Sunday, January 24, 2021
"]
- Advertisment -

مقبول ترین

ادارہ نورحق، سعید غنی کی سراج الحق سے ملاقات

وزیرتعلیم سندھ سعید غنی کی ادارہ نور حق آمد، امیر جماعت اسلامی سراج الحق سے ملاقات، ذرائع کے مطابق سعید غنی نے ملاقات میں...

سندھ حکومت کا شاپنگ مالز مالکان کےلئے بڑا فیصلہ

 سندھ حکومت کا بڑا فیصلہ، ہفتے بھر رات گئے تک تمام شاپنگ مالز کو کھلے رہنے کی اجازت، ذرائع کے مطابق سندھ حکومت نے...

مراد علی شاہ اور علی زیدی کے وزیراعظم کو خطوط

جمعہ کے روز کراچی انسفارمیشن پلان کے اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور وفاقی وزیر علی زیدی کے مابین ہونےوالی تلخ کلامی...

شہر بھر میں 24 گھنٹے کےلئے سی این جی اسٹیشن کھل گئے

آٹھ دن کی بندش کے بعد سی این جی اسٹیشن اتوار کی صبح 8 بجے سے پیر کی صبح 8 بجے تک کھلے رہیں...

محنت کشوں کے حقوق کے تحفظ کیلئے مثبت قانون سازی ضروری ہے،رضا ربانی

Senator-Mian-Raza-Rabbaniکراچی، چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی نے کہا ہے کہ محنت کشوں کے حقوق کے تحفظ کیلئے مثبت قانون سازی اور اس کا چاروں صوبوں میں دیانت دارانہ نفاذ ضروری ہے اور میں سمجھتا ہوں کہ وفاقی اور صوبائی حکومتیں اس ضمن میں اپنا موثر کردار ادا کریں گی۔ وہ کراچی میں اپنی رہائش گاہ پرسینئر مزدور رہنما حبیب الدین جنیدی کی قیادت میں ملک گیر مزدور تنظیموں کے ایک 70رکنی وفد سے گفتگو کررہے تھے۔ جس نے ان سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی اور انہیں سینیٹ کا چیئرمین منتخب ہونے پر مزدور طبقے کی جانب سے مبارکباد پیش کی۔
انہوں نے کہا کہ یہ ایک حقیقت ہے کہ ملک کی معیشت میں محنت کشوں کا کردار ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے لیکن افسوس کا مقام ہے کہ ظالم سرمایہ دارانہ اور جاگیردار نہ نظام نے اس طبقے کو ان کے قانونی حقوق سے محروم کررکھا ہے جو کہ ایک ناقابل برداشت صورت حال ہے۔ انہوں نے کہا کہ قانون کا اطلاق زندگی کے تمام شعبوں پر یکساں انداز میں کیا جانا چاہیے اور یہ شدید ناانصافی ہے کہ مزدوروں ، کسانوں اور ہاریوں کو تو ان کے جائز حقوق سے بھی محروم رکھا جائے مگر استحصالی طبقہ زندگی کی تمام نعمتوں سے مستفید ہوں۔ انہوں نے کہا کہ آئین پاکستان اور ملکی قونین میں مزدور طبقے کے حقوق کے تحفظ کی متعدد مقامات پر یقین دہانی کرائی گئی ہے لہذا ضروری ہے کہ وفاقی اور صوبائی حکومتیں اور مختلف اداروں کی انتظامیہ آئین و قانون کی پاسداری کرتے ہوئے اس طبقے کو ان کے حقوق فراہم کریں، سینیٹر میاں رضا ربانی نے کہا کہ انہوں نے ساری زندگی جمہوریت کی بالادستی اور مظلوم طبقات کے حقوق کے تحفظ کی جدوجہد کی ہے اور وہ ہمیشہ اس عظیم مشن کو جاری رکھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت کے استحکام کیلئے تمام جمہوری قوتوں جن میں سیاسی پارٹیاں اور مزدور تنظیمیں بھی شامل ہیں انہیں مل کر جدوجہد کرنی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ وفاق پاکستان کو مستحکم بنایا جائے گا اور اس کیلئے ضروری ہے کہ ملک کے چاروں صوبوں کے عوام کو ان کے حقوق دیئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی نے اس ملک کو اقتصادی، معاشی اور سماجی وثقافتی طور پر بھی شدید نقصان پہنچایا ہے ، اب وقت آگیا ہے کہ ملک کی تمام جمہوریت پسند قوتیں دہشت گردی کے خاتمے کیلئے اپنا کردار موثر طور پر ادا کریں۔انہوں نے پاک فوج کی جانب سے دہشت گردی کے خاتمے کیلئے کئے گئے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس جنگ کو انتہا پسندی اور دہشت گردی کے خاتمے تک جاری رہنا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میںجاری نجکاری کا عمل سیاسی جماعتوں کو تقسیم کرسکتا ہے لہذا اس پر نظر ثانی ہونی چاہیے۔ قبل ازیں وفد میں شامل مختلف مزدور تنظیموں کے قائدین نے محنت کشوں کو درپیش متعدد مسائل سے میاں رضا ربانی کو آگاہ کیا اور انہیں بتایا کہ کس طرح بعض اداروں میں قوانین کی خلاف ورزی کی جارہی ہے اور محنت کش طبقے کو ان کے جائز حقوق سے بھی محروم رکھا جارہا ہے ، مزدور رہنماﺅں نے اس یقین کا اظہار کیا کہ سینیٹر میاں رضا ربانی ہمیشہ کی طرح ان کے مسائل کے حل اور حقوق کی بازیابی کیلئے ان کی رہنمائی کریں گے۔ مزدور قائدین نے سینیٹر میاں رضا ربانی کو بتایا کہ محنت کشوں کے حوالے سے اب بھی مزید قانون سازی کی گنجائش موجود ہے جبکہ اس سے زیادہ ضرورت اس امر کی ہے کہ موجودہ مزدور قوانین کو دیانت داری کے ساتھ نافذ کیا جائے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Open chat