Wednesday, January 27, 2021
"]
- Advertisment -

مقبول ترین

سی این جی اسٹیشن پھر بند، شہری مشکلات شکار

سی این جی پھر بند، سوئی سدرن گیس کمپنی نے بدھ کی صبح 8 بجے سے ہفتہ کی صبح 8 بجے تک کراچی سمیت...

گلشن اقبال، گاڑی پر فائرنگ سے میاں بیوی زخمی

 شہر میں امن وامان کی صورت حال خراب، گلشن اقبال موتی محل کے قریب شاپنگ مال کے سامنے گاڑی پر فائرنگ سے میاں بیوی...

پاکستان ریلوے کا آن لائن بکنگ کا نظام بیٹھ گیا

سسٹم کی خرابی یا پھر بکنگ کا رش، پاکستان ریلوے کی آن لائن بکنگ کا نظام بیٹھ گیا، شہریوں کو آن لائن بکنگ کرانے...

گورنرسندھ عمران اسماعیل سے حلیم عادل شیخ کی ملاقات

گورنرسندھ عمران اسماعیل سے پی ٹی آئی کے رہنما حلیم عادل شیخ کی ملاقات، دونوں رہنمائوں میں ملاقات کے دوران صوبے کی سیاسی صورت...

مفتی شامزئی کےقتل میں ملوث ٹارگٹ کلر وصی حیدر کےسنسنی خیزانکشافات

crimeکراچی، مفتی نظام الدین شامزئی سمیت علمائے کرام کےقتل میں ملوث ٹارگٹ کلر وصی حیدر نے تفتیشی اداروں کےسامنےسنسنی خیزانکشافات کئےہیں۔ ملزم کےمطابق علمائےکرام کوقتل کرنےکے لئے دوہزار سات میں کاکابندا کی سربراہی میں ٹارگٹ کلرزکا گروپ بنایاگیا۔معروف عالم دین مفتی نظام الدین شامزئی کے قتل میں ملوث ملزم وصی حیدر کے تحقیقاتی اداروں کے سامنے اہم انکشافات۔ گرفتار ملزم نےاعتراف کیا کہ کاکابندا کی سربراہی میں دو ہزارسات میں علمائے کرام کوقتل کرنےکےلئے گروپ بنایا گیا۔ جس میں ملزم کے علاوہ وجاہت،یعقوب ماما، احسن اور رضا شامل تھے۔ ملزم نےبتایا کہ اس کا کام ریکی اور ٹارگٹ کی نشاندہی کرنا تھا۔ ملزم نےمفتی نظام الدین شامزئی کی بھی نشاندہی کی جبکہ ٹارگٹ کلرز گروپ کے دیگر ارکان نےفائرنگ کی۔وصی حیدرنےانکشاف کیا کہ علمائے کرام کی ٹارگٹ کلنگ کامرکزی ملزم تابش لندن فرار ہوچکاہے۔ ملزم کے مطابق علامہ مجیب کی ہائی
روف پر پہلے اس نے اور اس کے بعد تابش نے فائرنگ کی جبکہ فرار کے وقت راستہ کلیئر کرانا بھی اس کی ذمہ داری تھی۔ ملزم وصی حیدر نے مزید بتایا کہ انسپکٹر ناصر الحسن پر حملے میں اس کےگروپ کے علاوہ بشیر دھوبی بھی شامل تھا جبکہ اس کےگروپ کو شہر میں دہشتگردی کی وارداتیں کرنے کے لیے پانچ کلاشنکوف اور پستول فراہم کئے گئےتھے ۔گرفتار ملزم کی نشاندہی پر سیکیورٹی اداروں نے لائنز ایریا میں کارروائی کرتے ہو ئےاسلحے کی بھاری کھیپ برآمد کرلی۔ اس سے پہلے انسداد دہشتگردی کی عدالت نے وصی حیدر کو چودہ روز کے لئے پولیس کے حوالے کیاتھا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Open chat