Friday, November 27, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

مہندی کے کارخانے میں آتشزدگی

اورنگی ٹاؤن 4 نمبر کے قریب مہندی بنانے والے کارخانے میں آتشزدگی، فائر بریگڈ کی 3 گاڑیوں نے...

ضلع وسطی کے مزید علاقوں میں اسمارٹ لاک ڈاؤن

ضلع وسطی کے مزید علاقوں میں اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ،  گلبرک، نارتھ ناظم آباد، لیاقت آباد، نارتھ کراچی...

ڈیفنس فیز4 میں مُبینہ پولیس مقابلہ

ڈیفنس فیز 4 میں امام بارگاہ کے قریب مُبینہ پولیس مقابلہ، پولیس اور ڈاکوؤں کے مابین فائرنگ کا...

ملٹری ٹیلی پیتھی، فوجیوں کا دماغ پڑھا جاسکے گا

امریکی فوج کا تحقیق ادارہ ’’آرمی ریسرچ آفس‘‘ (اے آر او) آج کل ایک ایسے اچھوتے منصوبے پر...

سیوریج سسٹم کو مزید بہتربنایا جارہا ہے، قطب الدین شیخ

KWSBکراچی، ایم ڈی واٹربورڈ قطب الدین شیخ نے کہا ہے کہ اوورفلو ، لیکیجز کا خاتمہ ہماری اولین ترجیح ہے سیوریج سسٹم کو مزید بہتر بنایا جارہا ہے ، پانی کی کمی کے باوجود منصفانہ ومساویانہ تقسیم سے شہریوں کو پانی فراہم کیا جارہا ہے ،جبکہ لائنز ایریا اور ایف ٹی سی فلائی اوور پر رساو¿ کا خاتمہ کردیا گیاہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کے دن ایف ٹی سی فلائی اوور پر ڈالی جانے والے نئی پائپ لائن کے کام کے معائنہ کے دوران کیا اس موقع پر ڈی ایم ڈی ٹیکنیکل سروسز جمیل اختر سپرنٹنڈنگ انجینئر WTMظفر پلیجو، ایس ای جمشید ٹاو¿ن آفتاب عالم چانڈیو اور آصف قادری بھی موجود تھے ایم ڈی واٹربورڈ نے مزید کہا کہ اس مقام پر رساو¿ کا خاتمہ ترجیحی بنیادوں پر کیا جارہا ہے اور 14انچ کی 725 فٹ نئی پائپ لائن 4کروڑ روپے کی لاگت سے تبدیل کی جارہی ہے جسے منگل تک مکمل کرلیا جائے گا ، ایف ٹی سی فلائی اوور کے قریب پائپ لائن کی مرمت کے باوجود پانی کے رساو¿ کی شکایت تھی اس وجہ سے یہاں نئی پائپ لائن ڈالنا ناگزیر تھا انہوں نے کہا کہ اس علاقہ میں جو کنٹونمنٹ کی حدود میں ہے واٹربورڈ کا سیوریج سسٹم موجود نہیں تاہم 400 فٹ لائین کنٹونمٹ بورڈ ڈالے گا،اس اہم مسئلہ کو واٹربورڈ بلدیہ عظمی کراچی اور کنٹونمنٹ بورڈ مشترکہ تعاون سے حل کررہا ہے البتہ نالوں اور بارش کے پانی کے اوورفلو کی صورت میں کنٹونمنٹ بورڈ ہی پانی کی نکاسی کرتا ہے تاہم واٹربورڈ بھی کے ایم سی اور کنٹونمنٹ بورڈ کی طرح اپنی ذمہ داری پوری کررہا ہے انہوں نے ڈی ایم ڈی ٹیکنیکل سروسز کو ہدایت کی کہ پائپ لائین ڈالنے کا کام منگل تک لازمی مکمل کرلیا جائے اور اس سلسلہ میں دوسرے محکموں سے مکمل تعاون کیا جائے۔

Open chat