Wednesday, October 28, 2020
Home خاص خبریں صحت، تعلیم، فلاحی ادارے وفاقی اردو یونیورسٹی نے بی ایس، ماسٹرز پروگرام کی فیس میں اضافہ...

وفاقی اردو یونیورسٹی نے بی ایس، ماسٹرز پروگرام کی فیس میں اضافہ کردیا

Federal-Urdu-University-Of-ArtsScience-And-Technology-Admission-2014وفاقی اردو یونیورسٹی انتظامیہ نے بی ایس اور ماسٹرز پروگرام صبح کے داخلوں کے لیے فارم کی قیمت میں 100 فیصد اضافہ کر کے 1500 روپے مقرار کردی ہے۔ جبکہ یونیورسٹی میں داخلوں کے لیے مختص نشستیں خالی رہ جانے اور کلاسز نہ ہونے کے باجود صبح کے مختلف شعبہ جات میں سمسٹر فیسوں 10 فیصد اور شام میں 20 فیصد اضافہ کردیا ہے جبکہ جبکہ چند شعبہ جات میں انٹری ٹیسٹ کے نام پر 700 روپے اضافی وصول کرینگے۔جس کے باعث داخلے لینے کے خواہش مند طلباءکو مشکلات میں مبتلاکردیاہے۔ منگل کو داخلوں کے پہلے دن گلشن کیمپس مرکزی لائبریری اور عبدالحق میں فارم دستیاب نہیں تھے ذرائع کے مطابق انتظامیہ نے داخلوں کا اعلان تو کردیا ہے تاہم فارم وپراسپکٹس نہیں چھپوا سکے۔تفصیلات کے مطابق وفاقی جامعہ اردو انتظامیہ نے گزشتہ روز جامعہ میں بیچلر پراگرامز و ماسٹر پرگرامز کے علاوہ بی ایڈ آنرز(چار سالہ) بی ایڈ(ایک سالہ)،کلیہ بزنس ایڈمنسٹریشن، کامرس و اکنامکس میں بی بی اے(چار سالہ)، بی ایس کامرس،بی ایس اکنامکس (چار سالہ)، بی اے اور بی کام (دو سالہ)،کلیہ قانون میں بی اے ایل ایل بی(پانچ سالہ) اور ایل ایل بی (تین سالہ)پروگرام میں 18 نومبر سے داخلوں کا اعلان کیا تاہم منگل 18 نومبر کو جامعہ انتطامیہ کی جانب سے مقرار کردہ گلشن کیمپس مرکزی لائبریری اور عبدالحق میں فارم دستیاب نہیں تھے ذرائع کے مطابق انتظامیہ نے جلد بازی میں داخلوں کا اعلان تو کردیا ہے تاہم فارم وپراسپکٹس نہیں چھپوا سکے جبکہ جامعہ انتظامیہ نے بی ایس اور ماسٹرز پروگرام صبح کے داخلوں کے لیے فارم کی قیمت میں 100 فیصد اضافہ کر کے 1500 روپے مقرار کردی ہے۔ ذرائع کے مطابق گزشتہ کئی برسوں سے انتظامیہ کی ناقص داخلہ پالیسی کے باعث یونیورسٹی میں مختلف شعبہ جات میں مختص نشستیں خالی رہ جاتی ہیں جبکہ جامعہ میں کئی اساتذہ پورے سمسٹر میں ایک کلاس بھی نہیں لیتے جس کے باعث طلباءجامعہ اردو میں داخلے کو ترجیح نہیں دیے رہے ہیں تاہم انتظامیہ کی جانب فیسوں مسلسل اضافے اور فارمز کی قمیت دوگنا کرنے کے باعث داخلے لینے کے خواہش مند طلباءکو مشکلات میں مبتلاکردیاہے۔ دوسری جانب جامعہ اردو میں ہر سال چند شعبہ جات میں ٹیسٹ کے بنیاد داخلے دینے کے دعوے کیے جاتے ہیں اور انٹری ٹیسٹ کے نام پر طلباءسے بھاری رقم بٹوری جاتی تاہم بعدازاں ایسے طلباءکو بھی داخلے دیے جاتے ہیں جو انٹری ٹیسٹ مین فیل ہوتے ہیں اور ان کے ٹیسٹ میں ان کے حاصل کردہ نمبر ز انتہائی کم ہوتے ہیں اگلے سال کے داخلوں کے لیے بھی انتظامیہ نے 700 روپے انٹری ٹیسٹ کے نام طلباءسے وصول کیے جائیگے اس تمام صورت حال پر جامعہ کے اساتذہ تو خاموش ہے تاہم جامعہ اردو میں موجود مختلف طلباءطلبہ تنظیموں نے فارم کی قمیت دوگنا کرنے وفیسوں میں اضافے کے خلاف جوائنٹ ایکشن کمٹی قائم کردی ہے اور ائندہ چند دنوں میں اس حوالے سے شدید احتجاج کا امکان ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular

تمام شہری گھر سے باہر نکلنے پر ماسک کے استعمال کو یقینی بنائیں( این سی او سی)

کراچی:: نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے گھروں سے باہر نکلنے پر ماسک کا استعمال لازمی قرار دے دیا۔ این سی او...

توہین رسالت،جماعت اسلامی کا کل کراچی میں احتجاج کا اعلان

فرانس میں گستاخانہ خاکوں کے خلاف جماعت اسلامی کا کراچی میں کل احتجاج کا اعلان، جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم...

اسٹیل ٹاون، پولیس کی بڑی کارروائی مختلف وارداتوں میں ملوث 2 ملزمان گرفتار

کراچی: اسٹیل ٹاون پولیس کی بڑی کارروائی، مختلف وارداتوں میں ملوث 2 ملزمان گرفتار، پولیس کے مطابق گرفتار ملزمان شہری سے لوٹ...

پاک بحریہ کا اینٹی شپ میزائلز فائرنگ کا کامیاب مظاہرہ،ہمہ وقت تیار ہیں،نیول چیف

پاک بحریہ کا اینٹی شپ میزائلز فائرنگ کا کامیاب مظاہرہ،پاک بحریہ نے شمالی بحیرہ عرب میں سطح سمندر اور ہوا سے اینٹی...