Thursday, October 22, 2020
Home خاص خبریں صحت، تعلیم، فلاحی ادارے Sindh Tenancy Actایکٹ میں اصلا حات نا گزیر ہیں، مقررین

Sindh Tenancy Actایکٹ میں اصلا حات نا گزیر ہیں، مقررین

rsz_img_3609iکراچی: سندھ اسمبلی میں متحدہ قومی موومنٹ کے پارلیمانی لیڈر سید سردار احمد نے کہا ہے کہ دیہی معیشت کی مضبوطی تک ملکی معیشت میں بہتری نہیں آسکتی ۔سندھ بھر میں مسائل بہت ہیں اور اس کی بڑی وجہ کسی بھی طبقے کی نمائندگی نہ ہونا ہے۔بیچ لگژی ہوٹل میں NPCPاور SCOPEکے زیر اہتمام Oxfamسے منعقدہ ورکشاپ میں سردار احمد نے مزید کہاکہ انتخابی اصلاحات میں ہم ہاریوں کی اسمبلی میں نمائندگی کے حوالے سے تجویز پیش کریں گے اور میں اپنی جماعت کی جانب سے اس موقف کی بھرپور حمایت کی یقین دہانی کراتا ہوں ، ان کا مزید کہناتھا کہ کاشتکاری کارپوریٹ سیکٹر کے ہاتھوں میں دیئے جانے کی مسلسل مخالفت کی اور اب بھی اسی موقف پر قائم ہیں۔

Sindh Tenancy Act کے جائزے کے حوالے منعقدہ ورکشاپ میں SCOPEکے تنویر عارف نے کہا کہ غریبوں کے لئے زمین ہی زندگی ہے لیکن ان پر جاگیردار اور وڈیرے قابض ہیں ، انہوں نے بتایاکہ NPCPہاریوں اور کاشتکاروں کی تنظیموں کے لئے ایک پلیٹ فارم ہے جس کا ایجنڈا ملک میں اصلاحات لانا ہے اور ہماری کوشش ہوتی ہے انتخابات سے قبل سیمینار منعقد کرائے جائیں تاکہ سیاسی جماعتوں اور حکومتی نمائندوں کو اس بات پر قائل کیا جائے کہ اصلاحات بہت ضروری ہیں۔

Oxfam GROWمنیجر شہباز بخاری نے بتایا کہ زمین کی غیر منصفانہ تقسیم کا اانداز ان اعداد و شمار سے لگایا جا سکتا ہے کہ ملک میں زرعی اراضی کا 65فی صد حصہ 15فیصد زمینداروں کی ملکیت ہے جبکہ 65 فیصد ہاریوں کو صرف 15فیصد زمین کاشتاکری کے لئے میسرہے۔انہوں نے کہاکہ یہی تقسیم ملکی معیشت پر مائیکرو اور میکرو سطح پر منفی اثرات مرتب کر رہی ہے۔انہوں نے کاشتکاری میں عورتوں کی مشقت 70فی صد جبکہ ملکیت میں 3فیصد ہے۔
مقررین نے سیمینار کے دوران ہاریوں کے مسائل اجاگر لئے اور سماجی و معاشرتی تبدیلیوں کے حوالے سے گفتگو کی اور ان کا مشترکہ مطالبہ تھا کہ 64سالہ پرانا ایکٹ اب تبدیل ہونا چاہیے اس کا نیا مسودہ تیار کیا جائے،موجودہ ایکٹ نے ہاریوں اور زمینداروں کے مابین فاصلہ بہت بڑھا دیا ہے اور یہ کسی بھی طور ہاریوں کی ضروریات اور حقوق کا تحفظ نہیں کرتا۔اس کا واضح اظہار اس جدید دور میں بھی سندھ کا ہاری خط غربت سے نیچے زندگی گذار رہا ہے اور زمینداروں کے پاس جبری مشقت پر مجبور ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

سندھ حکومت اور پولیس ڈرامہ کررہی ہے، شبلی فراز

کراچی، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات شبلی فراز نے ایک بار پھر سندھ پولیس کی چھٹیوں کی درخواست کو ڈارمہ قرار دے...

کراچی، مسکن چورنگی پر دھماکے کے زخمیوں کے علاج کے معاملے محکمہ صحت سندھ نے نجی اسپتال کو خط لکھ کر آگا...

کراچی میں جھڑپوں کی جھوٹی خبر،بھارتی میڈیا دنیا بھر میں رسوا

کراچی ،بھارتی میڈیا نے پاکستان کے خلاف جھوٹے پروپیگنڈے کے اپنے ہی ریکارڈز توڑ دیے۔ بھارتی میڈیا اپنی اِس احمقانہ خواہش کو خبر...

کورونا وائرس، حکومت کا کئی شعبوں کی بندش پر غور

کراچی، نیشنل کمانڈ آپریشن سینٹر کا اجلاس وفاقی وزیر اسد عمر کے زیر صدارت ہوا جس میں فیصلہ کیا گیا کہ جس...