Sunday, November 29, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

جامعہ کراچی کی پوائنٹس سروس

وفاقی سطح پر قائم تعلیمی کمیٹی نے اعلان کیا ہے کہملک بھر کے تعلیمی ادارے 15 ستمبر...

پلاسٹک آلودگی ( کرن اسلم)

اگر آپ اپنے ارد گرد نظر دوڑائیں تو آپ کو کسی نہ کسی صورت میں پلاسٹک کی اشیا ضرور ملیں گی۔ مثال کے طور...

بہادرآباد، ڈکیتی کی بڑی واردات،شہری40 لاکھ روپے سے محروم

بہادرآباد میں ڈکیتی کی بڑی واردات، شہری 40 لاکھ روپے سے محروم، ذرائع کے مطابق بہادرآباد شاہ...

میئر کراچی کے پاس اختیارات نہیں تھے، گورنر سندھ

گورنر سندھ عمران اسماعیل نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کا یہ پیغام...

ایس ایس یو کمانڈوز کا میڈیا کے نمائندوں پر تشدد، کیمرے چھین لیے

journalist320x180کراچی، سچ اور حق کی آواز آج ایک بار پھر دبانے کی کوشش کی گئی۔ سندھ ہائیکورٹ میں کوریج کے لیے آئے نہتے صحافیوں پر نقاب پوش اہلکاروں نے ہلہ بول دیا۔ مارا پیٹا اور کوریج سے روکنے کے لیے کیمرے اور تکنیکی آلات چھین لیے۔قانون کے رکھوالے ہوئے بے لگام اور ٹوٹ پڑے میڈیا پر۔ ذوالفقار کی سندھ ہائیکورٹ میں آمد کے ساتھ ہی عدالت کے باہر موجود پولیس اہلکاروں نے جہاں سابق وزیر داخلہ کے ہمراہ مجود گارڈز کو حراست میں لینا شروع کیا وہیں واقعہ کو رپورٹ کرنے کے لیے موجود صحافیوں کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔واقعہ کی کوریج کے لیے موجود صحافی بھی پولیس تشدد کا شکار ہوئے اور سادہ کپڑوں میں ملبوس اہلکاروں نےفوٹوگرافرز سے کیمرے چھین لیے۔ سندھ ہائیکورٹ کے باہر صحافیوں پر بہیمانہ تشدد کی سیاسی جماعتوں اور سول سوسائٹی کی طرف سے بھی شدید مذمت کی گئی ہے۔

Open chat