Tuesday, November 24, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

خداداد کالونی ،گودام کی بالائی منزل پر آتشزدگی

خداداد کالونی میں گودام کی بالائی منزل میں آگ لگ گئی، فائربریگیڈ کی گاڑیاں روانہ، ریسکیو ذرائع...

نکاسی کی 936 میں سے781شکایات کا ازالہ کردیا،واٹربورڈ

واٹربورڈ نے شہر کے مختلف علاقوں سے موصولہ فراہمی ونکاسی آب کی 700سے زائد شکایات کا ازالہ...

ریسٹورنٹس میں ان ڈورڈائننگ پر پابندی عائد

ریسٹورنٹس میں ان ڈور ڈائننگ پر پابندی عائد، کمشنر کراچی نے ریسٹورنٹس کے حوالے سے تمام ڈپٹی...

سی ویو پر سائیکلنگ کرنے والوں کے خوش خبری

سی ویو پر سائیکلنگ کرنے والوں کے خوش خبری، کنٹونمنٹ بورڈ نے سی ویو پر تین کلو میٹر...

مزار قائد پر ڈاکٹر عافیہ کی رہائی کے لئے شاندار اور پروقار قومی جرگہ میں ”میثاق کراچی “منظور کرلیا گیا

aafiaکراچی، سپریم کورٹ آف پاکستان کے سابق جج ، سابق چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ و سابق صدارتی امیدوار ریٹائرڈ جسٹس وجیہہ الدین صدیقی نے کہا ہے کہ حکمران حکومت سے باہر ہوں تو بڑی بڑی باتیں کرتے ہیں اور اقتدار میں آکر عوام سے کئے گئے وعدے بھول جاتے ہیں ۔ عافیہ تنہا نہیں پوری قوم عافیہ کے ساتھ ہے۔ عافیہ قومی جرگہ کی سفارشات حکومت کو پیش کردی جائےں ۔ ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے کہا ہے کہ” قومی جرگہ“ میں ”میثاق کراچی“ نے عافیہ کے حق میں فیصلہ دے دیا ہے ۔ قوم کا بھر پور ساتھ ملنے پر شکر گزار ہوں ۔ قوم مزید ذلت و رسوائی برداشت نہیں کرے گی اور ہر گھر سے عافیہ رہائی کی آواز بلند ہوگی۔ وہ عافیہ موومنٹ کے زیر اہتمام مزار قائد کے سائے تلے ”قومی جرگہ “ سے خطاب کررہے تھے ۔ عافیہ کی رہائی کے معاملے پر قومی جرگہ میں میثاق کراچی منظور کرلیا گیا ۔ قومی جرگہ سے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے جنرل سیکریٹری اقبال ظفر جھگڑا ، سینیٹر طلحہ محمود، متحدہ قومی موومنٹ کے اےم این اے مزمل قریشی ، مولانا احمد لدھیانوی ، یٰسین آزاد ایڈوکیٹ ، اسد اللہ بھٹو ایڈوکیٹ سمیت درجنوں سیاسی و سماجی ، انسانی حقوق ، طلباءو صحافی رہنماﺅں نے خطاب کیا اور اپنے پیغامات دیئے ۔ تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ آف پاکستان کے ریٹائرڈ جسٹس ، ریٹائرڈچیف جسٹس سندھ اور سابق صدارتی امیدوار جسٹس (ر) وجہیہ الدین احمد صدیقی نے کہا ہے کہ ایک وقت وہ تھا کہ سندھ کے ساحل سے گزرنے والے عرب تاجروں کے عورتوں ، بچوں اور مال و اسباب پر بحری قذاقوں نے قبضہ کرلیا تواس وقت کے حکمران حجاج بن یوسف نے محمد بن قاسم ؒ کی قیادت میں فوجی مہم روانہ کی اور آج یہ وقت ہے کہ ہم 12سالوں سے قید اپنی قوم کی بیٹی کے لئے کچھ بھی نہیں کرسکتے ۔ یہ حکمرانوں کی بے حسی ہے کہ وہ حکومت سے باہر ہوتے ہیں تو بڑی بڑی باتیں کرتے ہیں اور جب حکومت میں ہوتے ہیں تو عوام سے کئے گئے سارے وعدے بھول جاتے ہیں۔
