Thursday, October 22, 2020
Home خصوصی رپورٹس اگست میں بھی قتل وغارت گری نہ رک سکی (سید ماجد علی)

اگست میں بھی قتل وغارت گری نہ رک سکی (سید ماجد علی)

target-killing-608         اگست میں نشانہ بننے والوں کی تعداد157 تک پہنچ گئی جبکہ جولائی میں یہ تعداد150تھی۔ شہریوں کی جان و مال کو تحفظ فراہم کرنے والے پولیس و رینجرز اہلکار بھی دہشت گردی کی بھینٹ چڑھے۔

پولیس کی روایتی غفلت کے باعث ٹارگٹڈ آپریشن بھی غیرموثر ثابت ہو رہا ہے۔اسٹریٹ کرائم کی وارداتوں میں اضافہ ہو گیاـ جولائی میں دہشت گردی کارروائیوں میں 16 پولیس افسران و اہلکار جبکہ 3 رینجرز اہلکاروں سمیت 150 افراد دہشت گردی کی بھینٹ چڑھے ٹارگٹ کلرز نے شہریوں کے ساتھ ساتھ حساس ادارے کے افسر، کراچی آپریشن کے اہم کردار ایس ایچ او پریڈی، ایک سب انسپکٹر، 4 اے ایس آئی، 9 اہلکاروں اور سیاسی و مذہبی جماعتوں کے کارکنان سمیت 157 افراد سے جینے کا حق چھین لیا، پولیس اور رینجرز شہر میں قتل و غارت گری کی وارداتوں پر قابو پانے اور شہریوں کی جان و مال کے تحفظ کو یقینی بنانے میں بری طرح ناکام ہوگئی، ٹارگٹ کلرز آسانی سے ہدف کو نشانہ بناتے رہے۔

تفصیلات کے مطابق رینجرز اور پولیس شہر میں امن و امان کے قیامت اور شہریوں کی جان و مال کے تحفظ کو یقینی بنائیں میں ناکام رہے، گزشتہ ماہ اگست کے 31 روز میں ٹارگٹ کلنگ، اغوا کے بعد قتل کر کے لاشیں پھینکنے اور دیگر قتل و غارت کا بازار گرم رہا جس میں مجموعی طور پر 157 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔

1اعداد و شمار کے مطابق یکم اگست کو شہر کے مختلف علاقوں میں 5 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا، 2 اگست کو نارتھ ناظم آباد میں پاک فوج کے میجر عامر اظہر سمیت 4 افراد سے جینے کا حق چھین لیا گیا، 3 اگست کو اسکول کے پرنسپل سمیت4 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا، 5 اگست کو 2 افراد، 6 اگست کو 5 افراد، 7 اگست کو پولیس اہلکار سجاد عباسی سمیت 5 افراد کو ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا گیا، 8 اگست کو 4 افراد، 9 اگست اے ایس آئی حمید خٹک سمیت 5 افراد کو ابدی نیند سلا دیا گیا، 10 اگست کو 7 افراد، 11 اگست کو 9 افراد زندگی سے محروم کر دیے گئے۔

12 اگست کو گارڈن پولیس ہیڈ کوارٹرز سے کچھ فاصلے پر کراچی آپریشن کے اہم کردار انسپکٹرغضنفر کاظمی کا سر راہ ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا گیا جبکہ اسی روز شہر کے دیگر علاقوں میں فائرنگ کے واقعات میں اے ایس آئی جمیل سمیت 7 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا، 13 اگست کو سی آئی ڈی کے اے ایس آئی راجہ ارشد کی لاش نکالی گئی جسے گینگ وار کے ملزمان نے ایک سال قبل قتل کرنے کے بعد لاش کو دفنا دیا تھا جبکہ اس کے علاوہ شہر میںقتل و غارت گری میں دیگر 2افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔

