Monday, January 25, 2021
"]
- Advertisment -

مقبول ترین

ادارہ نورحق، سعید غنی کی سراج الحق سے ملاقات

وزیرتعلیم سندھ سعید غنی کی ادارہ نور حق آمد، امیر جماعت اسلامی سراج الحق سے ملاقات، ذرائع کے مطابق سعید غنی نے ملاقات میں...

سندھ حکومت کا شاپنگ مالز مالکان کےلئے بڑا فیصلہ

 سندھ حکومت کا بڑا فیصلہ، ہفتے بھر رات گئے تک تمام شاپنگ مالز کو کھلے رہنے کی اجازت، ذرائع کے مطابق سندھ حکومت نے...

مراد علی شاہ اور علی زیدی کے وزیراعظم کو خطوط

جمعہ کے روز کراچی انسفارمیشن پلان کے اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور وفاقی وزیر علی زیدی کے مابین ہونےوالی تلخ کلامی...

شہر بھر میں 24 گھنٹے کےلئے سی این جی اسٹیشن کھل گئے

آٹھ دن کی بندش کے بعد سی این جی اسٹیشن اتوار کی صبح 8 بجے سے پیر کی صبح 8 بجے تک کھلے رہیں...

حکومت سے انتخابی اصلاحات کی امید نہیں،فردوس شمیم

ptiکراچی، پاکستان تحریک انصاف کراچی ریجن کے صدر فردوس شمیم نقوی نے کہا ہے کہ 2013کے عام انتخابات کے حوالے سے سپریم کورٹ کے انکوائری کمیشن2015 میں جن خامیوں کی نشاندہی کی تھی لیکن اس حوالے سے انتخابی اصلاحات میں وفاقی حکومت ناکام رہی۔ پارلیمنٹ میں ن لیگ کی تین چوتھائی اکثریت ہونے کے باوجود انتخابی اصلاحات پر کوئی بھی عملی کام نہیں کیاکیونکہ انتخابات کا یہ فرسودہ نظام سے ہی ن لیگ اور پیپلز پارٹی کو فائدہ ہے۔ یہ باتیں انہوں نے پارٹی سیکریٹریٹ ’’انصاف ہائوس‘‘ کراچی میں حلقہ قومی اسمبلی NA258کے ضمنی انتخاب کے حوالے سے ایک اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں وفاقی حکومت سے انتخابی اصلاحات کی کوئی امید نہیں اور ساتھ ساتھ پیپلز پارٹی نے بھی امیدواروں کی خرید و فروخت کا بازار گرم کیا ہوا ہے ۔ن لیگ کے سابق رکن قومی اسمبلی عبدالحکیم بلوچ نے پیپلز پارٹی میں شمولیت کرنے سے پہلے کوئی وضاحت نہیں کی کہ وہ کس وجہ سے رکن قومی اسمبلی سے استعفیٰ دے رہے ہیں۔ پہلے عوا م اور خصوصاً اپنے حلقے کے لوگوں کو حقائق سے آگاہ کرتے۔ پیپلز پارٹی نے ضمنی انتخاب شروع ہوتے ہی حلقے میں بے تحاشہ ترقیاتی کام اور اربوں روپے کے فنڈ کا اجراء کر کے انتخابی قوائد و ضوابط کی دھجیاں بکھیردی ہیں۔ اس لئے پاکستان تحریک انصاف حلقہ قومی اسمبلی NA258کے ضمنی انتخاب میں اپنے امیدوار محمد حنیف بنگش کو احتجاجاً دست بردار کروا رہی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ جمہوریت کی مضبوطی صرف بار بار انتخابات کروانے میں نہیں بلکہ صاف اور شفاف انتخابات سے ہی ممکن ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Open chat