ڈاکٹر عافیہ کی بہن ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے کہا کہ آج مزار قائد کے سائے تلے ہونے والے قومی جرگہ میں میثاق کراچی نے عافیہ کے حق میں فیصلہ دے دیا ہے ۔ میں قوم کی شکر گزار ہوں جس نے قومی جرگہ کو کامیاب بنایا۔ پاکستانی قوم نے ہر لمحہ عافیہ رہائی کی تحریک میں میرا بھر پور ساتھ دیا ہے مگر حکمرانوں پر افسوس ہے کہ انہوں نے بے حسی اور بزدلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی ذمہ داری پوری نہیں کی ۔ ڈاکٹر عافیہ کی وطن واپسی کے کئی مواقع کو ضائع کردیا گیا ۔ قومی غیرت و حمیت پر ڈالرز کو ترجیح دی جاتی رہی ہے اور پوری قوم کو شرمسار کرکے قومی پرچم سرنگوں کیا جاتارہا ہے ۔اب وقت آگیا ہے کہ عافیہ رہائی تحریک کی صدائیں ہر گھر سے بلند ہوں گی اور اب قوم مزید ذلت و رسوائی برداشت نہیں کرے گی ۔ عافیہ موومنٹ پوری قوم کو ساتھ ملا کر اپنی بیٹی عافیہ صدیقی اور دیگر غیر ممالک میں قید و بند کی صعوبتیں برداشت کرنے والے پاکستانی قیدیوں کو وطن واپس لائیں گے ۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے جنرل سیکرےٹری اقبال ظفر جھگڑ ا نے کہا کہ عافےہ قوم کی بےٹی ہے ۔ اُس کی رہائی ہم پر قرض ہے ۔ اللہ تعالیٰ ہم سب کو توفےق عطا فرما ئے کہ ہم اس اہم مشن میں کامےاب ہوسکیں۔ متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما اور گلشن اقبال سے ممبر قومی اسمبلی مزمل قریشی نے کہا کہ حکومت نے ڈاکٹر عافیہ کی والدہ اور قوم سے عافیہ کی رہائی کا جو وعدہ کیا تھا وہ اُسے پورا کرے ۔ سفارتی طور پر اور انسانی ہمدردی کے طور پر عافیہ کی رہائی کے لئے فوری اقدامات بروئے کار لائے جائیں۔ ممتاز عالم دین وقومی مذہبی رہنما مولانا احمد لدھےانوی نے کہا کہ ڈاکٹر عافےہ کی قربانی نے صحابےات رضوان اللہ اجمعین کی قربانےوں کی ےاد دلا دی ہے ۔جرم ضعےفی کی اتنی بڑی سزا جو ڈاکٹر عافےہ کاٹ رہی ہیں ےہ انشاءاللہ صیہو نی طاقتوں کے عزائم کوخاک میں ملا دے گی ۔سپرےم کورٹ بار کے سابق صدر و ممبر پاکستان بار کونسل ےٰسین آزاد اےڈوکےٹ نے کہا کہ پاکستان میں جب بھی کسی غےر ملکی کو سزا ہوئی تو حکومتوں نے انہیں جلد از جلد اسپیشل جہازوں میں بٹھا کر اےسے مجرموں کو باہر بھجواےا لیکن افسوس کا مقام ہے کہ قوم کی بے گناہ بےٹی کی واپسی کے لئے حکومتوں کو جورول ادا کرناتھا وہ نہیں ادا کےا گےا ۔ جماعت اسلامی پاکستان کے نائب امےر اور ملی ےکجہتی کونسل سندھ کے صدر اسد اللہ بھٹو اےڈوکےٹ نے کہا کہ عافےہ کا معاملہ 18کروڑ پاکستانےوں کے دلوں کی آواز ہے ۔ ےہ دنےا ئے انسانےت کے لئے چیلنج ہے ۔ مسلم لےگ(ن) کے مرکزی نائب صدر سلیم ضےاءنے کہا ہے کہ ڈاکٹر عافےہ کے ساتھ ہونے والے مظالم کی مثال ماضی قرےب کی تاریخ میں نہیں ملتی ۔ اہل خانہ اور وکلاءکو ملاقات کی اجازت نہ دےنا کہاں کا انصاف ہے؟ڈاکٹر عافےہ کو جلد از جلد وطن واپس لاےا جائے او ر قوم کے جذبات کا احساس کےا جائے ۔پاکستان تحریک انصاف سندھ وومن ونگ کی صدر و ممبر کور کمیٹی سندھ نازیہ ربانی نے کہا ہے کہ حکمران سو رہے ہیں ۔ پچھلے 20، 25برسوں میں آنے والی تمام حکومتوں نے اپنی ذمہ داری سے کوتاہی کی ۔ خواتین اس ملک کی آبادی کا 50فیصد سے زائد حصہ ہیں ، قوم کے رہنما ہی اگر خواتین کی عزت نہیں کریں گے تو ہم غیروں سے کیسے توقع رکھ سکتے ہیں ۔ میں نے اپنی سیاسی زندگی کا پہلا احتجاج ہی ڈاکٹر عافیہ کے لئے کیا اور یہ ہماری قومی غیرت کا سب سے اہم سوال ہے کہ عافیہ امرےکہ کی قید میں ہے ۔ ہم عافیہ کی رہائی کے لئے آخری سانس تک جدوجہد جاری رکھیں گے ۔ کراچی تاجر اتحاد کے چئےر مین عتیق مےر نے کہا کہ جس دن بھی قوم کو اپنی ماﺅں، بہنوں ،بےٹےوں اور بہوﺅں کی حرمت کا احساس ہوگےا ۔اُس دن پاکستانی ایک عظیم قوم بن جائیں گے پھر کوئی عافےہ اغواءنہیں ہوگی ۔ عافےہ نے کوئی جرم کےا ےا نہیں اس بحث کو چھوڑ دےا جائے تب بھی ڈاکٹر عافےہ کا 3بچوں سمےت اغوائ، طوےل عرصہ لاپتہ رہنا اور تشدد ہی اتنا بڑا جرم ہے کو اُن پر لگائے گئے الزامات کی قلعی کھل جاتی ہے۔ ڈاکٹر عافےہ کو پاکستان میں عدالت میں پیش نہ کرنا اورخاموشی سے امریکہ کے حوالے کرنا بھی غےر قانونی ، غےر اخلاقی اور غےر انسانی فعل ہے۔ صحےہ برنی اےڈوکےٹ نے کہا کہ انسانی حقوق کے عالمی چمپےن امریکہ نے پاکستانی قوم کی بےٹی عافےہ کے حقوق ظلم و جبر کے ساتھ پامال کئے ہیں اور کتنا بڑا ظلم ہے کہ 3معصوم بچوں کو اپنی ماں کی ممتا اور محبت سے محروم کردےا گےا ہے ۔قادر خان مندو خیل اےڈوکےٹ نے کہا کہ عافےہ کی رہائی پاکستانی عدلےہ ،عالمی عدالت انصاف اور اوآئی سی کی ذمہ داری بنتی ہے ۔ انہوں نے سندھ و سپرےم کورٹ کے چےف جسٹس صاحبان اور تمام باشعور طبقات سے سوال کےا کہ گلشن اقبال سے 3بچوں کے ساتھ اغواءکی گئی معصوم خاتون کو بگرام جیل میں آخرکس جرم اور کےوں بند کےا گےا؟پاسبان پاکستان کے صدر الطاف شکور نے کہا کہ حکمران قوم سے مخلص ہوجائیں تو ڈاکٹر عافیہ 24گھنٹوں میں وطن کی سرزمین پر واپس لوٹ سکتی ہے ۔

Open chat