Wednesday, November 25, 2020
- Advertisment -

مقبول ترین

عذرا پیچوہونے مساجد بند کرنے کی تجویز دیدی

وزیر صحت سندھ عذرا پیچوہو نے مساجد بند کرنے کی تجویز دے دی،سندھ بھر میں کورونا کے بڑھتے...

طارق روڈپر شاپنگ مال،لیاقت آباد انڈرگرائونڈ مارکیٹ سیل

6 بجے کاروبار بند نہ کرنے پر انتظامیہ حرکت میں آگئی، طارق روڈ پر واقع شاپنگ مال اور...

ناردرن بائی پاس کے اطراف باڑ لگانے کی تجویز

اینٹی وہیکل لفٹنگ سیل نے ناردرن بائی پاس کے دونوں اطراف باڑ لگانے کےلئے نیشنل ہائی وے اتھارٹی...

کراچی ڈوبے گا نہیں، معیشت متاثر ہوگی، ماہرین موسمیات

karachi-niloferکراچی: محکمہ موسمیات کے ڈپٹی ڈائریکٹر ڈاکٹر غلام رسول نے کہا ہے کہ مناسب منصوبہ بندی نہ کی گئی تو موسمی تبدیلیاں پاکستانی معیشت کو شدید نقصان پہنچائیں گی۔ ڈاکٹر غلام رسول کا کہنا ہے کہ موسمی تبدیلیوں کی وجہ سے سمندری طوفانوں میں اضافہ ہوگا،جس طرح پہلے خطہ بنگال طوفانوں کی زد میں ہوتا تھا،اس طرح اب بحیرہ عرب میں طوفانوں کی زیادتی سے پاکستان کے ساحل نشانہ بنیں گے تاہم کراچی، ٹھٹھہ اور گوادر سمیت پاکستان کے کسی شہر کے ڈوبنے کا کوئی خطرہ نہیں، اس طرح کی پیش گوئی سائنسی اصولوں کے خلاف ہے،کراچی کو مزید آبادی سے روکنے کے لیے چین اور ملائیشیا جیسے اقدامات کرنے ہوں گے،آئندہ 35برس میں پاکستان کے لیے درجہ حرارت میں ایک سے 2سینٹی گریڈ اضافہ ہوگا جبکہ گلگت بلتستان میں یہ اضافہ دو سینٹی گریڈ ہوگا۔ موسمی تغیر کے سبب سمندر میں پانی کی سطح ضرور بلند ہوگی جس سے 2سے3کینال رقبہ زیر آب آسکتا ہے، موسمی تغیر کے سبب گلیشیر پگھل رہے ہیں، وہ ایک کلب میں صحافیوں سے بات چیت کررہے تھے، ڈاکٹر غلام رسول نے کہا کہ پاکستان موسمیاتی تبدیلیوں سے دنیا میں سب سے زیادہ متاثر ہونے والے10ممالک میں شامل ہے لیکن کراچی سمیت دیگر شہروں کے سمندر برد ہونے کے بارے میں بات سائنس سے ثابت نہیں ہے کہ آئندہ چند برسوں میں کراچی سمیت کوئی شہر ڈوبے گا۔ سندھ میں زمین جلدی خشک نہیں ہوتی جس کی وجہ سے فصلوں کی بروقت کاشت نہیں ہو پاتی۔ ایک مہینے کی بارش دو دن میں برس رہی ہے جس کے نتیجے میں سیلابی صورتحال پیدا ہو جاتی ہے، انھوں نے کہا کہ کراچی میں بڑھتی ہوئی آبادی نے کراچی کا اصل نقشہ بدل دیا ہے ، ٹاؤن پلاننگ نہ ہونے کے نتیجے میں کراچی بدنما ہو گیا،ڈاکٹر غلام رسول نے کہا کہ موسمی تغیر کو کم سے کم کرنے کے لیے ضروری ہے کہ ہم سادہ طرز زندگی اختیار کریںاور گاڑیوں کے استعمال کو کم کر دیں،موسمی تغیر سے غریب اور کم آمدنی والے ممالک کو زیادہ خطرہ ہے۔

Open chat