی طرح برساتی پانی زیادہ تباہی پھیلا سکتا ہے۔ ساحلی علاقوں سے عوام کا مکمل انخلاءنہ ہونا بھی ایک تشویش ناک امر ہے۔
asefjarrar@gmail.com

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی نیول چیف سے ملاقات

کراچی: وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی نیول چیف ایڈمرل امجد شاہ سے ملاقات، ملاقات میں ملک کی ترقی اور امن...

کراچی میں آج چپ تعزیے کے 2 جلوس،ٹریفک پلان جاری

کراچی میں آج 26 اکتوبر بروز پیر چپ تعزیے کے 2 جلوس برآمد ہو رہے ہیں, ٹریفک پولیس کی جانب سے متبادل...

علی عمران کی گمشدگی، وزیراعظم کی ہدایت پر کمیٹی قائم

کراچی، وزیراعظم عمران خان نے جیو نیوز کے رپورٹر علی عمران سید کے لاپتہ ہونے کا نوٹس لیتے ہوئے جوائنٹ فیکٹ...

قائد اعظم ٹرافی ، 24 اکتوبر سے شروع ہوگی

کراچی، 24 اکتوبر سے قائد اعظم ٹرافی کا میلہ سجے گا۔ پی سی بی ذرائع کے مطابق قائد اعظم ٹرافی کی...