14 3541292اگست کو 2 جبکہ 15اگست کو بھی 2 افراد فائرنگ کا نشانہ بن کر زندگی کی بازی ہار گئے ،16اگست کو 4افراد ،17اگست کو پولیس اہلکار سمیت 9 افراد کو زندگی سے محروم کر دیے گئے ،18اگست کو اے ایس آئی علی نواز سمیت6افراد ،19اگست کو 3 پولیس اہلکار محمد طاہر ، اعظم اور ہیڈ کانسٹیبل اظہر عباس سمیت 5افراد کو سرراہ ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنا دیا گیا۔

20 اگست کو 7 افراد، 21 اگست کو 5 افراد جبکہ 22 اگست کو 2 خواتین سمیت 8 کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا، 23 اگست کو 9 افراد جبکہ 24 اگست کو صرف ایک شخص جان کی بازی ہارا، 25 اگست کو 3 افراد، 26 اگست کو 5 افراد، 27 اگست کو سب انسپکٹر صاحب دینو اور 2 پولیس اہلکار خرم کمال اور جنید جوادسمیت11افراد ہلاک کو زندگی سے محروم کر دیا گیا، 28 اگست کو پولیس اہلکار رحیم نیازی سمیت 3 افراد، 29اگست کو پولیس اہلکار اورخاتون سمیت10افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا 30 اگست کو 6 افراد سے جینے کا حق چھین لیا گیا۔

 karachi-law-and-order-620x330شہر قائد میں گیارہ ماہ سے جرائم پیشہ افراد کے خلاف رینجرز اور پولیس کا ٹارگٹڈ آپریشن جاری ہے جس میں ٹارگٹ کلنگ میں کمی آئی ہے مگر اسٹریٹ کرائم میں اضافہ ہو گیا ہے۔ 2013 کے مقابلے میں رواں سال اسٹریٹ کرائم میں 12 فیصد اضافہ ہوا۔ شہر قائد میں رواں سال کے 8 ماہ کے دوران 14491 موٹرسائیکلیں چوری اور چھینی گئیں ملزموں نے 2570 شہریوں کو گاڑیوں سے محروم کیا۔ ڈاکووں نے شہریوں سے 19237 موبائل فون چھین لئے مجموعی طور پر سال رواں 36298اسٹریٹ کرائم کی وارداتیں رپورٹ ہوئیں۔ سال 2013 میں آٹھ ماہ کے دوران 34290 وارداتیں ہوئیں۔ پولیس کی جانب سے اسٹریٹ کرائم کی وارداتیں کم کرنے کے لئے کئے جانے والے اقدامات بے سود ثابت ہو رہے ہیں۔ شہر کی مختلف شاہراہوں پر لگائے جانے والے سی سی ٹی کیمرے خراب پڑے ہیں جبکہ کمانڈ اینڈ کنٹرول روم سے سڑکوں پر موجود پولیس اہلکاروں سے رابطے کا فقدان بھی اسٹریٹ کرائم کی ورداتوں میں اضافے کا سبب ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

شاہ فیصل میں6سالہ بچی کیساتھ مبینہ زیادتی

کراچی:شاہ فیصل میں6 سالہ بچی کیساتھ مبینہ زیادتی، پولیس کے مطابق زیادتی میں ملوث13سالہ لڑکےکوحراست میں لیا گیا ہے،بچی کا میڈیکل کروایا...

کراچی دھماکا، سندھ حکومت کا زخمیوں کے مفت علاج کا اعلان

کراچی: سندھ حکومت نے گلشن اقبال میں واقع مسکن چورنگی کے قریب دھماکے کے نتیجے میں زخمی ہونے والے افراد کے مفت...

غیر قانونی بھرتیاں, سندھ کے کئی افسران نیب کے شکنجے میں

کراچی: قومی احتساب بیورو نے سندھ کے اداروں میں غیر قانونی طور پر بھرتی کیے گئے17 گریڈ کے درجنوں افسران کے گرد...

مسکن چورنگی دھماکے کی سی سی ٹی وی فوٹیج

مسکن چورنگی دھماکے کی سی سی ٹی وی فوٹیج منظر عام پر آ گئی