Wednesday, October 28, 2020
Home خاص خبریں مذہبی و سیاسی جماعتیں جے آئی ٹی قاتلوں کو بچانے کی کمیٹی ہے ، پاکستان...

جے آئی ٹی قاتلوں کو بچانے کی کمیٹی ہے ، پاکستان عوامی تحریک

MQM-PTI پاکستان عوامی تحریک کراچی کے صدر لیاقت کاظمی نے کہا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاﺅن کیلئے بنائی گئی قاتلوں پر مشتمل جے آئی ٹی کو ہم نہیں مانتے موجودہ جے آئی ٹی سانحہ کے اصل مجرموں کو پھانسی سے بچانے کیلئے قائم کی گئی ہے ہم شہداءکا خون رائیگاں نہیں جانے دیں گے ایک ایک شہادت کا قصاص لیا جائے گا۔وہ PATملیر سعود آباد میں ورکرز کنونشن سے خطاب کر رہے تھے۔
پاکستان عوامی تحریک کراچی کے نائب صدر خان محمد بلوچ نے کہا چند لفافہ مافیا لوگ میدیا پر جھوٹی خبریں پھیلاتے ہیں قائد انقلاب کی واپسی ڈیل کی رٹ لگانے والوں کے منہ پر طمانچہ ہے ہم بکنے والے نہیںنہ شہداءکے خون سے غداری کریں گے۔نعیم اجمیری نے خطاب کرتے ہوئے کہا حکمراں سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی پہلی تحقیقی رپورٹ فی الفور شائع کریں اگر حکمران قاتل نہیں تو رپورٹ کیوں چھپائی جا رہی ہے ۔۔محمود میمن نے خطاب کرتے ہوئے کہا PTV پر  حملہ ن لیگ نے کروایا تھااسکا الزام ہم پر لگایا جا رہا ہے ہماری تاریخ ہے ہم نے کبھی قانون ہاتھ میں نہیں لیا ۔اگر ہم نے قانون ہاتھ میں لینا ہوتا تو ماڈل ٹاﺅن سے کوئی پولیس اہلکار بچ کر واپس نہ جاتا۔انھوں نے مطالبہ کیا کہ پنجاب حکومت مستعفی ہو تاکہ سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی شفاف تحقیقات ہو سکیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

کراچی ،12 ربیع الاول کے جلوسوں کے لئے ٹریفک پلان جاری

کراچی میں 12ربیع الاول کے جلوسوں کے حوالے سے ٹریفک پلان جاری کردیا گیا ہے۔ٹریفک پولیس کے مطابق دعوت اسلامی کا جلوس...

کراچی میں ڈینگی وائرس سر اٹھانے لگا ، اکتوبر کےمہینے میں دیگر مہینوں سے زیادہ کیسسز رپورٹ

کراچی میں ڈینگی وائرس سر اٹھانے لگا، اکتوبر کےمہینے میں دیگر مہینوں سے زیادہ کیسسز رپورٹ ہوئے۔ محکمہ صحت سندھ اکتوبر کے...

سرجانی ٹاون، گھرمیں چھریوں کے وار سے ایک خاتون ومرد قتل، ریسکیو ذرائع

کراچی: سرجانی ٹاون سیکٹر 4 ڈی میں گھر میں چھریوں کے وار سے ایک خاتون و مرد قتل، ریسکیو کے مطابق دونوں...

کورونا کیسز میں اضافہ، کراچی میں متعدد سرکاری اسکول بند

کراچی :کورونا کیسز میں اضافہ کے پیش نظر ضلع ملیر کے متعدد سرکاری اسکول بند کردیئے گئے ہیں،ضلع ملیر کے 8 سرکاری...