Tuesday, November 24, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

کراچی میں آج بونداباندی کا امکان

موسم کی صورتحال، کراچی میں آج بونداباندی کا امکان ہے۔ آج کم سے کم درجہ حرارت 16 ڈگری...

زائد فیسیں لینے والے اسکولوں کے خلاف سخت کاروائی ہوگی

ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر سعید الدین نے تمام اسکولوں کو ہدایت کی ہے کہ...

محکمہ داخلہ سندہ نے نیا حکم نامہ جاری کردیا

سندہ میں کورونا وائرس کی دوسری لہر، محکمہ داخلہ سندہ نے نیا حکم نامہ...

گھر کی دیوار گرنے سے ایک شخص ہلاک

کورنگی میں پی این ٹی کالونی کے قریب زیر تعمیر گھر کی دیوار گر گئی، گھر کی دیوار...

امریکا: شاگرد کو جان سے مارنے پر استاد ذمہ دار نہیں ہوگا!

USA america1واشنگٹن: انسانی حقوق کے بزعم خود چیمپئن بننے والے ملک امریکا میں معلمین کو بچوں کو پڑھانے کیلئے مسلح ہو کر درسگاہ آنے کا حق دینے کیلئے قانون سازی کی جارہی ہے‘ اگر چہ فی الوقت ایسا امریکی ریاست ٹیکساس میں ہونے جارہا ہے کیوں کہ کچھ ہی عرصہ پیشتر نیو جرسی کے علاقے میں ایک طالب علم نے موبائل فون ضبط کرنے پر اپنے معمر روحانی باپ کو ہم جماعتوں کے سامنے دبوچ اور اسے زمین پر پٹخ کر اپنا موبائل واپس لے لیا۔ عرب ٹی وی کے مطابق اسکول ٹیچر کی مبینہ توہین اور اس سے بد سلوکی کے بعد ڈان فلن نامی ایک مقامی شہری نے یہ آئیڈیا پیش کیا ہے۔ فلین سیاستدان ہونے کے ساتھ تاجر بھی ہیں لیکن وہ ٹیکساس کی ریاستی کونسل کے رکن ہیں۔ انہوں نے اسکولوں کے اساتذہ کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے ریاستی اسمبلی میں ایک مسودہ قانون پیش کیا ہے۔ اگر یہ قانون منظور ہوگیا تو اس کے مطابق اسکول میں ہنگامہ آرائی کرنے‘ اسلحہ لہرانے‘ آگ لگانے‘ اساتذہ او طلباء کو جانوں کو خطرے میں ڈالنے والے کسی بھی طالب علم کو سختی سے روکنے کا حق دیا جائیگا۔ ایسی کسی ہنگامی حالت میں استاد کے حملے میں طالب علم جان سے بھی مارا جاتا ہے تو اس کا خون استاد کے ذمہ نہیں ہوگا۔

Open chat