Wednesday, January 27, 2021
"]
- Advertisment -

مقبول ترین

سی این جی اسٹیشن پھر بند، شہری مشکلات شکار

سی این جی پھر بند، سوئی سدرن گیس کمپنی نے بدھ کی صبح 8 بجے سے ہفتہ کی صبح 8 بجے تک کراچی سمیت...

گلشن اقبال، گاڑی پر فائرنگ سے میاں بیوی زخمی

 شہر میں امن وامان کی صورت حال خراب، گلشن اقبال موتی محل کے قریب شاپنگ مال کے سامنے گاڑی پر فائرنگ سے میاں بیوی...

پاکستان ریلوے کا آن لائن بکنگ کا نظام بیٹھ گیا

سسٹم کی خرابی یا پھر بکنگ کا رش، پاکستان ریلوے کی آن لائن بکنگ کا نظام بیٹھ گیا، شہریوں کو آن لائن بکنگ کرانے...

گورنرسندھ عمران اسماعیل سے حلیم عادل شیخ کی ملاقات

گورنرسندھ عمران اسماعیل سے پی ٹی آئی کے رہنما حلیم عادل شیخ کی ملاقات، دونوں رہنمائوں میں ملاقات کے دوران صوبے کی سیاسی صورت...

ایگزیکٹ اسکینڈل: شعیب شیخ گرفتار، لاکھوں جعلی ڈگریاں، اسٹوڈنٹ کارڈز برآمد

shoaib shaikh11کراچی: جعلی ڈگری اسکینڈل میں ملوث ایگزیکٹ کے سی ای او شعیب شیخ کو ایف آئی اے نے حراست میں لے لیا ہے۔ ڈائریکٹر ایف آئی اے شاہد حیات نے کہا ہے کہا ہے کہ لاکھوں جعلی ڈگریاں برآمد کر لی گئی ہیں اور ایگزیکٹ کے خلاف مقدمہ درج کیا جارہا ہے۔ کراچی میں ایگزیکٹ کے ہیڈکوارٹرز کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ آج ہمیں اس مقام کے بارے میں علم ہوا تھا جہاں ڈگریاں، اسٹوڈنٹ کارڈ اور دیگر میٹریل پرنٹ ہوتا تھا۔ ہم نے مجسٹریٹ کو ساتھ لے کر ایگزیکٹ کی ایک عمارت پر چھاپہ مارا، تو لاکھوں کی تعداد میں ڈگریاں، اسٹوڈنٹ کارڈ، ڈی وی ڈیز اور دیگر مواد برآمد ہوا۔ ہم سمجھتے ہیں کہ ہم نے اتنا مواد برآمد کرلیا ہے کہ ہم آسانی سے ان کیخلاف کیس درج کرسکتے ہیں اور ہم ان کیخلاف مقدمہ درج کر رہے ہیں۔ ذرائع ابلاغ کے نجی ٹی وی اور اخبار ایکسپریس کی ویب سائٹ پر رپورٹ کے مطابق ایف آئی اے ذرائع بتایا کہ جعلی ڈگریوں کی برآمدگیوں کے بعد ایف آئی اے کے اعلیٰ افسران نے فوری طور پر وزارت داخلہ کو پیش رفت سے آگاہ کیا اور ایگزیکٹ کے سی ای او شعیب شیخ اور سی ای ای وقاص عتیق کو گرفتار کرنے اور ان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی اجازت حاصل کی۔ شعیب شیخ کے خلاف الیکٹرونک ٹرانزکشن ایکٹ، پی پی سی468 اور پی پی سی420، 419اور471 کے تحت مقدمہ قائم کیا جائے گا۔ذرائع نے بتایا کہ مقدمے کا ڈرافٹ تیارکرلیا گیا ہے ، مقدمے میں منی لانڈرنگ اور سائبرکرائم کی دفعات بھی شامل کرنیکا فیصلہ کیا گیا ہے۔ شعیب شیخ کو ایف آئی اے کے انسداد انسانی اسمگلنگ سرکل منتقل کردیاگیا ہے جب کہ ایگزیکٹ کے ہیڈ آفس کے ساتھ کمپنی کی ایک عمارت کو سیل کردیا گیا ہے۔ایف آئی اے کی ٹیم شواہد اکٹھے کرنے کیلیے مجسٹریٹ کے ہمراہ ایگزیکٹ کے دفتر پہنچی تو ایگزیکٹ کے200 سے زائد ملازمین نے احتجاجاً سڑک بلاک کردی۔ ایف آئی اے کی ٹیم کو ملازمین کے احتجاج کی وجہ سے دفتر میں داخل ہونے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑا جس پر ایف آئی اے کی ٹیم نے وارننگ دی کہ ملازمیں وہاں سے ہٹ جائیں ورنہ انھیں حراست میں لے لیا جائیگا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Open chat