Wednesday, November 25, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

پی پی کی سابق رکن سندھ اسمبلی نسرین چانڈیو کورونا کا شکار

پیپلزپارٹی کی سابق رکن سندھ اسمبلی نسرین چانڈیون بھی کورونا وائرس کا شکار، خاندانی ذرائع کے مطابق چند...

اے ایس آئی محمد بخش کا ٹریننگ سینٹر کراچی میں تبادلہ

کشمور زیادتی کے ملزمان گرفتار کرنے والے سندھ پولیس کے بہادر افسر محمد بخش کا کراچی میں پولیس...

رینجرز اینٹی ٹیررسٹ ونگ میں تقریب

رینجرز اینٹی ٹیررسٹ ونگ میں تقریب، مختلف کارروائیوں میں برآمد کیا گیا سامان کی اصل مالکان کے...

واٹربورڈ ان ایکشن،نادہندگان کے پانی کے کنکشن منقطع

واٹربورڈ کا نادہندگان کے خلاف گرینڈ آپریشن تیز، واجبات ادا نہ کرنےوالے سیکڑوں صارفین کے پانی کے...

جیلوں میں متحدہ کارکنوں کو سہولیات دینے کے ثبوت ملنا شروع

mqm proofs1کراچی: پیپلزپارٹی کےدورحکومت میں جیلوں میں ایم کیوایم کارکنوں کوسہولیات کی فراہمی کےثبوت سامنے آگئے،جس کے مطابق ایک اجلاس میں اس وقت کے صوبائی وزیر جیل خانہ جات صادق میمن نے ایم کیو ایم کے کارکنوں کو ایک بیرک میں رکھنے کی منظوری دی۔ گزشتہ روز صولت مرزا نے ویڈیو پیغام میں سندھ حکومت پرجیل میں متحدہ کےکارکنوں کوسہولیات فراہم کرنے کا الزام لگایا تھا، جس کے ثبوت اب سامنے آگئے ہیں۔ نجی ٹی وی جیو نیوز نے پیپلزپارٹی دورمیں متحدہ کے کارکنوں کوسہولتیں دینے سے متعلق اجلاس کے منٹس حاصل کرلیے جس کے مطابق اکتوبر2011 میں صوبائی وزیر برائے جیل خانہ جات صادق میمن کی سربراہی میں ایک اجلاس ہوا، جس میں اس معاملے پربات ہوئی۔ اجلاس میں ایم کیو ایم کے 2 صوبائی وزرا اور ایک رکن سندھ اسمبلی نے بھی شرکت کی تھی۔ اجلاس میں متحدہ کے 195 قیدیوں کے معاملات پر بات ہوئی، طے پایاکہ ایم کیو ایم کارکنوں کوایک الگ بیرک میں رکھاجائے گا۔ وزیر صادق میمن نےایم کیو ایم کارکنوں کو ایک بیرک دینے پر رضامندی ظاہرکی،اجلاس میں جیل حکام نےایم کیو ایم وزرا سے کارکنوں کے رویے کی شکایت بھی کی، صولت مرزا کی جانب سےجیل حکام کو دھمکیاں دیےجانے کی شکایت بھی کی گئی، اجلاس میں بتایا گیا کہ صولت مرزا جیل حکام کو کہتا تھا میں جانتاہوں تمہارےبچےکہاں پڑھتے ہیں۔ ایم کیو ایم کے وزیرخالد افضل نے ذمےداری لی اور آئندہ ایسا نہ ہونے کی ضمانت دی، خالد افضل نےیقین دلایاکہ متحدہ کے کارکن جیل قوانین کی پابندی کریں گے، کسی کارکن نے کچھ غلط کیا تو فوری ایکشن لیا جائےگا۔ اجلاس کےمنٹس پر آئی جی جیل خانہ جات غلام قادرتھیبو کےدستخط بھی ہیں،جو اس وقت کراچی پولیس چیف ہیں۔

Open chat