سندھ میں گیس کی بندش آئین شکنی ہے،وقارمہدی

waqar-mehdiکراچی پاکستان پیپلز پارٹی سندھ کے جنرل سیکریٹری وقار مہدی نے کراچی شہر سمیت صوبہ سندھ میں گیس کے بدترین بحران پر سخت تشویش کااظہار کرتے ہوئے موجودہ حکومت کی عوام دشمن پالیسیوں اور اقدامات کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ سندھ میں گیس کی بندش آئین شکنی کے مترادف ہے‘ موجودہ حکومت سندھ کے ساتھ سوتیلی ماں کا کردار ادا کررہی ہے پہلے بجلی کا بحران پیدا گیا اور اب گیس کا بدترین بحران پیدا کر کے سندھ کے عوام کے چولہے ٹھنڈے کر دیئے گئے ہیں جس کے باعث عوام بازار سے مہنگی روٹی خرید کر کھانے پر مجبور ہوگئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کے 6ماہ میں عوام کو مہنگائی اور بیروزگاری کی چکی میں پیس کر رکھ دیا گیا ہے عوام کے منہ سے دو وقت کی روٹی کا نوالہ چھین لیا گیا ہے عوام کو مکان دینے کے سہانے خواب دیکھانے والوں نے عوام کے سروں سے ان کی چھت چھین لی ہے اور ان کو ان کے کاروبار سے بیدخل اور فاقوں پر مجبور کر دیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گیس کے بلوں میں 400 فیصد اضافے کرنے کے باوجود گیس کا نہ ہونا لمحہ فکریہ ہے سندھ جو کل گیس کا 71فیصد پیدا کرتا ہے اسے گیس سے محروم کر دیا گیا ہے ۔ سندھ کے لوگوں پر وفاقی حکومت نے روزگار کے دروازے بند کر رکھے ہیں ۔ سندھ حکومت نے 109 ارب وفاقی حکومت نے ہٹ دھرمی سے غصب کئے ہوئے ہیں جو کہ اس بات کو ثابت کرتے ہیں کہ وفاقی حکومت سندھ کے ساتھ انتقامی سیاست روا رکھے ہوئے ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ فی الفور سندھ بالخصوص کراچی شہر میں گیس کے پریشر کو بحال کیا جائے اور گیس کے بلوں میں کیا گیا اضافہ واپس لیا جائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top