سماجی تنظیم کے تحت ذہنی امراض میں مبتلا افراد کے حوالے سے ورلڈ مینٹل ڈے منایا گیا

WhatsApp Image 2018-10-18 at 1.25.21 PM کراچی،   سماجی تنظیم کاروان حیات کی جانب سے ذھنی امراض میں مبتلا لوگوں کے حوالے سے ورلڈ مینٹل ھیلتھ ڈے کی تقریب ڈیفنس آفس میں منعقد ہوئی، جس میں ذھنی امراض کے ماھر ڈاکٹرز سمیت دیگر اسٹیک ھولڈرز نے شرکت کیا، اس تقریب کو خطاب کرتے ھوئے ماھر ڈاکٹرز نے کھا کہ دماغ جسم کا وہ حصہ ہے جس سے انسان کے کامیابیوں اور ناکامیوں کا اندازہ بخوبی لگایا جا سکتا ہے، انھوں نے کھا کہ لوگوں کو ذھنی امراض کے حوالے سے آگاھی نہ ھونے کی وجہ سے لوگ دماغ کے چھوٹے چھوٹے بیماریوں کو نظرانداز کر دیتے ہیں جوکہ بعد میں ایک بڑی بیماری کا باعث بن کر انسان کو ذھنی معذور بنا دیتے ہیں…

انہوں نے کھا کہ پاکستان میں ذہنی امراض کے حوالے سے مؤثر آگاھی دینے کی سخت ضرورت ہے، اور اس حوالے سے تعلیمی اداروں میں شروع سے ہی بچوں کو آگاھی دی جانے کی بھی ضرورت ہے، ماھرین نے مزید کھا کہ پاکستان میں سب سے زیادہ نظرانداز ھونے والا طبقہ بھی یہی لوگ ہیں ، جن کے لیےمختلف عقائد پیش کیے جاتے ہیں جوکہ سراسر غلط اور بی بنیاد ہیں، اور ایسے عقائد کے خلاف لوگوں کو آگاھی دینے میں میڈیا اھم کردار ادا کر سکتا ہے، اور ذھنی امراض میں مبتلا لوگوں کو قبول کرنے سے ہی ان کا کامیاب علاج ممکن بن سکتا ہے…

سماجی تنظیم کاروان حیات کے چیف ایگزیکٹو ڈاکٹر ظھیرالدین بابر نے خطاب کرتے ھوئے کھا کہ کاروان حیات ایک غیرمنافع بخش تنظیم ہے جوکہ گذشتہ 35 سالوں سے ذھنی امراض میں مبتلا لوگوں کے لیے کام کر رھا ھے، انھوں نے بتایا کہ کاروان حیات کی جانب سے کراچی کے کیاماڑی والے علائقے میں ایک سئو بستروں پر مشتمل ایک ہسپتال سمیت تین بڑے مراکز کام کر  رہے ہیں اور گذشتہ سال 18-2017 میں 71 ھزار ذھنی امراض میں مبتلا لوگوں کا کامیاب علاج بھی کروایا گیا ہے…

انہوں نے مزید کھا کہ اس تقریب کا مقصد تاجر برادری سمیت دیگر اسٹیک ھولڈرز  کو اس انتھائی اھم مسئلے کے حوالے سے آگاھی دینا اور ان کے ساتھ مل کر اس کام کو آگے بڑھانا ہے تاکہ ذھنی امراض میں مبتلا لوگوں کے علاج اور سھولتوں کی فراھمی کے لیے مزید کام کیا جا سکے، اس تقریب میں ایڈیشنل چیف سیکریٹری ڈاکٹر عثمان چھاچھر، پروجیکٹ سپورٹ مئنیجر نوید احمد شیخ، چیمبر آف کامرس کراچی کے صدر خرم شھزاد، ڈاکٹر عروسہ طالب، ڈاکٹر ظفر طالب، پروفیسر ولی الدین، ڈاکٹر اجمل کاظمی سمیت دیگر لوگوں نے بھی خطاب کیا۔۔۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top