Wednesday, November 25, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

عذرا پیچوہونے مساجد بند کرنے کی تجویز دیدی

وزیر صحت سندھ عذرا پیچوہو نے مساجد بند کرنے کی تجویز دے دی،سندھ بھر میں کورونا کے بڑھتے...

طارق روڈپر شاپنگ مال،لیاقت آباد انڈرگرائونڈ مارکیٹ سیل

6 بجے کاروبار بند نہ کرنے پر انتظامیہ حرکت میں آگئی، طارق روڈ پر واقع شاپنگ مال اور...

ناردرن بائی پاس کے اطراف باڑ لگانے کی تجویز

اینٹی وہیکل لفٹنگ سیل نے ناردرن بائی پاس کے دونوں اطراف باڑ لگانے کےلئے نیشنل ہائی وے اتھارٹی...

این جی اوز، مذہبی اور تعلیمی اداروں کو حاصل ٹیکس چھوٹ ختم کرنے کی تجویز

tax budget1کراچی: وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں این جی اوز، ٹرسٹ، این جی اوز و فلاحی اداروں کے تحت چلنے والے تعلیمی ادارے و یونیورسٹیوں اور مذہبی اداروں کو حاصل ٹیکس چھوٹ ختم کرنے کی تجویز کا جائزہ لینا شروع کردیا ہے۔ ایف بی آر کے سینئر افسر نے صحافیوں کو بتایا کہ ایف بی آر نے رواں مالی سال کے بجٹ میں اعلان کیا تھا کہ این جی اوز، ٹرسٹ، این جی اوز و فلاحی اداروں کے تحت چلنے والے تعلیمی ادارے و یونیورسٹیوں اور مذہبی اداروں کو ملنے والے عطیات و مالی معاملات کی نگرانی اورانکی ڈاکیومنٹیشن کو فروغ دینے کیلیے ٹیکس چھوٹ کو ختم کرکے ٹیکس کریڈٹ کا نظام متعارف کرایا تھا جس کیلیے 17جولائی 2014 کو انکم ٹیکس سرکلر نمبر2 جاری کیا گیا تھا ۔ جس میں این جی اوز، ٹرسٹ اورفلاحی و خیراتی اداروں کیلیے متعارف کرائی جانے والی 100 فیصد ٹیکس کریڈٹ کی سہولت کا طریقہ کار بتایا گیا تھا اور کہا گیا تھا کہ اب این جی اوز و ٹرسٹ کی ٹیکس چھوٹ ختم ہوگئی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ بعد میں این جی اوز، ٹرسٹ، این جی اوز و فلاحی اداروں کے تحت چلنے والے تعلیمی اداروں و یونیورسٹیوں اور مذہبی اداروں کو حاصل ٹیکس چھوٹ میں 2015 تک توسیع کردی گئی تھی۔ مذکورہ افسر نے بتایا کہ اب ان اداروں کو حاصل ٹیکس چھوٹ ختم کرکے ٹیکس کریڈٹ نظام پر عمل درآمد شروع کرنے کا اصولی فیصلہ کیا ہے اور توقع ہے کہ اس کا وفاقی بجٹ میں اعلان کردیا جائے گا جس کے بعد این جی اوز، ٹرسٹ و خیراتی اداروں کو انکم ٹیکس گوشواروں میں اپنی تمام آمدنی ظاہر کرنا ہوگی اور ٹیکس کٹوتیاں و ادائیگیاں بھی کرنا ہوں گی تاہم جتنا ٹیکس ادا کریں گے انہیں 100فیصد کریڈٹ کردیا جائیگا مگر اس کیلیے انہیں انکم ٹیکس گوشواروں میں ادا شدہ ٹیکس اور آمدنی کی تفصیلات دینے کے علاوہ ود ہولڈنگ ٹیکس اسٹیٹمنٹس بھی جمع کرانا ہوں گی۔

Open chat